ایران یمن میں ایک اور حزب اللہ بنانا چاہتا ہے: واشنگٹن میں سعودی سفیر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st March 2018, 11:19 AM | خلیجی خبریں | عالمی خبریں |

واشنگٹن 20مارچ (ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا)واشنگٹن میں سعودی سفیر شہزادہ خالد بن سلمان نے کہا ہے کہ ایران یمن میں ایک اور حزب اللہ بنانا چاہتا ہے۔پیر کے روز امریکی ٹی وی چینل "سی این این" کو دیے گئے اں ٹرویو کے دوران خالد بن سلمان نے کہا کہ ایران نہ صرف سعودی عرب بلکہ پورے خطّے کے امن کو غیر مستحکم کرنا چاہتا ہے۔ انہوں نے باور کرایا کہ تہران کا مسئلہ اس کا برتاؤ اور توسیع پسندی کی خواہش ہے۔یمن کے حوالے سے شہزادہ خالد کا کہنا تھا کہ یمن میں باغی حوثی ملیشیا کو ایران کی سپورٹ حاصل ہے جو دہشت گردی کا سب سے بڑا سرپرست ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ سعودی عرب یمن کو سپورٹ کرنے والا سب سے بڑا ملک ہے اور انسانی بنیادوں پر اس کی کارروائیوں میں یمن کے تمام تر علاقے شامل ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

مقام ابراہیم کے بارے میں حیرت انگیز معلومات

مکہ مکرمہ کی مسجد حرام کے صحن مقدس میں واقع ایک جگہ کو'مقام ابراہیم' سے موسوم کیا جاتا ہے۔ فرزندان توحید کے لیے مقام ابراہیم اجنبی مقام نہیں، مگر اس کی جزئیات کے بارے میں کم لوگ ہی جانتے ہیں۔

حوثیوں کو دہشت گرد قرار دینا ایرانی توسیع پسندانہ ایجنڈے میں رکاوٹ بنا: یمن

یمن کی آئینی حکومت کے وزیراعظم معین عبدالملک نے کہا ہے کہ امریکی انتظامیہ کی طرف سے حوثی ملیشیا کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کے نتیجے میں خطے میں ایرانی توسیع پسندی کے سامنے ایک بڑی رکاوٹ کھڑی ہوئی ہے۔ انہوں ‌نے یورپی یونین سے بھی حوثی ملیشیا کو دہشت گرد تنظیم قرار دینے کا ...

ایران میں ایک اور ریسلر کو قتل کے جُرم میں قصور وار قرار دے کرپھانسی

ایران میں ایک اور ریسلر کو قتل کے الزام میں قصور وار قرار دے کر پھانسی دے دی گئی ہے۔گذشتہ پانچ ماہ میں یہ دوسرے ریسلر ہیں جنھیں تختہ دار پر لٹکایا گیا ہے۔ان سے پہلے چیمپئن ریسلر نوید افکاری کو سُولی دے دی گئی تھی۔ان کی پھانسی پر عالمی سطح پر سخت ردعمل کا اظہار کیا گیا تھا۔

ٹرمپ کا دوسری مرتبہ مواخذہ: امریکی دستور کیا کہتا ہے؟

سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے حامیوں کو بغاوت کے لیے اکسانے اور ہجوم کو کانگریس کی عمارت پر چڑھائی کی ترغیب دینے کے الزامات کی وجہ سے امریکا میں ڈیموکریٹک پارٹی ان کے خلاف دستور کے مطابق کارروائی کے حق میں مطلوبہ ووٹوں کے حصول کی جدوجہد کر رہی ہے۔