بابری مسجد-رام مندر اراضی پر فیصلہ کے منتظر آر ایس ایس لیڈروں نے دہلی میں ڈالا ڈیرا

Source: S.O. News Service | Published on 5th November 2019, 4:48 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،5؍نومبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) آر ایس ایس کی اعلیٰ قیادت نے دہلی میں ڈیرا ڈال دیا ہے۔ آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت کو چھوڑ کر باقی سبھی سرکردہ لیڈران دہلی واقع ہیڈکوارٹر میں ٹھہرے ہوئے ہیں۔ مانا جا رہا ہے کہ یہ لیڈران ایودھیا معاملہ پر سپریم کورٹ کے فیصلے کو لے کر دہلی میں جمے ہوئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آر ایس ایس لیڈر ایودھیا معاملے پر آنے والے فیصلے کے مدنظر دہلی میں ہی رہ کر پورے واقعہ پر نظر رکھنا چاہتے ہیں، کیونکہ انھیں لگتا ہے کہ دہلی میں رہ کر حکومت اور تنظیم میں تال میل بنانا آسان رہے گا۔ ذرائع کے مطابق آر ایس ایس کے سرکردہ لیڈران سریش بھیاجی جوشی، ڈاکٹر کرشن گوپال، دتاترے ہوسبولے، ارون کمار وغیرہ آر ایس ایس ہیڈکوارٹر پہنچ چکے ہیں۔ یہ سبھی لیڈران گزشتہ 30 اکتوبر سے ہی دہلی میں موجود ہیں۔

دراصل ایودھیا معاملے پر 17 نومبر سے پہلے سپریم کورٹ کے ممکنہ فیصلے کے سبب آر ایس ایس پہلے سے ہی نومبر میں ہونے والے اپنے سبھی پروگرام ملتوی کر چکا ہے۔ اس وجہ سے سینئر عہدیداروں کے ملک بھر کے دورے بھی ٹال دیئے گئے ہیں۔ ایسے میں آر ایس ایس کی اعلیٰ قیادت اب دہلی میں رہ کر حالات پر نظر رکھنا چاہتی ہے۔

گزشتہ 31-30 اکتوبر کو دہلی کے چھترپور واقع دھیان سادھنا سنٹر میں بی جے پی لیڈروں اور سبھی معاون تنظیموں کے عہدیداروں کے ساتھ ہوئی دو روزہ میٹنگ میں طے ہوئی پالیسی کو آر ایس ایس لیڈران دہلی میں رہ کر زمین پر اتارنے میں مصروف ہیں۔

آر ایس ایس کا ماننا ہے کہ رام مندر پر دیرینہ فیصلہ اب چند دنوں کی بات ہے۔ ایودھیا میں رام مندر تعمیر آر ایس ایس کا خواب رہا ہے۔ ایسے میں تنظیم کا پورا فوکس اسی ایشو پر ہے۔ آر ایس ایس کے لیڈروں کا ماننا ہے کہ دہلی میں رہ کر حکومت و تنظیم کے درمیان بہتر تال میل قائم کر کے رام مندر پر سپریم کورٹ کا فیصلہ آتے ہی آگے کی پالیسی کو زمین پر اتارا جا سکتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی-شاہ کی قیادت کی وجہ سے ایودھیا پر ایسا فیصلہ آیا، یوگا گرو بابا رام دیو نے نوے فیصد مسلمانوں کے آباء واجداد کو ہندو بتایا

 9 نومبر کو ایودھیا معاملے میں فیصلہ آنے کے بعدجہاں پہلے ہرطرف’’ امن اورکسی کی جیت نہیں ‘‘کے دعوے اوربیانات دیے جارہے تھے،اب حسب ِ توقع اشتعال انگیزبیانات آنے شروع ہوگئے ہیں۔جس سے سوال آتاہے کہ کیااپنے لیڈروں کوزبان قابورکھنے کی نصیحت بھی جملہ تونہیں تھی؟

لکھنؤ میں مسلم پرسنل لاء بورڈ کے عاملہ کی میٹنگ، بابری مسجد معاملہ کے فریق اقبال انصاری ایکشن کمیٹی کی میٹنگ میں شریک نہیں ہوئے

 آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے عاملہ کی میٹنگ اتوار 17؍ نومبر کو دارالعلوم ندوۃ العلماء میں منعقد ہوگی، اس میٹنگ میں ملک بھر سے بورڈ کے ایکٹیو اراکین شامل ہونے کےلیے وہاں پہنچ چکے ہیں صبح ساڑھے گیارہ بجے سے میٹنگ شروع ہوگی۔

کشمیر: خراب موسمی حالات، جوتوں کی قیمتیں آسمان پر

 وادی کشمیر میں وقت سے پہلے ہی موسم کی بے رخی نے جہاں اہلیان وادی کو درپیش مصائب ومسائل کو دو بھر کردیا وہیں لوگوں کا کہنا ہے کہ جوتے فروشوں نے اس کا بھر پور فائدہ اٹھانے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی۔

کشمیر میں غیر یقینی صورتحال کا 104 واں دن، ہنوز غیر اعلانیہ ہڑتالوں کا سلسلہ جاری

وادی کشمیر میں ہفتہ کے روز لگاتار 104 ویں دن بھی غیر یقینی صورتحال کے بیچ معمولات زندگی پٹری پر آتے ہوئے نظر آئے تاہم بازار صبح اور شام کے وقت ہی کھلے رہتے ہیں اور سڑکوں پر اکا دکا سومو اور منی گاڑیاں چلتی رہیں لیکن نجی ٹرانسپورٹ کی بھر پور نقل وحمل سے کئی مقامات پر ٹریفک جام ...

منگلورو میں بیاریس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی کے زیر اہتمام’ ملت کی تعلیمی  ترقی میں مساجدکی جماعتوں کا کردار‘ ورکشاپ کا انعقاد: نشیلی اشیاء کی لت سے نوجوان کا تحفظ بہت ضروری : سید محمد بیاری

مسلم نوجوان نشیلی اشیاء (ڈرگس) کے عادی بنتے جارہے ہیں ان کی جوانیاں ڈرگس میں برباد ہورہی ہیں، ملت کا مستقبل سنوارنے والے نوجوانوں کا غلط راہ پر چلے جانے اورتعلیم سے محروم ہونے میں نشیلی اشیاء کی لت کے عادی ہونا ایک بڑا اہم سبب ہے۔ اس کے ازالے کے لئے پولس کے تعاون سے ہر ایک مسلم ...

غیر ملکی کرنسی معاملہ: بھٹکل کے ایک مکان سے پولیس نے ضبط کئے 15لاکھ روپئے

کاروار میں غیر قانونی طور پر اپنے ساتھ تقریباً91لاکھ روپے مالیت کی غیر ملکی کرنسی لے جانے کے الزام میں بھٹکل سے تعلق رکھنے والے محمد سراج اور عبدالنذیر کی گرفتاری کے بعدکاروار اور بھٹکل کی پولیس نے بھٹکل کے دو مکانات پر چھاپہ ماری کی تھی۔

سابق ضلع انچارج وزیر اور رکن اسمبلی آر وی دیشپانڈے کا بھٹکل دورہ۔ کانگریسی لیڈران کے ساتھ میٹنگ

ہلیال حلقے سے رکن اسمبلی اور سابق وزیر آر وی دیشپانڈے اس وقت دھارواڑ، شمالی کینرا اور اڈپی ضلع کے دورے پر ہیں۔ جمعہ کے دن بھٹکل پہنچنے پر انہوں نے کانگریسی لیڈروں اورکارکنان کے ساتھ ایک ہوٹل میں ملاقات کی۔

کاروار میں 47و یں نیشنل چلڈرنس سائنس کنونشن کا ہوگا انعقاد۔ دلچسپی رکھنے والے طلبہ توجہ دیں

نیشنل کاونسل فار سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کمیونی کیشن، گورنمنٹ آف انڈیا، سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ڈپارٹمنٹ، محکمہ تعلیمات عامہ، کرناٹکا کے اشتراک سے ضلعی ریاستی اور ملکی سطح بچوں کا سائنس کنونشن منعقد کیا جارہا ہے۔