ایئر فورس کسی بھی طرح کی جنگ کے لئے تیار ہے: فضائیہ سربراہ 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2019, 11:41 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی 17جولائی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) فضائیہ سربراہ دھنوا نے کہا کہ ایئر فورس کسی بھی طرح کی جنگ کے لئے تیار ہے۔ دھنوا نے کہا کہ کارگل جیسی جنگ ہو، دہشت گرد انہ حملے ہوں یا پھر مکمل طور پر جنگ کے حالات ہوں،ہم ہر حال میں جواب دینے کے قابل ہیں۔دھنوا نے آپریشن سفید ساگر کے 20 سال ہونے کے موقع پر کارگل جنگ میں ہوئی فضائی کارروائی کے بارے میں بتایا۔ انہوں نے کہا وہ پہلا موقع تھا، جب مگ -21 طیارہ کے ذریعے رات کے وقت ہوا سے زمین پر بم پھینکے گئے۔ کارگل سے در اندازوں کو بھگانے کے لئے 1999 میں فضائیہ نے آپریشن وجے کے تحت آپریشن سفید ساگر چلائی تھی۔ دھنوا  اس وقت 17 سکواڈرن کے کمانڈنگ آفیسر تھے۔دھنوا نے کہا کہ کارگل جنگ کے بعد سے ایئر فورس کی صلاحیتوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے، اس سے ہم ہوا میں کسی بھی قسم کے خطرے کا جواب دے سکتے ہیں۔ کارگل کے وقت بم پھینکنے کی جو صلاحیت صرف میراج -2000 میں تھی، آج وہ صلاحیت سکھوئی -30، زگوار، مگ -29 اور مگ -27 اپ گریٹیڈ میں بھی ہے۔ اسی سال 14 فروری کو ہوئے پلوامہ حملے میں 40 جوان شہید ہوئے تھے. اس کے بعد ایئر فورس نے پاکستان کے بالاکوٹ میں ہوائی حملہ کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ آج ہم سکھوئی -30، مگ -29 اور میراج 2000 سے میزائل لے جانے کے قابل ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ای ڈی کی کارروائی سیاست پر مبنی ہے، چدمبرم کے وکیل ارشدیپ کا بیان

 سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم کے خلاف ای ڈی (انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ) نے آئی این ایکس میڈیا منی لانڈرنگ معاملہ میں بدھ کے روز لک آؤٹ نوٹس جاری کیا ہے۔ یہ نوٹس جاری ہونے کے بعد پی چدمبرم ملک سے باہر نہیں جا پائیں گے اور تمام ہوائی اڈوں، امیگریشن ڈیسکوں کو ہائی الرٹ پر رکھا گیا ہے۔

بی ایس پی پرنسپل اپوزیشن پارٹی بننے کے لئے کوشاں

 لوک سبھا انتخابات میں 10سیٹیں جیتنے والی بہوجن سماج پارٹی ریاست میں حکمراں جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی کی اسمبلی میں پرنسپل اپوزیشن پارٹی کے طور پر ابھر کر سامنے آنے کے لئے کوشاں ہے۔ پارٹی نےسماج وادی پارٹی کی جگہ لینے کے لئے کوششیں تیز کردی ہیں۔