آئی این ایکس میڈیا: سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم کی عرضی ضمانت مسترد

Source: S.O. News Service | Published on 16th November 2019, 12:03 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،16/نومبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) دہلی ہائی کورٹ نے ای ڈی کی طرف سے ریکارڈ آئی این ایکس میڈیا منی لانڈرنگ معاملے میں سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم کو ضمانت دینے سے جمعہ کو انکار کر دیا-عدالت نے کہا کہ ان کے خلاف لگے الزامات پہلی نظر میں سنگین نوعیت کے ہیں اور جرم میں ان کا فعال اور اہم کردار رہا ہے-جسٹس سریش کیت نے کہا کہ اگر معاملے میں چدمبرم کو ضمانت دی جاتی ہے تو اس سے معاشرے میں غلط پیغام جائے گا-ہائی کورٹ نے چدمبرم اورای ڈی دونوں کے وکیل کی دلیل سننے کے بعد ضمانت کی درخواست پر آٹھ نومبر کو فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا-ای ڈی نے منی لانڈرنگ میں ان کو16اکتوبر کو گرفتار کیا تھا-وہیں سی بی آئی نے آئی این ایکس میڈیا بدعنوانی معاملے میں چدمبرم کو 21اگست کو گرفتار کیا تھا اور اس معاملے میں سپریم کورٹ نے 22اکتوبر کو انہیں ضمانت دے دی تھی-سی بی آئی نے 15مئی،2017 کو مقدمہ درج کیا تھا جس میں آئی این ایکس میڈیا گروپ کو2007 میں 305کروڑ روپے کا غیر ملکی چندہ حاصل کرنے کے لئے غیر ملکی سرمایہ کاری فروغ بورڈ (ایف آئی پی بی) کی منظوری دینے میں بے ضابطگیوں کا الزام لگایا گیا تھا-اس دوران چدمبرم وزیر خزانہ تھے-اس کے بعد ای ڈی نے بھی اسی سلسلے میں 2017میں منی لانڈرنگ کا معاملہ درج کیا تھا-

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان میں مندر کی تعمیر پر روک رجعت پسندانہ اقدام: التجا مفتی

 پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی صاحبزادی التجا مفتی نے پاکستان کے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک مندر کی تعمیر پر جاری تنازعے کے حوالے سے کہا ہے کہ مندر کی تعمیر پر روک ایک اسلامی فلاحی ریاست کے مذہبی آزادی کے تصور کے منافی ہے۔

خطرے میں اسپین، 95 فیصد آبادی ہو سکتی ہے کورونا کا شکار: تحقیق

کورونا وائرس یعنی کووڈ-19 کے حوالہ سے اسپین میں کی گئی اسٹڈی میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اسپین کی آبادی کا صرف 5فیصد ہی اینٹی باڈیز تیار کرسکا ہے، جس سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ کورونا سے بچاؤ کے لیے ’ہرڈ امیونٹی‘ حاصل نہیں کی جاسکتی۔

کاروار اسپتال سے 12 مزید لوگ ڈسچارج

بھلے ہی  ضلع اُترکنڑا میں کورونا پوزیٹیو کے معاملے ہر روز سامنے آرہے ہوں، لیکن کاروار اسپتال میں ایڈمٹ کورونا کے متاثرین  روبہ صحت ہوکر ڈسچارج ہونے کا سلسلہ بھی برابر جاری ہے۔