عراقی فوج کی الحشد الشعبی ملیشیا کے خلاف بڑی کارروائی کا انکشاف

Source: S.O. News Service | Published on 29th June 2020, 5:30 PM | عالمی خبریں |

 دبئی،29/جون (آئی این ایس انڈیا) شدت پسند گروپ داعش کے خلاف سرگرم عالمی فوجی اتحاد نے بتایا ہے کہ عراقی فوج نے ایرانی حمایت یافتہ شیعہ ملیشیا الحشد الشعبی ملیشیا کے خلاف ایک بڑی کارروائی کی ہے۔

عالمی اتحاد کی طرف سے جارہ کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس کارروائی میں عالمی فوج نے حصہ نہیں لیا۔ ایسے کسی بھی آپریشن میں حصہ لینے کے لیے عراقی حکومت کی طرف سے باضابطہ درخواست کی ضرورت ہے۔

العربیہ ٹی وی چینل کے مطابق عرب اتحاد نے کہا ہے کہ عراق میں ایرانی حمایت یافتہ الحشد الشعبی ملیشیا کے خلاف کارروائی میں امریکا کا کوئی کردار نہیں۔ یہ کارروائی عراق کی صلاح الدین گورنری میں کی گئی۔

عالمی اتحاد نے عراق اور شام میں داعش کو شکست دینے کے لیے جاری آپریشن کو منطقی انجام تک پہنچانے کےعزم کا اعادہ کیا ہے۔ اتحاد کا کہنا ہے کہ وہ عراقی حکومت کےساتھ مل کر داعش اور دوسرے عسکریت پسند گروپوں کے خلاف اپنا مشن جاری رکھے گا۔

قبل ازیں امریکا کی قیادت میں سرگرم عالمی عسکری اتحاد نے جنوبی عراق میں حزب اللہ بریگیڈ کے خلاف کی گئی چھاپہ مار کارروائی میں کسی قسم کی معاونت کی تردید کی ہے۔

عراقی فوج کی جانب سے الحشد الشعبی ملیشیا کے خلاف کی گئی کارروائی کی مزید تفصیلات سامنے نہیں آئی ہیں۔ یہ کارروائی ایک ایسے وقت میں کی گئی ہے جب حال ہی میں فوج نے ایران کے قریب سمجھے جانے والے ایک دوسرے عسکری گروپ حزب اللہ بریگیڈ کے مرکز پر چھاپہ مار کر کم سے کم چودہ عسکریت پسندوں کو گرفتار کرلیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

لیبیا : فائز السراج اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے کے لیے تیار

لیبیا میں وفاق حکومت کی صدارتی کونسل کے سربراہ فائز السراج نے اعلان کیا ہے کہ وہ آئندہ ماہ اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے اور اپنی ذمے داریاں ایگزیکٹو اتھارٹی کے حوالے کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔ ...

سمندری طوفان 'سیلی' امریکی ساحل سے ٹکرا گیا، شدید بارشوں کی پیشن گوئی

سمندری طوفان 'سیلی' بدھ کی صبح امریکی ریاست الاباما کے ساحلی قصبوں سے ٹکرا گیا۔ اپنے ساتھ تند و تیز ہوائیں اور شدید بارشیں لانے والے طوفان کے متعلق موسمیات کے ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ وہ خلیجی ساحل کے کئی علاقوں میں بڑے پیمانے پر تباہی اور سیلاب لا سکتا ہے۔ ...

امن مذاکرات کے باوجود افغانستان میں طالبان کے حملوں میں 17 ہلاکتیں

دوحہ میں افغان حکومت اور طالبان کے وفود کے درمیان امن مذاکرات کے دوران طالبان افغانستان کے اندر بدستور اپنی عسکری کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ملک کے شمالی حصے میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں مختلف واقعات میں کم از کم 17 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ ...