ایران کا آئین انقلاب برآمد کرنے کا حامی، مذاکرات کیسے ممکن ہیں:الجبیر

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 25th January 2020, 7:57 PM | خلیجی خبریں |

جدہ 25جنوری(آئی این ایس انڈیا)سعودی عرب کے وزیرِ مملکت برائے امور خارجہ عادل الجبیر نے کہا ہے کہ ایران کا آئین انقلاب برآمد کرنے پر زور دیتا ہے۔ ایسے میں ایران کے ساتھ مذاکرات کیسے کامیاب ہوسکتے ہیں۔ سعودی وزیر خارجہ نے ان خیالات کا اظہار ہنگری کے دارالحکومت پڈاپسٹ میں جمعہ کے روز صحافیوں سے گفتگو میں کیا۔انہوں نے کہا کہ ایران کے بیان میں تضاد اور دوغلا پن ہے۔ وہ ایک طرف مذاکرات کی بات کرتا ہے اور دوسری طرف خطے کے ممالک کی پیٹھ میں خنجر گھونپ رہا ہے۔ ایران کو اپنی روش بدلنا ہوگی۔ ان کاکہنا تھا کہ امریکا نے ایران پر اقتصادی پابندیاں ہماری خواہش پر نہیں بلکہ ایران کے خطے میں برتاؤ پر عاید کی ہیں۔الجبیر نے وضاحت کی کہ ایرانی آئین انقلاب برآمد کرنے کا مطالبہ کرتا ہے۔ ایسے میں ہم تہران کے ساتھ بات چیت کیسے کرسکتے ہیں؟۔انہوں نے زور دے کر کہا کہ ایرانی عوام تاریخی طور پر اعتدال پسند ہیں، لیکن حکومت نے ایران کو یرغمال بنا رکھا ہے۔

سعودی وزیر مملکت برائے خارجہ امور کا کہنا تھا کہ ہم نے نہ تو ایران پر میزائل برسائے اور نہ ایران کے خلاف ملیشیائیں تیار کیں۔ یہ سب کچھ ایران کر رہا ہے اور اسے یہ روکنا ہوگا۔ایک سوال کے جواب میں عادل الجبیر نے واضح کیا کہ سعودی عرب کا اسرائیل سے کوئی تعلق نہیں ہے۔ انہوں نے کہا ہم سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق تنازع فلسطین کا دو ریاستی حل چاہتے ہیں۔یمن کے بارے میں انہوں نے کہا یمنی اعتدال پسند قوتوں نے مذاکرات میں حصہ لیا لیکن حوثیوں نے اپنی بغاوت کی روش اپنائے رکھی۔ ہم اب بھی یمن میں جنگ نہیں چاہتے بلکہ تنازع کا سیاسی حل تلاش کررہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ یمن کو ایک چھوٹے سے گروپ کے ہاتھوں یرغمال نہیں ہونے دیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

جدہ میں بھٹکل کمیونٹی کی جانب سے "پیغام انسانیت اور دورِحاضر میں ہماری ذمہ داریاں" کے موضوع پر خوبصورت پروگرام

معروف عالم دین ، داعی اور کل ہند تحریک پیام انسانیت کے جنرل سکریٹری  مولانا بلال حسنی ندوی کی عمرہ کے لئے مکہ مکرمہ کی آمد پر  پیر  17فروری کو بھٹکل کمیونٹی جدہ کی جانب سے جدہ میں "پیغام انسانیت اور دورِحاضر میں ہماری ذمہ داریاں" کے موضوع پر ایک پروگرام منعقد کیا گیا جس ...

سعودی عرب: ٹرانسپورٹ سے متعلق جُرمانوں کی نئی فہرست میں 221 خلاف ورزیوں کا تعین

سعودی عرب میں ٹریفک کے نظام کی بہتری کے لیے نئے اقدامات کا سلسلہ جاری ہے۔ اس حوالے سے تازہ ترین پیش رفت میں ٹرانسپورٹ اور بسوں کو کرائے پر دیے جانے کی سرگرمیوں سے متعلق 221 خلاف ورزیوں کا تعین کیا گیا ہے۔ ٹریفک کے نظام کے تحت ان میں سے بعض خلاف ورزیوں پر جرمانے کی رقم 5 ہزار ریال تک ...

 کیا نئے قطری وزیراعظم بدعنوانی کے کیس میں ماخوذ ہیں؟

قطر کے نئے وزیراعظم شیخ خالد بن خلیفہ آل ثانی کامبیّنہ طور پر ملک میں کھیلوں کے عالمی مقابلوں کے انعقاد کے لیے بدعنوانی کی ایک ڈیل سے تعلق رہا ہے۔شیخ خالد قطر کے شاہی خاندان کے رکن ہیں۔وہ ملک کے وزیر داخلہ بھی رہ چکے ہیں۔فرانسیسی آن لائن تحقیقاتی جریدے میڈیا پارٹ اور برطانوی ...

سعودی وزارت ثقافت کی جانب سے’نیشنل تھیٹر پروجیکٹ‘کا آغاز

سعودی عرب میں وزارت ثقافت کے زیر انتظام ’نیشنل تھیٹر پروجیکٹ‘ کا آغاز ہو گیا ہے۔ پروجیکٹ کے آغاز کا اعلان منگل کی شام درالحکومت ریاض کے ’کنگ فہد کلچرل سینٹر‘ میں وزیر ثقافت شہزادہ بدر بن عبداللہ بن فرحان کی سرپرستی میں ہوا۔ اس موقع پر نامور فن کاروں، دانش وروں اور سعودی عرب ...