عصمت دری کی راجدھانی بن گیا ہندوستان پھر بھی خاموش ہیں پی ایم مودی: راہل

Source: S.O. News Service | Published on 9th December 2019, 11:39 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ہزاری باغ،9/دسمبر(ایس او نیوز/ایجنسی) کانگریس کے سنیئر لیڈر راہل گاندھی نے اتر پردیش میں ایک لڑکی کے ساتھ ہوئی عصمت دری معاملے پر وزیراعظم نریندر مودی پر خاموشی اختیار کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے آج کہاکہ ہندوستان دنیا کی عصمت دری کی راجدھانی میں تبدیل ہو رہا ہے ، پھر بھی پی ایم مودی خاموش ہیں۔ کانگریس کے سابق قومی صدر راہل گاندھی نے یہاں بڑکا گاؤں ہائی اسکول میدان میں جھارکھنڈ اسمبلی انتخاب کیلئے مہا گٹھ بندھن امیدوار امبا ساہو کے حق میں منعقد انتخابی ریلی کو خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اتر پردیش میں ایک لڑکی کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی اور بعد میں اسے جلا دیا گیا لیکن اس سنگین جرم کے خلاف وزیراعظم مودی نے ایک لفظ بھی نہیںکہا ۔ انہوں نے کہاکہ ہندوستان آج دنیا کی عصمت دری کی راجدھانی میں تبدیل ہورہا ہے ۔ پھربھی پی ایم مودی خاموش ہیں۔

راہل گاندھی نے کہاکہ خواتین آج اپنے گھر سے باہر نکلنے میں خوف محسوس کر رہی ہیں۔ خواتین کو سرعام جلایاجارہا ہے انہیں گولی ماری جارہی ہے لیکن وزیراعظم مودی ان کی حفاظت کیلئے ایک لفظ بھی نہیں بول رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پی ایم مودی جب بھی جھار کھنڈ میں آتے ہیں تب کسانوں کی حفاظت کرنے کا دعوی کرتے ہیں۔

کانگریس لیڈر نے کہاکہ کسانوں کا قتل ہورہاہے ان کی زمینیں چھینی جارہی ہیں اور وزیراعظم اسٹیج سے دعویٰ کر رہے ہیں کہ کسانوں کو سیکوریٹی دی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ یہ کانگریس کی حکومت تھی جس نے کسانوں کے مفاد کی حفاظت کیلئے تحویل اراضی قانون بنایا تھا جس کی پی ایم مودی نے پرزور مخالفت کی تھی ۔

راہل گاندھی نے چھتیس گڑھ کی مثال دیتے ہوئے کہاکہ اس ریاست میں پانچ سال کی مقررہ مدت میں پلانٹ لگانے میں ناکام رہنے کے بعد ٹاٹا کو کسانوں سے لی گئی زمین واپس کرنی ہی پڑی ہے ۔ انہوں نے دعویٰ کیاکہ جھارکھنڈ کی پڑوسی ریاست چھتیس گڑھ میں کانگریس حکومت نے کسانوںکیلئے دھان کی کم ازکم امدادی قیمت ( ایم ایس پی ) 2500 روپے فی کوئنٹل مقرر کی ہے وہیں جھارکھنڈ میں دھان کا ایم ایس پی محض 1300 روپے فی کوئنٹل ہے ۔ انہوںنے کہاکہ مرکز کی مودی حکومت نے گذشتہ پانچ۔ چھ سالوںمیں دس سے پندرہ صنعت کاروں کے تین لاکھ 50 ہزار کروڑ روپے کے قرض معاف کر دیئے لیکن کسانوں اور چھوٹے دکانداروں کے قرض معاف نہیں ہوئے ۔

کانگریس لیڈر نے پی ایم مودی پر نشانہ لگاتے ہوئے کہاکہ بغیر کسی کو بتائے ملک پر گبر ٹیکس ( جی ایس ٹی ۔ سروس اور خدمات ٹیکس ) تھو پ دیا گیا جس کا فائدہ اڈانی اور امبانی نے اٹھایا ۔ انہوںنے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ صنعت کاروں کو مفت میں زمین دینے کے عوض میں ملے پیسوںکی بدولت ہی پی ایم مودی روز۔ بروز ٹیلی ویژن پر دیکھائی دیتے ہیں۔

راہل گاندھی نے لوگوں سے پوچھا کہ ” آپ نے کبھی بھی وزیر اعظم مودی کو کسانوں سے گلے ملتے یا کسی مزدور سے ہاتھ ملاتے ہوئے دیکھا ہے لیکن انہیں کارپوریٹ دوستوں سے گلے ملتے ہمیشہ دیکھا جاسکتاہے ۔ انہوں نے جھارکھنڈ کے باشندوں سے وعدہ کیا کہ ریاست میں مہا گٹھ بندھن کی حکومت بنتے ہی چھتیس گرھ کی طرح جھارکھنڈ میں کسانوں کو بھی دھان کا ایم ایس پی 2500 روپے فی کوئنٹل دئے جانے کے ساتھ ہی کسانوں کے دولاکھ روپے تک کے قرض معاف کر دیئے جائیںگے ۔ زبردستی چھینی گئی زمینیں واپس کر دی جائیںگی ، تحویل اراضی بل نافذ کیاجائے گا دیگر پسماندہ طبقات ( اوبی سی ) کو 27 فیصد ریزرویشن اور کسانوں پر گولی چلوانے والوںکے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی ۔

کانگریس لیڈر نے کہاکہ وزیر اعظم مودی نے ہر سال دو کروڑ نوجوانوں کو نوکری دینے کا وعدہ کیا تھا ساتھ ہی جھارکھنڈ کے وزیراعلیٰ رگھور داس بھی گذشتہ پانچ سال سے لوگوں کو روزگار دینے کی بات کر رہے ہیں لیکن کوئی بتائے کہ کسے روزگار ملا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ روزگار ملنا تو دور ریاست کے کل ۔ کارخانوں میں بھی تالے لگ گئے ہیں۔ اس وجہ سے ریاست کے نوجوان روزگار کیلئے دوسری ریاستوں میں نقل مکانی پر مجبور ہیں۔ انہوں نے کہاکہ لوک سبھا انتخاب میں اکثریت نہیں ملنے کی وجہ سے کانگریس نیائے یوجنا نافذ نہیں کر پائی ۔

راہل گاندھی نے کہاکہ جھارکھنڈ غریب ریاست نہیں ہے لیکن یہاں کے لوگوںکوغریب بناکر رکھا گیا ہے ۔ انہوں نے وعدہ کیاکہ یہاں کے پانی ، جنگل اور زمین لوگوں کو واپس کئے جائیںگے ۔ انہوںنے کہاکہ ریاست میں نوجوان ،قبائل اور دلتوںکی حکومت بنائی جائے گی ۔ نہ کہ کارپوریٹ کی ۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی لیڈر جہاں کہیں جاتے ہیں وہاں لوگوں کو تقسیم کردیتے ہیں لیکن ملک ان کے حساب سے نہیں چلے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

یوم جمہوریہ کے موقع پر پس مرگ پدما وبھوشن ایوارڈ پانے والوں میں شامل ہیں اڈپی پیجاورمٹھ سوامی اور جارج فرنانڈیز

یوم جمہوریہ کے موقع پر مرکزی حکومت کی طرف سے مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں خدمات انجام دینے والی شخصیات کو پدما بھوشن اور پدماوبھوشن جیسے اعزازات سے نوازا جاتا ہے۔ امسال جن شخصیات کو پس مرگ پدماوبھوشن ایوارڈ سے نوازا گیا ہے اس میں پیجاور مٹھ کے سوامی اور سابق مرکزی وزیر ...

شاہین باغ وہ انقلاب ہے جو اب تھمنے والا نہیں ... آز:ظفر آغا

شاہین باغ اب محض ایک پتہ نہیں بلکہ ایک تاریخ ہے۔ یہ وہ تاریخ ہے جس کا سلسلہ 1857 سے ملتا ہے۔ جی ہاں، 1857 میں جس طرح انگریزوں کے مظالم اور ناانصافی کے خلاف بہادر شاہ ظفر کی قیادت میں ایک بغاوت پھوٹ پڑی تھی، ویسے ہی نریندر مودی کے خلاف شاہین باغ سے ایک بغاوت کا نقارہ بج اٹھا ہے اور ...

دہلی کے شاہین باغ میں لاکھوں مظاہرین نے منایا پورے جوش وخروش کے ساتھ یوم جمہوریہ؛ شہریت قانون کی سخت مخالفت

شہریت قانون کی مخالفت کرنے والے احتجاجیوں نے آج 26 جنوری کے موقع پر پورے جوش و خروش کے ساتھ یوم جمہوریہ کی تقریب منائی اور لاکھوں لوگوں کی موجودگی میں  شاہین باغ میں ہی ترنگا جھنڈا لہراتے ہوئے  ملک میں نئے انقلاب  کی جھلک دکھائی۔

شہریت قانون اور این آر سی ملک کے دلتوں، غریبوں اور پسماندہ طبقہ کے خلاف ہے؛ سیتامڑھی میں انسانی زنجیر کے ذریعے احتجاج

  سی اے اے، این آر سی اور این پی آر کے خلاف احتجاجی مظاہرے اب شہروں سے نکل کر گاوں اور دیہاتوں میں بھی پھیل چکے ہیں اور ملک کے تقریبا ہر علاقوں سے بڑے پیمانے پر ریلیاں اور احتجاج کئے جانے کی خبریں موصول ہورہی ہیں، اسی طرح ایک خبر بہار  کےضلع سیتامڑھی کے سونبر سا بلاک کے مہولیا ...

شہریت قانون کی مخالفت میں اب شیموگہ میں نظر آرہا ہے شاہین باغ ؛26 جنوری کی رات کو پبلک پارک میں عورتوں کا جم غفیر!

جیسے جیسے شہریت قانون کی مخالفت میں اُٹھنے والی آوازوں کو دبانے کی کوشش کی جارہی ہے، یہ اُتنی ہی تیزی کے ساتھ اُبھرتی نظر آرہی ہے، اب تازہ خبر ریاست کرناٹک کے شہر شموگہ سے سامنے آئی ہے جہاں 25 جنوری کی شام سے ہی  آر ایم نگر میں موجود پبلک پارک میں خواتین کی بھیڑ جمع ہونی شروع ...

جدوجہد کرنے والے نوجوان گاندھی جی کے عدم تشدد کے پیغام کو ہمیشہ یاد رکھیں: صدر جمہوریہ رامناتھ کووند کا قوم کو پیغام

صدر جمہوریہ رامناتھ کووند نے جمہوریت کے لئے حکمراں اور اپوزیشن دونوں فریقوں کو اہم قرار دیتے ہوئے عوام خاص طورپر نوجوانوں کو بابائے قوم مہاتما گاندھی کے عدم تشددے کے منتر کو ہمیشہ یاد رکھنے کی تلقین کی۔

رات بارہ بجے ہی بھٹکل میں منائی گئی یوم جمہوریہ کی تقریب؛ ہندوستانی آئین کی تجاویز پڑھ کر سنائی گئیں؛سینکڑوں لوگوں کی شرکت

بھٹکل میں  وی دی انڈین (بھٹکل) کی جانب سے تعلقہ اسٹڈیم کے باہر رات بارہ بجے یوم جمہوریہ کی تقریب نظر آئی جہاں  عوام نے  ہندوستانی آئین کی تجاویز پڑھ کر  ہندوستانی دستور کے تحفظ  کا عہد لیا۔

سی اے اے: شاہین باغ روڈ کھلوانے کیلئے آمنے سامنے ہوں گے لوگ؟ پولیس کو دیا ایک ہفتے کا وقت

شاہین باغ میں پرامن مظاہرے کے درمیان اب لوگوں کے صبر کا باندھ ٹوٹتا دکھائی دے رہا ہے۔اب راستہ بند ہونے کی وجہ سے پریشانی اٹھا رہے لوگوں نے بھی سڑک پر اترنے کا فیصلہ کر لیا ہے،یہ لوگ تقریبا 40 دن سے بند کالندی کنج راستے کو کھلوانے کے لئے مارچ نکالنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں۔بتا دیں ...

انڈین نوائط فورم کی جانب سے لوگو ڈیزائن کرنے کا مقابلہ؛ بہترین ڈیزائن کرنے پر دس ہزار روپئے کے انعامات کا اعلان

بیرون بھٹکل میں قائم بھٹکل کی آٹھ جماعتوں پر مشتمل انڈین نوائط فورم (آئی این ایف) نے  اپنے ادارہ کے لئے خوبصورت لوگو (LOGO) ڈیزائن  کرنے کا مقابلہ منعقد کیا ہے اور سب سے خوبصورت اور بہترین لوگو ڈیزائن کرنے پر دس ہزار روپئے کے انعامات کا اعلان کیا ہے۔

26جنوری کو احتجاجی مظاہروں کی اجازت نہیں:پولیس کمشنر بھاسکر راؤ

شہرکے پولیس کمشنر بھاسکر راؤ نے یوم جمہوریہ تقریبات کیلئے شہراور مانک شاہ پریڈ گراؤنڈ پر سکیورٹی انتظامات کی تفصیلات پیش کرنے کے دوران واضح کیا کہ 26جنوری کو شہر بھر میں یوم جمہوریہ تقریبات منانے والے اداروں انجمنوں پر کوئی پابندی عائد نہیں ہے -

مودی حکومت نے ’بھیما کوریگاؤں تشدد‘ کی جانچ این آئی اے کو سونپی، مہاراشٹر حکومت ناراض

شیوسینا کے ذریعہ بی جے پی سے رشتہ توڑے جانے اور مہاراشٹر میں کانگریس و این سی پی کے ساتھ مل کر حکومت سازی کے بعد سے ہی مرکز کی مودی حکومت اور مہاراشٹر حکومت کے درمیان اختلافات منظر عام پر آنے شروع ہو گئے تھے، جو اب بڑھتے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔

سپریم کورٹ کا دہلی میں این ایس اے لگائے جانے کے خلاف عرضی کی سماعت سے انکار

سپریم کورٹ نے دہلی میں قومی سلامتی قانون (این ایس اے) کےنفاذ کرنے کے حکومت کے فیصلے کے خلاف دائر عرضی پر سماعت کرنے سے جمعہ کو انکار کردیا۔ جسٹس ارون مشرا اور جسٹس اندرا بنرجی کی بنچ نے عرضی گذار منوہر لال شرما کی عرضی کی سماعت سے انکار کردیا ہے۔