بھٹکل میں بارش سے متاثرہ عوام کی  پریشانی اور تکالیف میں کمی نہیں : مزدور، ماہی گیر سمیت عوام حالات سے متاثر

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 9th August 2019, 9:12 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:9؍اگست   (ایس اؤ نیوز)تعلقہ میں ماہ اگست کے صرف 9دن گزرنے تک بارش کا پیمانہ روایت کے مطابق 70فی صد کو پہنچ چکا ہے۔بارش کے  رواں سال پہلے مہینے  کے 15دن بارش نہ ہونے سے جو نقصان ہواتھا وہ تقریباً پورا ہوگیا ہے۔ جمعہ کی صبح سورج کی  کرنیں گرچہ  اجالے اور راحت کی امید جتانےکے بعد بھی عوام کی تکالیف و پریشانیوں  کا کوئی حل نظر نہیں آرہاہے۔

تعلقہ میں برستی موسلادھار بارش کی وجہ سے 10ہزار سے زائد مزدور وں کی زندگی کا گزارہ مشکل ہوگیاہے، کمائی کے لئے دیہی علاقوں سے شہری بازار آنے والے چھوٹے موٹے بیوپاری بھیگ کر خالی ہاتھ لوٹ رہے ہیں۔ مزدور انتظار میں ہیں کہ تھوڑی سی بارش رک جائےتو کہیں کوئی کام مل جائے۔ مزدور وں کی حالت اتنی ابتر ہوگئی ہےکہ روزمرہ کی اشیاء خریداری کے لئے بھی پیسہ نہیں ہے۔ ماہی گیروں کی حالت بھی کچھ ایسی ہی ہے۔ بھٹکل کی مچھلی مارکیٹ پچھلے چند دنوں سے ویران سی لگ رہی ہے۔ قریب 24000ماہی گیروں کے خاندان مشکلات میں گزارہ کررہے ہیں۔ مقامی سطح پر 537کشتیاں ، 207بوٹ ڈر کے مارے ساحل پر ہی لنگر ڈالےہوئے ہیں۔ جس کےنتیجے میں صرف ماہی گیر اور مزدور ہی نہیں بلکہ کئی ایک پر اس کے اثرات ہورہے ہیں، مارکیٹ میں بیوپار ماند پڑگیاہے۔

بھٹکل میں مچھلی کے قحط سے عوام سبزی ترکاری کی طرف رخ کرنےپر مجبور ہیں۔ یہاں کی  کہانی  کچھ اور ہی کہتی ہے،چونکہ شمالی کرناٹکا کے اکثر اضلاع سیلاب سے بری طرح متاثر ہیں ،سبزی ترکاری بھی کم آرہی ہے تو ترکاری کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں۔ ٹماٹے فی کلو گرام 50روپئے سے زائد ہے تو آلو اور پیاز 30سے کم نہیں ہے۔ مقامی خواتین بھینڈی ، ترائی ،ککڑی وغیرہ جہاں تہاں فروخت تو کررہےہیں مگر یہاں بھی قیمتیں موقع کا فائدہ اٹھارہی ہیں۔ کلی طورپر کہاجاسکتاہےکہ پچھلے 15دنوں سے برستی موسلادھار بارش نے حقیقت میں عوامی زندگی کو مفلوج بنادیاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

گوکرن کے مُدگا سمندر میں بوٹ اُلٹ گئی؛ دو گھنٹوں کے آپریشن کے بعد تمام چھ ماہی گیر وں کو بچالیا گیا

   انکولہ کے  بیلیکیرے سمندر میں  ماہی گیری کرکے واپس لوٹنے کے دوران  اونچی اُٹھتی  سمندری لہروں کی زد میں آکر  بوٹ کے اُلٹ جانے سے  بوٹ پر سوارتمام   چھ ماہی گیروں کے جان کے لالے پڑ گئے تھے، مگر  دو گھنٹوں کی سخت مشقت کے بعد  دوسری بوٹ پر سوار کرکے تمام چھ ماہی گیروں کو  ...

ڈانڈیلی:کورونا کی تیسری لہر کو روکنے کے لئے سرحدی علاقوں پر سخت چوکسی : افسران جائے وقوع پر پہنچ کر کر رہے ہیں  جانچ

کورونا کی تیسری لہر کے خطرے کو دیکھتےہوئے تعلقہ کے برچھی چک پوسٹ ،ہالمڈی سمیت ڈانڈیلی کے سرحدی علاقوں پر تعلقہ انتظامیہ اور شہری انتظامیہ کی طرف سے کڑے اقدامات کئے گئے ہیں۔

بھٹکل تنظیم وفد کا کمٹہ اور اطراف کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ؛ متاثرین میں را شن کٹس تقسیم

   قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح و تنظیم  بھٹکل کا ایک وفد محی الدین الطاف کھروری کی قیادت میں  بدھ کو  کمٹہ اور آس پاس کے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں نقصانات کا جائزہ لینے پہنچا، جس کے دوران گوکرن کے  اگراگونا اور چنداور کے سنتے گولی پہنچ کرگھروں کو ہوئے نقصانات کا جائزہ لیا ...

کاروار : شمالی کینرا کے کووڈ معاملوں میں آیا دوبارہ اچھال ۔ ضلع انتظامیہ نے کیا پھر سے نئی پابندیوں کا اعلان 

ضلع شمالی کینرا میں کووڈ پوزیٹیو معاملوں میں پھر سے اچھال آنے کے بعد ضلع انتظامیہ نے اس پر قابو پانے کے اقدامات شروع کیے ہیں اور نئی پابندیوں اور نئے ضابطوں  کا اعلان کیا ہے ۔