کاروارتعلقہ میں وہاٹس ایپ کی افواہ سے   سینکڑوں عوام دیہات سے فرار

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 8th August 2019, 6:43 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:8؍اگست   (ایس اؤ نیوز) ریاست کے کئی اضلاع سمیت ساحلی پٹی پرمسلسل برستی موسلادھار بارش سے عوامی زندگی اجیرن ہوگئی ہے ایسے میں وہاٹس ایپ اورسوشیل میڈیا پر پوسٹ ہونےو الی  کئی  افواہیں عوام کو دہشت میں مبتلا کررہی ہیں۔ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  کاروار تعلقہ کے کوڈسلی ڈیم میں دراڑ   پڑنے  کی افواہ سے سینکڑوں  عوام خوف زدہ ہوکر تیز رفتار بارش کے دوران ہی گاؤں سے فرار ہوگئے۔ بتایا گیا ہے کہ  چھوٹے چھوٹے بچے ، خواتین ، بزرگ وغیرہ کدرا دیہات سے بھاگتے ہوئے نکل گئے۔

دراصل ڈیم کے نشیبی علاقوں میں جتنے بھی چھوٹے بڑے ڈیم ہیں سب بھر گئے ہیں۔ ان ڈیموں سے اچانک زیادہ پانی چھوڑے جانے سے ڈیم میں دراڑ  پڑنے کی کسی نے وہاٹس ایپ پر افواہ پھیلائی۔چونکہ عوام  پچھلے چار پانچ دنوں سے بارش سے ہونے والے نقصانات کی خبریں سنتے آرہے تھے، وہاٹس ایپ پر پھیلائی گئی اس  افواہ کو عوام نے سچ مان لیا اور سینکڑوں دیہی عوام کپڑے، روزمرہ کی اشیاء وغیرہ باندھ کر روتے روتے گاؤں سے نکل گئے۔ اس موقع پر پولس، ضلعی انتظامیہ ، میڈیا کے نمائندے وغیرہ نے افواہ پر دھیان نہ دینے ، ڈیم کو کوئی نقصان نہ  ہونے اور ڈیم بالکل محفوظ ہونے کی بات کہی اور عوام سے اپیل کرتے ہوئے اُنہیں روکنے کی کافی کوشش کی،  مگر اُن کو  منایا نہ جاسکا۔ بتایا گیا ہے کہ  یہ لوگ کدرا سے سداشیو گڑھ کے اوراد کی ریاستی شاہراہ کی  طرف چلنے کے دوران راستے میں  جو بھی سواری ملی اس سواری پر سوار ہوکر نکل گئے۔ 

اس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ افواہوں پر دھیان نہ دیں۔ کالی ندی کے تمام ڈیم بالکل محفوظ ہیں، ہر ایک کی حفاظت کرنا ضلعی انتظامیہ کی ذمہ داری ہے، کسی بھی خبر کو یوں ہی نہ مان لیں اور کوئی بھی خبر ملنے پر  اس کی مکمل تصدیق کرلیں۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:پولیس فائرنگ کے مقام پر منائی گئی یوم جمہوریہ کی تقریب

شہریت ترمیمی قانون کے خلاف احتجاج کے دوران منگلورو بندر پولیس اسٹیشن کے حدود میں عزیزالدین روڈ پر جہاں پولیس فائرنگ کی وجہ سے  عبدالجلیل اور نوشین نامی دو افراد ہلاک ہوئے تھے، اسی مقام پر عوام نے یوم جمہوریہ کی تقریب منعقد کی۔

منگلورو:سی اے اے کی حمایت میں اجلاس عام وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ کی شرکت۔ نیشنل ہائی وے پر ٹریفک کا رخ موڑ دیا گیا ہے۔ بھٹکل سے منگلورو سفر کرنے والے نوٹ کریں

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون سی اے اے اور این آر سی کی حمایت میں اجلاس عام کا انعقاد کیا گیا ہے جس میں ملک کے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ شرکت کررہے ہیں۔

کاروار میں قائم ہوئی بچوں کے لئے ’چائلڈ فرینڈلی‘ خصوصی عدالت؛ کرناٹکا ہائی کورٹ جسٹس بی اے پاٹل کے ہاتھوں افتتاح

بچوں کے ساتھ ہوئے جنسی ہراسانی اور عصمت دری کے مقدمات پوکسو قانون کے تحت نپٹانے کے لئے ریاست کی تیسری ’چائلڈ فرینڈلی‘ خصوصی عدالت کاروار میں قائم کی گئی۔اس کا افتتاح کرناٹکا ہائی کورٹ کے جسٹس بی اے پاٹل کے ہاتھوں عمل میں آیا۔

کاروار میں ماہی گیروں کا احتجاج ہوا ختم۔ سپریم کورٹ کے وکیل نے کی ساحل سمندر کو بچانے کے لئے متحد ہونے کی اپیل

ساگر مالا منصوبے کے تحت کاروار تجارتی بندرگاہ کی دوسرے مرحلے کی توسیع اور ٹیگور ساحل پرسمندری موجوں کو روکنے والی دیوار تعمیر کیے جانے کے خلاف مقامی ماہی گیروں اور عوام نے جو احتجاج اور دھرنا شروع رکھا تھا، سنیچر کے دن اس کو ختم کردیا گیا کیونکہ ہائی کورٹ سے تعمیری کام پر ...

کاروار میں 71ویں یومِ جمہوریہ کا جشن : ضلع انچارج وزیر کے ہاتھوں پرچم کشائی ، کہا؛ دستور کی وجہ سے ہی ہرایک شہری کو مساوی حق حاصل ہے

ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کی قیادت میں تشکیل دئیے گئے دستور کی وجہ سے ہی ایک عام آدمی سمیت خواتین وغیرہ سیاست وغیرہ میں شریک ہوکر اعلیٰ مقام حاصل کرنا ممکن ہونے کا وزیر برائے خواتین اور ضلع نگراں کار وزیر ششی کلا جولے نے خیال ظاہر کیا۔