اٹلی: کورونا پازیٹو مریضوں کا علاج کر رہے 51 ڈاکٹروں کی موت

Source: S.O. News Service | Published on 28th March 2020, 10:03 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

روم،28؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) کورونا وائرس نے اٹلی میں اپنا قہر سب سے زیادہ برپا کر رکھا ہے۔ مہلوکین کی تعداد اٹلی میں چین سے بہت زیادہ ہو چکی ہے اور متاثرین کی تعداد بھی یہاں اتنی زیادہ ہے کہ ڈاکٹروں کو علاج کرنے میں کافی مشقتوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ اس درمیان ایک اندوہناک خبر یہ سامنے آئی ہے کہ کورونا پازیٹو مریضوں کا علاج کر رہے کئی ڈاکٹرس خود اس وائرس کی زد میں آ گئے ہیں اور جمعہ کی شام تک 51 ڈاکٹروں کی موت بھی اس وائرس کی وجہ سے ہو گئی ہے۔ اٹلی کے ڈاکٹرس ایسو سی ایشن نے جمعہ کی شام اس سلسلے میں میڈیا کو جانکاری دی۔

سی این این نے اس سلسلے میں ایک رپورٹ نشر کی ہے جس کے مطابق اٹلی میں جن 51 ڈاکٹروں کی موت ہوئی ہے، وہ ٹیسٹ میں کورونا پازیٹو تھے اور ان کا علاج بھی چل رہا تھا۔ قابل ذکر ہے کہ اٹلی میں ڈاکٹروں کے ایسوسی ایشن کے سربراہ فلپو انیلی نے حال ہی میں اس خطرے کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹروں کے لیے مزید حفاظتی اشیاء کا مطالبہ حکومت سے کیا تھا۔ انیلی کا کہنا ہے کہ "سب سے پہلا کام ڈاکٹروں اور ہیلتھ کیئر ورکر کی حفاظت ضروری ہے تاکہ وہ کورونا کی زد میں نہ آئیں۔" اب جب کہ 51 ڈاکٹروں کی موت کی خبر سامنے آئی ہے تو پھر دنیا میں اس کی وجہ سے دہشت پھیلنی لازمی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ جمعہ تک اٹلی میں 9134 لوگوں کی موت اس وائرس کی وجہ سے ہوئی ہے جو کہ دنیا میں کسی بھی ملک میں کورونا کی وجہ سے ہوئی موت سے زیادہ ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ جمعرات سے جمعہ کے درمیان اٹلی میں 969 لوگوں کی موت ہوئی ہے جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔ اس طرح دیکھا جائے تو اٹلی کی حالت بہت خراب ہے اور وہاں صرف کورونا پازیٹو مریضوں کے سر پر ہی موت نہیں منڈلا رہی بلکہ ڈاکٹروں کی جان پر بھی خطرہ بنا ہوا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

امریکہ: ٹرمپ کی فوج تعیناتی کی دھمکی پر فسادات میں شدت، ایئرفورس بیس میں فائرنگ سے 2 اہلکار ہلاک

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی ملک میں فوج تعینات کرنے کی دھمکی پر امریکہ بھر میں فسادات میں مزید شدت آگئی۔ پوسٹمارٹم رپورٹ میں سیاہ فام جارج فلائیڈ کی موت کو قتل قراردیدیا گیا جبکہ ریاست ڈکوٹا میں ایئر فورس بیس میں فائرنگ کے نتیجہ میں 2 اہلکار ہلاک ہوگئے ۔

پوری دنیا میں کورونا کا قہر جاری، متاثرین کی تعداد 63 لاکھ سے تجاوز

پوری دنیا میں عالمی وبا کورونا وائرس کا قہر جاری ہے اور ہر روز متاثرین اور اس سے ہونے والی ہلاکتوں کی تعداد میں مستقل اضافہ ہو رہا ہے۔تازہ اعداد و شمار کے مطابق کورونا متاثرین کی تعداد 63لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے جبکہ اس وبا سے اب تک 3.73لاکھ سے زیادہ لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔

مینگلور: آئندہ صرف کورونا سے متاثر افراد کے گھروں کو ’سیل ڈاؤن‘ کیا جائے گا۔ علاقے کو’کٹینمنٹ زون‘ نہیں بنایا جائے گا؛ میڈیکل ایجوکیشن منسٹر کا بیان

سرکاری سطح پرکووِڈ 19کی وباء پر قابو پانے کے لئے ابتدا میں جوسخت اقدامات کیے جارہے تھے، اب بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ ان میں نرمی لانے کا کام مسلسل ہورہا ہے۔

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

کرناٹک میں کورونا کے 24 گھنٹوں میں 267 نئے معاملات ، داونگیرے میں مریض کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 53

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران منگل کی شام 5 بجے تک ریاست میں 267 نئے کو رونا مریض پائے جانے سے ریاست میں کووڈ۔19 سے متاثر مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2494 تک پہنچ گئی اور داونگیرے میں مزید ایک مریض کے ریاست میں فوت ہونے سے ریاست میں اس وبائ سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 53 ہوگئی۔

یکم جولائی سے کرناٹک میں اسکول کھل جائیں گے۔کلاسس شروع کرنے کے لئے مرحلہ وار تاریخوں کا اعلان

کرناٹک حکومت نے ریاست بھر میں یکم جولائی سے مرحلہ وار پرائمری اور سکینڈری اسکول کھول دینے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں - وزیر برائے بنیادی و ثانوی تعلیم سریش کمار کی صدارت میں محکمہ تعلیمات عامہ کے اعلیٰ عہدیداروں کی میٹنگ کے بعد کمشنر برائے تعلیمات عامہ کی جانب سے اسکولس ...