مانسون اجلاس: ہندوستان میں کورونا اموات کی شرح بہت کم، ڈاکٹر ہرش وردھن کا بیان

Source: S.O. News Service | Published on 15th September 2020, 9:40 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،15؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) مرکزی وزیر صحت ہرش وردھن نے منگل کے روز راجیہ سبھا میں کہا کہ حکومت نے کورونا وبا کے پھیلنے سے نمٹنے کے لئے موثر اقدامات کیے ہیں جس کی وجہ سے انفیکشن سے اموات کی شرح دوسرے ممالک کے مقابلے میں بہت کم ہے۔

ڈاکٹر ہرش وردھن نے ایوان میں 'کووڈ وبا اور حکومت کے اقدام' پر ایوان میں ایک بیان دیتے ہوئے کہا کہ حکومت حکمت عملی سے اس وبا کا مقابلہ کر رہی ہے اور اب تک کامیاب رہی ہے۔ حکومت کووڈ- 19 کے نئے معاملات اور اس سے ہونے والی اموات کو روکنے میں کامیاب ہوئی ہے۔

کورونا انفیکشن کے معاملات اور اس سے لڑنے کے لئے حکومت کی حکمت عملی کے بارے میں ایوان کو آگاہ کرتے ہوئے وزیر صحت نے کہا کہ ملک میں وبائی امراض کی وجہ سے اموات کی تعداد میں کمی آئی ہے اور اس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے اقدامات کامیاب رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں 13 ریاستوں میں سب سے زیادہ کورونا کے معاملے پائے جاتے ہیں لیکن دنیا کے دیگر ممالک کی نسبت یہاں صورتحال بہت بہتر ہے۔ کورونا کی وجہ سے زیادہ تر معاملات اور اموات مہاراشٹر، آندھرا پردیش، تمل ناڈو، کرناٹک، اترپردیش، دہلی، آسام، کیرالہ، مغربی بنگال، بہار، تلنگانہ، اوڈیشہ اور گجرات سے ہیں۔ سرکاری کاوشوں سے کورونا انفیکشن پر روک تھام لگی ہے۔ کورونا انفیکشن کے معاملات میں ہندوستان دنیا میں دوسرے نمبر پر ہے۔

مرکزی وزیر نے کہا کہ کورونا کی وبا میں متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 48 لاکھ کو عبور کرچکی ہے جبکہ اس وائرس کی وجہ سے 79 ہزار سے زیادہ افراد ہلاک ہوگئے ہیں۔ ملک میں 37.7 لاکھ کورونا مریض ٹھیک ہو چکے ہیں اور بحالی کی شرح 77.77 فیصد کے آس پاس ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بالاسبرامنیم اس ملک کے موسیقی اورلسانی ثقافت کی ایک عمدہ مثال تھے: سونیا گاندھی

کانگریس  کی  چیئرپرسن سونیا گاندھی نے موسیقی کی دنیا کی ایک عظیم ہستی بالاسبرامنیم کے انتقال پراپنے گہرے رنج  وغم  کا اظہار کرتےہوئے کہا ہے کہ وہ ملک کی  موسیقی اور لسانی  ثقافت کے عمدہ مثال تھے اور ان کے نہیں رہنے  سے آرٹ اور کلچرل کی دنیا پھیکی پڑگئی ہے۔

الطاف بخاری کا راجوری کے تین متاثرہ کنبوں کو معقول معاوضہ و نوکریاں فراہم کرنے کا مطالبہ

اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے کہا ہے کہ پولیس کی فارنسک رپورٹ میں امشی پورہ شوپیاں انکاؤنٹر میں ہلاک ہونے والے راجوری ضلع کے 3 مقتول مزدوروں کی شناخت کی تصدیق سے قانون کے تحت سزا یقینی ہے