بابری مسجد-رام مندر اراضی پر فیصلہ کے منتظر آر ایس ایس لیڈروں نے دہلی میں ڈالا ڈیرا

Source: S.O. News Service | Published on 5th November 2019, 4:48 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،5؍نومبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) آر ایس ایس کی اعلیٰ قیادت نے دہلی میں ڈیرا ڈال دیا ہے۔ آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت کو چھوڑ کر باقی سبھی سرکردہ لیڈران دہلی واقع ہیڈکوارٹر میں ٹھہرے ہوئے ہیں۔ مانا جا رہا ہے کہ یہ لیڈران ایودھیا معاملہ پر سپریم کورٹ کے فیصلے کو لے کر دہلی میں جمے ہوئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آر ایس ایس لیڈر ایودھیا معاملے پر آنے والے فیصلے کے مدنظر دہلی میں ہی رہ کر پورے واقعہ پر نظر رکھنا چاہتے ہیں، کیونکہ انھیں لگتا ہے کہ دہلی میں رہ کر حکومت اور تنظیم میں تال میل بنانا آسان رہے گا۔ ذرائع کے مطابق آر ایس ایس کے سرکردہ لیڈران سریش بھیاجی جوشی، ڈاکٹر کرشن گوپال، دتاترے ہوسبولے، ارون کمار وغیرہ آر ایس ایس ہیڈکوارٹر پہنچ چکے ہیں۔ یہ سبھی لیڈران گزشتہ 30 اکتوبر سے ہی دہلی میں موجود ہیں۔

دراصل ایودھیا معاملے پر 17 نومبر سے پہلے سپریم کورٹ کے ممکنہ فیصلے کے سبب آر ایس ایس پہلے سے ہی نومبر میں ہونے والے اپنے سبھی پروگرام ملتوی کر چکا ہے۔ اس وجہ سے سینئر عہدیداروں کے ملک بھر کے دورے بھی ٹال دیئے گئے ہیں۔ ایسے میں آر ایس ایس کی اعلیٰ قیادت اب دہلی میں رہ کر حالات پر نظر رکھنا چاہتی ہے۔

گزشتہ 31-30 اکتوبر کو دہلی کے چھترپور واقع دھیان سادھنا سنٹر میں بی جے پی لیڈروں اور سبھی معاون تنظیموں کے عہدیداروں کے ساتھ ہوئی دو روزہ میٹنگ میں طے ہوئی پالیسی کو آر ایس ایس لیڈران دہلی میں رہ کر زمین پر اتارنے میں مصروف ہیں۔

آر ایس ایس کا ماننا ہے کہ رام مندر پر دیرینہ فیصلہ اب چند دنوں کی بات ہے۔ ایودھیا میں رام مندر تعمیر آر ایس ایس کا خواب رہا ہے۔ ایسے میں تنظیم کا پورا فوکس اسی ایشو پر ہے۔ آر ایس ایس کے لیڈروں کا ماننا ہے کہ دہلی میں رہ کر حکومت و تنظیم کے درمیان بہتر تال میل قائم کر کے رام مندر پر سپریم کورٹ کا فیصلہ آتے ہی آگے کی پالیسی کو زمین پر اتارا جا سکتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں کے ایک وکیل اور کشمیر کی ایک خاتون کورونا سے ہلاک، لوگ دہشت زدہ

 جموں سے تعلق رکھنے والے ایک وکیل اور جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام کی ایک خاتون کی موت کے بعد کورونا ٹیسٹ مثبت آنے سے جموں و کشمیر یونین ٹریٹری میں اس وائرس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 23 ہوگئی ہے۔ ان ہلاکتوں کے بعد لوگوں میں ایک دہشت کا ماحول بھی دیکھنے کو مل رہا ہے۔

عیدالفطر: صدر کووند، پی ایم مودی اور راہل گاندھی سمیت متعدد سیاسی ہستیوں نے پیش کی مبارکباد

ہندوستان میں لاک ڈاؤن کے درمیان آج عید منائی جا رہی ہے۔ حالانکہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے لوگ آج اپنے گھروں میں ہی عید کی نماز ادا کر رہے ہیں اور وہ چہل پہل بالکل بھی دیکھنے کو نہیں مل رہی جو ہر سال دیکھنے کو ملتی تھی۔

آر ایس ایس کو شرم آنی چاہیے کہ حکومت نے معیشت کو تباہ کر دیا: پی چدمبرم

سابق مرکزی وزیر خزانہ اور سینئر کانگریس رہنما پی چدمبرم نے ہفتہ کے روز ایک مرتبہ پھر معیشت کے موضوع پر مرکزی حکومت کو ہدف تنقید بنایا۔ انہوں نے یکے بعد دیگرے کئی ٹوئٹ کر کے حکومت کے ساتھ ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) اور راشٹریہ سوم سویک سنگھ (آر ایس ایس) پر بھی حملہ بولا۔

برازیل میں ایک دن میں 1179 مریض چل بسے

لاطینی امریکہ میں کرونا وائرس سے بدترین متاثر ملک برازیل میں منگل کو 1179 افراد ہلاک ہوئے، جو ملک میں 24 گھنٹوں کے دوران ہلاکتوں کا نیا ریکارڈ ہے۔ ان میں سے 324 اموات صرف ایک صوبے ساؤپولو میں ہوئی ہیں۔