عمر محض 21 سال، دواسازی کی آڑ میں چلاتا تھا نشے کا کاروبار

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 14th February 2020, 1:45 AM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،13فروری (آئی این ایس انڈیا)نارکوٹکس کنٹرول بیورو نے ایک کروڑوں کے منشیات ریکٹ کا پردہ فاش کیا ہے۔اس ریکٹ کو آن لائن ادویات فروخت کرنے کی آڑ میں طویل وقت سے چلایا جا رہا تھا۔21 سالہ دیپو لکھنؤ کے عام باغ میں واقع ایک گھر سے اس پورے دھندے کو آپریٹ کر رہا تھا۔دیپو ایک ریٹائرڈ پی سی ایس افسر کا بیٹا ہے اور لکھنؤ کے ایک کالج سے ہوٹل مینجمنٹ کا کورس کیا ہے۔اسے حال ہی میں منشیات کنٹرول بیورو کی ٹیم نے دہلی سے گرفتار کیا ہے۔اس کے گھر سے تلاشی کے دوران قریب 12 ہزار نشیلی گولیاں ملی ہیں، جنہیں منشیات اور فٹنس سپلمیٹ کے پیکٹ میں پیک کر رکھا گیا تھا۔ملزم پولیس کو چکمہ دینے کے لئے کریپٹو کرسی میں ہی ادائیگی لیتا تھا۔اس پورے کھیل کا پتہ تب چلا جب برطانیہ جا رہے ایک منشیات کنسائن منٹ کو این سی بی نے ممبئی میں پکڑا۔تفتیش کے دوران 17 جنوری کو رومانیہ جا رہا ایک اور کنسائنمنٹ پکڑا گیا۔این سی بی کے ایک افسر نے بتایا کہ کارگو نے کے وائی سی پر عمل نہیں کیا تھا اور ادائیگی بھی ڈیجیٹل کر دیا گیا تھا۔اس کی جانچ کرنے پر ہندوستان سے تار جڑتے نظر آئے۔اس دوران دہلی میں برطانیہ جا رہا 10200 ٹیبلٹ کا ایک اور پارسل پکڑا گیا۔این سی بی افسر نے بتایاکہ ہم نے جب پارسل کا منبع معلوم کیا، تو لکھنؤ کا ایک اڈریس سامنے آیا۔افسر نے بتایاکہ ہم نے ایک سرولانس ٹیم قائم کرکے دیپو کو پکڑنے کا پلان بنایا۔گرفتاری کے بعد تفتیش میں اس نے بتایا کہ وہ اس دھندے میں 2018 سے ہے اور اب تک تقریبا 600 ایسے کسانمیٹ دنیا بھر میں بھیج چکا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

شاہین باغ: مظاہرین اور مذاکرات کاروں کی بات چیت بے نتیجہ،شہریت قانون واپس لینے تک ڈٹے رہنے کا عزم

شاہین باغ میں گزشتہ68 دنوں سے شہریت ترمیمی قانون، این آر سی و این پی آر کے خلاف جاری عالمی شہرت حاصل کر چکے دھرنا و مظاہرہ میں 19فروری کا دن بہت خاص رہا کیونکہ سپریم کورٹ کے ذریعہ مقرر کردہ مذاکرہ کار سنجے ہیگڈے اور سادھنا رام چندرن بات چیت کرنے پہنچے-

آسام: زبیدہ بیگم کے پاس15دستاویزات موجود شہریت ثابت کرنے میں پھر بھی ناکام!

پورے ہندوستان میں این آر سی لگائے جانے اور اس کے اثرات پر بحث جاری ہے- آسام میں این آر سی سے پیدا مشکلات کو سامنے رکھ کر لوگ پورے ملک میں این آر سی لگائے جانے کی مخالفت کر رہے ہیں - آسام میں کئی معاملے سامنے آ چکے ہیں جس میں برسوں سے وہاں رہ رہے لوگوں کو شہریت ثابت کرنے میں مشکل پیش ...

جس طرح سے سی وی سی کی تقرری ہوئی اس طرح تو چپراسی کی بھی تقرری نہیں ہو سکتی: کانگریس

کانگریس نے چیف ویجلنس کمشنر (سی وی سی) اور ویجلنس کمشنر (وی سی ) کی تقرری کو اداروں کو تباہ کرنے کی ایک اور مثال قرار دیتے ہوئے اسے غیر قانونی قرار دیا اور الزام لگایا کہ اس میں طریقہ کار پر عملدرآمد ہی نہیں کروایا گیا ہے۔