آئی آر سی ٹی سی نے سپروائزرس کا معاہدہ ختم کرنے کا فیصلہ ملتوی کیا

Source: S.O. News Service | Published on 30th June 2020, 11:08 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 30 جون (آئی این ایس انڈیا) اپنے زونل دفاتر میں 500 سے زیادہ کانٹریکٹ ہوسٹالٹی انسپکٹرز (سپروائزر) کی خدمات منسوخ کرنے کا حکم جاری کرنے کے چند دن بعدانڈین ریلوے کیٹرنگ اینڈ ٹورزم کارپوریشن (آئی آر سی ٹی سی) نے اب اس کو اگلے نوٹس تک معطل رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ ان میں بیشترملازمین کا معاہدہ رواں سال کے آخر تک ختم ہونے جا رہا ہے۔ آئی آر سی ٹی سی نے پینٹری کار (کچن) کی سہولت والی ٹرینوں میں کیٹرنگ پیش کرنے کے لئے تفویض کردہ ٹھیکیداروں کے معیار کی نگرانی کے لئے 2018 میں دو سال کے معاہدے پر 560 کے قریب سپروائزرس (مہمان نوازی) کی خدمات حاصل کی تھی۔

ان انسپکٹرز کا کام ٹرینوں کی پینٹری گاڑیوں کے کام کی نگرانی ہوتا ہے، جس کا مطلب ہے کہ انہیں کھانا پکانے، معیار کے معائنے کی نگرانی کرنا، مسافروں کی شکایات کا ازالہ کرنا، ریلوے کے مطلع کردہ قیمتوں پر کھانا یقینی بنانا اور مشروبات دستیاب کراناہوتاہے۔

آئی آر سی ٹی سی نے 25 جون کو اپنے زونل دفاتر کو ایک خط لکھا تھا، جس میں کہا گیا تھا کہ موجودہ صورتحال میں ان کانٹریکٹ ملازمین کی ضرورت نہیں ہے اور انہیں ایک ماہ کا نوٹس دے کر ان کا معاہدہ ختم کیا جانا چاہئے۔

اب کارپوریشن کے ترجمان نے کہاکہ یہ حکم اگلے نوٹس تک ملتوی کردیا گیا ہے۔ہاسپٹالٹی کے شعبے کے ان کانٹریکٹ ملازمین نے وزیر ریلوے پیوش گوئل سے مداخلت کی درخواست کی ہے۔ ارون کمار نے ٹویٹ کیا تھاکہ پیوش گوئل سر، میں ہوسٹلٹی انسپکٹر کی حیثیت سے آئی آر سی سی ٹی میں کام کر رہا ہوں لیکن بدقسمتی سے اب آئی آر سی ٹی سی نے ہندوستان بھر کے تمام انسپکٹرز کو ہٹانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ایسی صورتحال میں ہم بے روزگار ہوجائیں گے جبکہ ہمارا کنبہ ہم پر منحصر ہے۔ برائے مہربانی ہمارے لئے کچھ کریں، ہم آپ کے مشکور ہوں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا انفیکشن نے پھر بنایا ریکارڈ، 24 گھنٹوں میں ملے 22,771 نئے کیس، 442 لوگوں کی موت

ملک میں کورونا وائرس روز بروز شدید شکل اختیار کرتا جارہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس کے ریکارڈ 22،771 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد بڑھ کر 6.48 لاکھ ہوچکی ہے۔

ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔

دہلی میں کورونا کے معاملات 94000سے زیادہ، 2900سے زیادہ لوگو ں کی موت

کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور راجدھانی میں کل 2520نئے معاملے سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد جمعہ کو بڑھ کر 94000سے زیادہ ہوگئی ہے اور 59مزید لوگوں کی موت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 2923ہوگئی ہے۔