فوجی اورنگ زیب کے اغوااور قتل کو لے کر تین فوجیوں سے تفتیش

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 6th February 2019, 11:46 PM | ملکی خبریں |

سرینگر:6 /فروری (ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا)جنوبی کشمیر میں گزشتہ سال دہشت گردوں کے ذریعہ ہلاک فوجی اورنگ زیب کی سرگرمی کی اطلاع دینے میں شامل ہونے کے شبہ میں تین فوجیوں سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔فوج کے ذرائع نے بدھ کو یہ معلومات دی۔فوج کے ذرائع نے بتایا کہ تین فوجیوں سے پوچھ گچھ اس شک کو لے کر کی جا رہی ہے کہ انہوں نے کہیں جان بوجھ کر یا نادانستہ طور پر اورنگ زیب کی سرگرمیوں کے بارے میں معلومات لیک تو نہیں کی، حالانکہ انہوں نے یہ واضح کر دیا کہ جن فوجیوں سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے انہیں اب تک نہ تو حراست میں لیا گیا ہے، نہ ہی گرفتار کیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ پولیس معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے، وہیں فوج ہر ممکن تعاون مہیا کرا رہی ہے تاکہ اورنگ زیب کے قتل میں ملوث افراد کو قانون کے حوالے کیا جا سکے۔ذرائع نے بتایا کہ پوچھ گچھ کے گھیرے میں آئے فوجیوں میں سے ایک توصیف وانی کا بھائی ہے، جسے شادیمارگ کیمپ میں فوج کے ایک افسر نے مبینہ طور پر تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔اسی کیمپ میں اورنگ زیب کی تعیناتی تھی۔وانی کا فی الحال یہاں ایس ایم ایچ ایس ہسپتال میں علاج چل رہا ہے۔عید کے موقع پر 14جون 2018کو چھٹی پر جا رہے اورنگزیب کو اغوا کر لیا گیا تھا اور بعد میں سر اور گردن پر گولی مار کر ان کا قتل کر دیا گیاتھا۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندوستان میں کورونا کی تباہی، مریضوں کی تعداد 9 لاکھ کے پار، ہلاکتیں تقریباً 24 ہزار

کوروناوائرس کی خوفناک صورتحال کے درمیان تیسرے دن بھی ہندوستان میں 28 ہزار سے زیادہ نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس سے کورونا متاثرین کی تعداد 9 لاکھ سے متجاوز کرچکی ہے اور اس دوران 550 سے زیادہ افراد کی موت ہے۔

کانپور انکاؤنٹر: ریٹائرڈ جسٹس ششی کانت نے بکرو گاؤں پہنچ کر موقع واردات کا لیا جائزہ

اترپردیش کے ضلع کانپور میں 8 پولس اہلکار کے بہیمانہ قتل کی واردات کی حقیقت کا پتہ لگانے کے لئے تشکیل شدہ سنگل ممبر انکوائری کمیٹی کے تحت ریٹائرڈ جسٹس ششی کانت اگروال پیر کو چوبے علاقے میں واقع بکرو گاؤں پہنچے اورموقع واردات کاجائزہ لیا۔