بنگلوروشہر میں پارکنگ کی خلاف ورزیوں میں اضافہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2019, 10:31 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍جون (ایس او نیوز) ریجنل ٹرانسپورٹ آفس (آر ٹی او) کی رپورٹ کے مطابق شہر کی سڑکوں پر 73 لاکھ سے بھی زائد گاڑیاں دوڑ رہی ہیں اور روزانہ ایک ہزار سے بھی زائد نئی گاڑیاں سڑکوں پر اتر رہی ہیں جس کی وجہ سے پارکنگ کے لئے جگہ تنگ ہوتی جارہی ہے- مزید یہ کہ 55لاکھ سے بھی زائد دو پہیوں والی گاڑیاں بنگلور کی سڑکوں پر گھوم رہی ہیں - جو ٹرافک اژدہام میں بھی راستہ بنا کر نکل جاتے ہیں - دن بہ دن گاڑیوں کے اضافے سے پارکنگ کی خلاف ورزیوں میں اضافہ ہورہا ہے- زیادہ سے زیادہ لوگ اپنی گاڑیوں کو اپنی منزل کے قریب رکھنا چاہتے ہیں - ایک سے زائد گاڑیاں رکھنے والے کار مالک اپنی کاروں کو رہائشی مکانوں کے آگے پارکنگ کررہے ہیں جس کی وجہ سے دوسری گاڑی گزرنے کے لئے سڑک تنگ ہوجاتی ہے- ٹرافک کے ماہرین کے مطابق ایک سے زائد گاڑیاں رکھنے کے شوق میں اضافہ ہوتا ہی جارہا ہے غیر قانونی طو پر سڑکوں کے کنارے گاڑیوں کو کھڑی کر کے دوسری گاڑیوں کے لئے راستہ تنگ کرنا قانون کے خلاف ہے- ان حالات سے نمٹنے کے لئے بنگلور ٹرافک پولیس نے 16 ایسی سرکاری زمینوں کی شناخت کی ہے جنہیں پارکنگ کے لئے استعمال کیاجاسکتا ہے- جن میں چار اشوک نگر، دوہلسور میں، جیون بھیم نگر میں 3 اور کے آر پورم اور ایچ اے ایل میں ایک ایک سرکاری زمین کی شناخت کی گئی ہے- ٹرافک پولیس کے ایک سینئر افسر نے بتایا کہ بی بی ایم پی کو اس سلسلے تمام تفصیلات دے دی گئی ہے - مگر ابھی تک کمشنر منجوناتھ پرساد کی جانب سے کوئی جواب نہیں ملا ہے- انہوں نے بتایا کہ اب یہ سماجی اداروں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس سرکاری زمین کا کس طرح استعمال کرنا ہے، طے کریں -

ایک نظر اس پر بھی

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی مدد کے لئے اے پی سی آر کی خدمات دستیاب

آئی ایم اے میں سرمایہ کاری کرکے دھوکہ کھانے والے متاثرین کی قانونی رہنمائی اور اُن کی  مدد کے لئے  اسوسی ایشن فور پروٹیکشن آف سیول رائٹس  (اے پی سی آر)  کی خدمات حاصل کی جاسکتی ہے۔جن  لوگوں نے  اپنی چھوٹی چھوٹی سرمایہ  کاری  اس کمپنی میں کی تھی اور اب وہ کنگال ہوچکے ہیں، اے پی ...

جندال اسٹیل کمپنی معاملہ سے متعلق حکومت نے سب کمیٹی تشکیل دی، کے پی سی سی سے استعفیٰ دینے کی خبرو ں میں کوئی سچائی نہیں: دنیش گنڈو راؤ

پردیش کانگریس کمیٹی(کے پی سی سی) صدر دنیش گنڈو راؤ نے کہا کہ جندال کمپنی کے لئے زمین فروخت کرنے کے معاملہ میں ریاستی حکومت نے سب کمیٹی تشکیل دی ہے۔

آئی ایم اے معاملہ میں نرم رویہ اختیار کرنے کاسوال پیدا نہیں ہوتا: ضمیر احمد خان

آئی مانیٹری اڈوائزری (آئی ایم اے) نامی پونزی کمپنی کے دھوکہ دہی معاملہ میں نرم رویہ اختیار کئے جانے کا سوال پیدا نہیں ہوتا۔ خصوصی تحقیقاتی ٹیم (ایس آئی ٹی) کی جانب سے تحقیقات جاری ہیں۔اس پس منظر میں بی جے پی کی جانب سے عائد کئے جارہے الزامات بکواس ہیں۔