بھٹکل میں بارش کی وجہ سے 50ایکڑ سے زائد زرعی زمین برباد : دھان کی فصل پانی میں بہہ گئی

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 19th August 2019, 6:14 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل:19؍اگست(ایس اؤ نیوز) تعلقہ میں  سیلاب کے کم ہونے کے بعد بارش سےہونے والے نقصانات ظاہر ہونےلگے ہیں۔ موسلا دھار بارش اور طوفانی ہواؤں سے گرنے والے گھروں کی مرمت و درستی ایک طرف تو  کیچڑ میں تبدیل ہوئی زرعی زمین اور فصل کی بربادی دوسری دکھ بھری کہانی سنارہی ہیں۔

تعلقہ کے بینگرے ، المنے ، مرڈیشور سمیت کئی علاقوں کے کھیتوں میں نالوں کا پانی گھس جانے کے نتیجےمیں قریب 50ایکڑ سے زائد زمین پر کھڑی دھان کی فصل برباد ہوکر سڑ گل گئی ہے۔ ایک نظر کھیتوں پر دوڑائیں تو ایسا لگتا ہے کہ یہاں کوئی کھیتی ہی نہیں کی گئی ہے۔ کسانوں کی طرف سے خریدے گئے بیج، زرخیزی کی محنت سب کچھ پانی میں بہہ گیاہے۔ سال بھر غذا کی فراہمی کرنےو الے کھیت اس طرح گدلے ہوجائیں تو کسانوں کی ابتر حالات کا کوئی جواب نہیں مل پارہاہے۔

ساحلی پٹی پر کھیتی کی زمین بہت ہی کم ہے ، کسانوں کے پاس سینکڑوں ایکڑ زرعی زمین نہیں ہے۔ چھوٹی سی زمین پر ہی یہاں کے کسان کھیتی کرتےرہے ہیں۔ لیکن نفع نقصان کی وجہ سے کئی کسانوں نے کھیتوں میں ہی گھروں کی تعمیر کرتےہوئے دیگر ذرائع کی تلاش میں ہیں تاکہ زندگی کا گزارہ ہوسکے۔ ان وجوہات کی بنا پر ساحلی پٹی پر دن بدن زرعی زمین سکڑتی جارہی ہے۔کسان  پہلے سے زیادہ ابتر حالات سے گزر رہاہے۔ انہیں دوبارہ کھیتی کی طرف راغب کرنے میں وقت کی حکومتیں بھی ناکام ہورہی ہیں۔ ساحلی پٹی کےکسانوں کوا کثر نظر انداز کیا جاتارہاہے۔ کسان کا نام آتےہی منڈیا ، میسور کی طرف دیکھنا ساحلی سیاست دانوں کی عادت بن گئی ہے۔ افسوس کی بات یہ ہے کہ یہاں کے زرعی مزدور سیاست دانوں کے چیلے بن جانے سے ان کے لئے جدوجہد کرنے والا بھی کوئی نہیں ہے۔ کسانوں کے آنسو سڑی ہوئی دھان کی فصل سے ٹپکتے ہوئے پانی کی طرح زمین میں جذب ہورہےہیں ان آنسوؤوں کے دکھڑے کو سمجھنے والا کوئی نظر نہیں آرہاہے ۔یہاں کے بد قسمت  کسانوں کا کہنا ہے کہ بینگرے علاقے میں قریب 8-10ایکڑ زرعی زمین مکمل طورپر برباد ہوگئی ہے۔ سب کچھ پانی میں بہہ گیاہے ۔ بینگرے گرام پنچایت کے صدر وینکٹیا بھئیرومنے نے مانگ کی ہے کہ حکومتیں یہاں کےکسانوں کی مشکلات پر توجہ دیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل تعلقہ بیلکے ہائی اسکول میں ایندھن کے صحیح استعمال پر آئیل کمپنی بیلگام کے ریجنل مینجر کا خطاب

جہاں بھی ایندھن کا استعمال کریں ہم ضرورت کے تحت کریں آج کل ایندھن کازیادہ تر غلط استعمال ہورہاہے جس کے نتیجے  میں آئندہ حالات  بگڑ سکتےہی۔ آئی اؤ سی ایل  بیلگام کے چیف ریجنل مینجر وی رمیش بابو نے ان خیالات کا اظہار کیا۔

کاروار: ای۔جائیداد کے متعلق الجھن اور پیچیدگی پیدا نہ کریں : وڈیوکانفرنس کے ذریعے ڈی سی کی ضلع و تعلقہ جات افسران کو ہدایت

اترکنڑا ضلع کے شہری علاقوں میں 95فی صد ای ۔ جائیداد کا سافٹ وئیر تیار ہے۔ مقامی افسران کسی بھی پیچیدگی کو جگہ نہ دیتے ہوئے سرگرم ہونے کی ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے ہدایات جاری کی ہیں۔

ضلع پنچایت سی ای او کے حکم پر بھٹکل تحصیلدار نے ہٹائیں مرڈیشور میں غیرقانونی دکانیں

ترکنڑا ضلع پنچایت چیف ایکزی کوٹیو آفسر(سی ای او)  محمد روشن کے حکم پر عمل درآمد کرتے ہوئے بھٹکل تحصیلدارکی قیادت میں ریوینیو ڈپارٹمنٹ کے افسران نے جمعرات کو دکانداروں کی مخالفت کے باوجود مرڈیشور کے سڑک کنارے بنی ہوئی غیر قانونی دکانوں کو ہٹانے کی کارروائی انجام دی۔

بھٹکل کاراسٹریٹ پر رات کے اندھیرے میں کچرا پھینکنے والوں کا بالاخر پتہ چل گیا، سی سی ٹی وی میں قید ہوگیا منظر

یہاں کار اسٹریٹ جیسی مصروف سڑک پر رات کے اندھیرے میں کچرے کا ڈھیر لگانے والوں سے عوام اور دکاندار بہت ہی زیادہ پریشان تھے اور کچرہ پھینکنے والوں کا پتہ لگانے کی کوششوں میں مصروف تھے، مگر بدھ کی شام کو بالاخر ایک رکشہ سے کچرہ پھینکنے کا منظر قریب میں واقع سی سی  ٹی وی کیمرے میں ...

وزیرا عظم مودی کے جنم دن پر آر وی دیشپانڈے نے پیش کی مبارکباد۔دل کھول کر ستائش کرنے کے پیچھے کیا ہوسکتا ہے راز؟

یہ بات ثابت شدہ ہے کہ سیاست کوئی بھی مستقل دوست یا مستقل دشمن نہیں ہوتا۔ مگر نظریاتی اختلاف یا اتفاق کے بارے میں سمجھا جاتا ہے کہ وہ اگر مستقل نہ ہوتو کسی بھی شخصیت کا وقار مجروح ہوتا ہے۔

بھٹکل فائر بریگیڈ کے لئے اپنی کوئی عمارت نہیں۔ عوام کی مشکل دورکرنے والوں کو راحت پہنچانے والے خود مصیبت کا شکار

فائر بریگیڈ کا عملہ کسی بھی مقام پر آگ لگنے یا کوئی ہلاکت خیز حادثہ پیش آنے کی صورت میں فوری اور ہنگامی طور پر جائے واردات پر پہنچنے اور عوام کو راحت پہنچانے کا کام انجام دیتا ہے۔ لیکن بھٹکل میں خود فائر بریگیڈ والے تقریباً دو دہائیوں سے اپنے لئے مستقل ٹھکانہ حاصل کرنے میں ابھی ...

ملکی معیشت  کے برے اثرات سے ہر شعبہ کنگال؛ بھٹکل میں بھی سونا اور رئیل اسٹیٹ زوال پذیر؛ کیا کہتے ہیں جانکار ؟

ملک میں نوٹ بندی  اور جی ایس ٹی کی وجہ سے ملکی معیشت پر سنگین اثرات مرتب ہونےکے متعلق ماہرین نے بہت پہلے سے چوکنا کردیا  تھا۔ اب اس کے نتائج بھی  ظاہر ہونے لگے ہیں۔ رواں سال کے دوچار مہینوں سے جو خبریں آرہی ہیں، اُس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ہمارے  ملک میں روزگاروں کا بےروز ...

بارش کے بعد بھٹکل کی قومی شاہراہ : گڑھوں کا دربار، سواریوں کے لئے پریشانی؛ گڑھوں سے بچنے کی کوشش میں حادثات کے خدشات

لوگ فورلین قومی شاہراہ  کی تعمیر کو لے کر  خوشی میں جھوم رہے ہیں لیکن شہر میں شاہراہ کا کام ابھی تک  شروع نہیں ہوا ہے، اُس پرستم یہ ہے کہ سواریوں کو پرانی سڑک پر واقع گڑھوں میں سے گرتے پڑتے گزرنے کے حالات پیدا ہوگئے ہیں۔ لوگ جب گڈھوں سے بچنے کی کوشش میں اپنی سواریوں کو دوسری طرف ...

ضلع شمالی کینرا میں بڑھ رہی ہے گردے کی بیماری میں مبتلا مریضوں کی تعداد

ایک عرصے سے ضلع شمالی کینرا میں ایچ آئی وی اور کینسر کے مریضوں کی تعداد بہت زیادہ ہوا کرتی تھی۔ لیکن آج کل گردے کے امراض اور اس سے گردے فیل ہوجانے کے واقعات میں بڑی تیز رفتاری سے اضافہ ہورہا ہے۔اس مرض کی سنگینی کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ اس وقت گردوں کی ناکامی کی وجہ ...

کیا ملک میں جمہوریت کی بقا کے لئے ایسے ہی غداروں کی ضرورت تو نہیں ؟ آز: مدثراحمد (ایڈیٹر، روزنامہ آج کاانقلاب،شیموگہ)

جب سے ملک میں بی جے پی اقتدار پر آئی ہے  ہر طرح کی آزادی پر پابندیاں لگائی جارہی ہیں۔بولنے کاحق،لکھنے کاحق،تنقید کرنے کا حق یہ سب اب ملک مخالف سرگرمیوں میں شمار ہونے لگے ہیں اور جو لوگ ان حقوق کا استعمال کرنے کی کوشش کررہے ہیں انہیں ملک میں غدار کہا جارہا ہے۔ملک کے موجودہ ...