بھٹکل مسلم جماعت کیرالہ کی جانب سے 6/اکتوبر کو ہوگا بی ایم جے ولیج کا شاندار افتتاح؛ سیلاب سے متاثرہ مالی طور پر کمزور خاندانوں کو تقسیم کئے جائیں گے مکانات

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 3rd October 2019, 9:24 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 3/اکتوبر (ایس او نیوز) مورخہ  6/اکتوبر بروز اتوار  کو ریاست کیرالہ کے وائناڈ میں  بی ایم جے (بھٹکل مسلم جماعت)  ولیج کا شاندار افتتاح ہوگا، اس کے ساتھ ہی دوسرے مرحلے کے مکانوں کی تعمیر کا بھی سنگ بنیاد  رکھا جائے گا۔اس بات کی اطلاع  بی ایم جے ولیج کے چیرمین اور بی ایم جے کلچرل سوسائٹی  کے صدر جناب عبدالمجید جوکاکو صاحب نے دی۔ انہوں نے بتایا کہ گذشتہ سال ہوئی زبردست بارش کے نتیجے میں کیرالہ کے مختلف شہروں میں  جو  سیلاب آیا تھا، اُس سے  کیرالہ کے  وائناڈ میں  تباہی مچ گئی تھی اور کئی لوگوں کے مکانات  منہدم ہوگئے تھے،  واقعے کے بعد  متاثرہ علاقوں کا دورہ کرکے    اُن میں مالی طور پر کمزور خاندانوں کے لئے  بھٹکل مسلم جماعت کیرالہ کی جانب سے  مکانات تعمیر کرکے دینے کا منصوبہ بنایا گیا تھا، اُسی کے پیش نظر پہلے مرحلے میں 16 مکانات تعمیر کئے گئے ہیں جبکہ اگلے مرحلے میں مزید 12 مکانات تعمیر کرنے ہیں۔

جناب عبدالمجید نے بتایا کہ وائناڈ کے پنمارم میں  170 سینٹ(قریب پاونے دو ایکڑ)    زمین  پر بی ایم جے ولیج تعمیر کیا گیا ہے   اور انشاء اللہ 6/اکتوبر کو سبھی تعمیر شدہ 16 مکانات متاثرہ خاندانوں کو تقسیم کئے جائیں گے۔  اسی کے ساتھ اسی دن مکانات تعمیر کرنے کے دوسرے مرحلے میں  مزید 12 مکانات کے لئے سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔

  کیرالہ روینو ڈپارٹمنٹ کے پرنسپل سکریٹری ڈاکٹر وی وینو (آئی اے ایس)کے ہاتھوں  بی ایم جے ولیج کا افتتاح ہو گا جبکہ ضلع وائناڈ کے سب کلکٹر مسٹر ایس اُمیش (آئی اے ایس) کے ہاتھوں  16 منتخب  متاثرین کے خاندانوں کو گھروں کی چابیاں دی جائیں گی۔

بی ایم جے ولیج کے دوسرے مرحلے کا سنگ بنیاد  علاقہ کے رکن اسمبلی مسٹر او ۔آر کیلو کے ہاتھوں رکھا جائے گا، اسی طرح ایک اور رکن اسمبلی سی مموٹی کے ہاتھوں کلچرل سینٹر کا بھی سنگ بنیاد رکھا جائے گا۔ کلچرل سینٹر کے تعلق سے جناب عبدالمجید جوکاکو صاحب نے بتایا کہ  بی ایم جے ولیج  کی تعمیر کے بعد اُس  کی دیکھ ریکھ کی ذمہ داری کلچرل سینٹر کی ہوگی وہ پورے بی ایم جے ولیج کو مینیج کریں گے۔

 بھٹکل مسلم جماعت کیرالہ کے صدر جناب محمد جعفر مصباح، سکریٹری جناب  فیاض احمد مصباح کے ساتھ ساتھ کلچرل سوسائٹی کے سکریٹری  جناب کے معروف بھی اس موقع پر موجود رہیں گے۔ جناب عبدالمجید جوکاکو صاحب نے   عوام الناس سے درخواست کی ہے کہ  سیلاب سے متاثرہ خاندانوں کی مدد کے لئے  وہ  آگے آئیں، بھٹکل مسلم جماعت کیرالہ   سیلاب سے متاثرہ  خاندانوں کی مدد کے لئے  نہایت سرگرم ہوکر کام کررہی ہے۔ اگر عوام مدد کرنا چاہیں تو اُن سے موبائل نمبر 9447116666 پر رابطہ کرسکتے ہیں۔

 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار اسپتال سے 12 مزید لوگ ڈسچارج

بھلے ہی  ضلع اُترکنڑا میں کورونا پوزیٹیو کے معاملے ہر روز سامنے آرہے ہوں، لیکن کاروار اسپتال میں ایڈمٹ کورونا کے متاثرین  روبہ صحت ہوکر ڈسچارج ہونے کا سلسلہ بھی برابر جاری ہے۔

اُترکنڑا میں پھر 36 کورونا پوزیٹیو؛ بھٹکل میں بھی کورونا کے بڑھنے کا سلسلہ جاری؛ آج ایک ہی دن 19 معاملات

اُترکنڑا میں کورونا کے معاملات میں روز بروز اضافہ کا سلسلہ جاری ہے اور آج منگل کو بھی ضلع کے مختلف تعلقہ جات سے 36 کورونا کے معاملات سامنے آئے ہیں جس میں صرف بھٹکل سے پھر ایک بار سب سے زیادہ  یعنی 19 معاملات سامنے آئے ہیں۔ کاروار میں 6،  ہلیال میں 3،  کمٹہ، ہوناور ...

دبئی سے بھٹکل و اطراف کے 181 لوگوں کو لے کر آج آرہی ہے دوسری چارٹرڈ فلائٹ؛ رات کو مینگلور ائرپورٹ میں ہوگی لینڈنگ

کورونا وباء اور اس کے بعد ہوئے لاک ڈاون سے  دبئی اور امارات میں پھنسے ہوئے 181 لوگوں کو لے کر آج دبئی سے دوسری چارٹرڈ فلائٹ مینگلور پہنچ رہی ہے۔ اس بات کا اطلاع بھٹکل کے معروف اورقومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم کے نائب صدر  جناب عتیق الرحمن مُنیری نے دی۔

منگلورو:گروپور میں منڈلارہا ہے مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ۔ قریبی گھروں کو کروایا گیاخالی۔ مکینوں میں مایوسی اور دہشت کا عالم

گروپور میں اتوار کے دن بنگلے گُڈے میں پہاڑی کھسکنے سے جہاں  تین  مکان زمین بوس اور دو بچے، صفوان (16سال) اور سہلہ (10سال) جاں بحق ہوگئے تھے وہاں پر مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ لوگوں کے سر پر منڈلا رہا ہے۔

بھٹکل میں اب کورونا کا قہر؛ 45 معاملات سامنے آنے کے بعدحکام کی اُڑ گئی نیند؛ انتظامیہ نےکیا دوپہر دوبجے سے ہی لاک ڈاون کا اعلان

بھٹکل میں کورونا کو لے کر گذشتہ چار پانچ دنوں سے جس طرح کے خدشات ظاہر کئے جارہے تھے، بالکل وہی ہوا، آج ایک ہی دن 45 کورونا کے معاملات سامنے آنے سے نہ صرف حکام  کی نیندیں اُڑ گئیں بلکہ عوام میں بھی خوف وہراس کی لہر دوڑ گئی۔  حیرت کی بات یہ رہی کہ آج جن لوگوں کے رپورٹس پوزیٹیو ...