کشمیر پر پاکستان کی پالیسی پر فیصلہ کن وقت آگیاہے دوایٹمی طاقتوں کے درمیان جنگ ہوئی تو فاتح کوئی بھی نہیں ہوگا: عمران خان کا قوم سے خطاب

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 27th August 2019, 10:41 AM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

نئی دہلی،اسلام آباد،27؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی)کشمیر سے دفعہ 370کے ہٹنے کے بعد پاکستان نے ہرمحاذ پر اس مسئلہ کو اٹھایا لیکن چاروں طرف سے ناکامی ہاتھ لگی۔مسلم ممالک میں سے سوائے ایران کے کسی نے بھی اس مسئلہ کونہیں اٹھایا۔لیکن پاکستانی وزیر اعظم اب بھی پرعزم ہیں اور اس کو ہرمحاذپر اٹھانے کا اعلان کررہے ہیں۔قوم کے نام اپنے خطاب میں پاکستانی وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کی کشمیر پالیسی پر فیصلہ کن وقت آگیا ہے اور مودی کی غلطی سے کشمیر کے لوگوں کو آزاد ہونے کا تاریخی موقع مل گیا ہے۔ اس لیے ضروری ہے کہ پوری پاکستانی قوم کو اعتماد میں لیا جائے۔. وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ جب ہماری حکومت آئی تو ہماری پہلی کوشش تھی ملک میں امن پیدا کریں تاکہ ہم لوگوں کے لیے روزگار، تجارت بڑھائیں کیونکہ ہمارے مسئلے وہی ہیں جو ہندوستان کے ہیں وہاں بھی بے روزگاری ہے، مہنگائی ہے، موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے دونوں ممالک کو مشکلات کا سامنا ہوگا، اس لیے ہماری کوشش تھی کہ سب سے دوستی کریں۔ عمران خان نے کہا کہ ہم نے حکومت میں آتے ہی ہندوستان سے کہا کہ آپ ایک قدم بڑھائیں ہم آپ کی طرف 2 قدم بڑھائیں گے اور کشمیر کے مسئلے کو مذاکرات کے ذریعے حل کرلیں گے لیکن شروع سے ہی مسئلے شروع ہوگئے۔ ہندوستان سے مذاکرات کی بات کرتے تو وہ کوئی اور بات شروع کردیتے تھے۔ 5 اگست کوکشمیر میں اضافی فوج بھیج کر فیصلہ کیا کہ کشمیر اب ہندوستان کا حصہ بن گیا اور اس فیصلے سے اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی قراردادوں، آئین، سپریم کورٹ اور ہائی کورٹ کے فیصلوں کی خلاف ورزی کی۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان اپنے بانیوں گاندھی اور جواہر لعل نہرو کے خلاف گیا، جواہر لعل نہرو نے جو کشمیر کے لوگوں سے وعدے کیے ان کے خلاف گیا بلکہ ہندوستان کے سکیولر آئین جس کے تحت وہ کہتے تھے کہ ہندوستان سب کا ہے،سب برابر کے شہری ہیں اور پاکستان بننا غلط تھا، ہندوستان نے اس سکیولرزم کو بھی ختم کردیا وزیراعظم نے کہا کہ 5 اگست کو ہندوستان نے پیغام دیا کہ ہندوستان صرف ہندوؤں کا ہے اور باقی سب دوسرے درجے کے شہری ہیں جو بی جے پی کی نظریاتی ونگ آر ایس ایس کا فلسفہ ہے۔عمران خان نے کہا کہ میں خاموش نہیں بیٹھوں گا، میں دنیا میں اب کشمیر کا سفیر بنوں گا اور اقوام متحدہ میں 27 ستمبر کو اس معاملے کو اٹھاؤں گا۔انہوں نے کہا کہ کشمیر کے ساتھ دنیا کھڑی ہو یا نہ کھڑی ہو لیکن پاکستانی قوم کھڑی ہوگی، قوم کو بالکل مایوس ہونے کی ضرورت نہیں، پوری دنیا کے میڈیا کو بتاؤں گا کہ کشمیر میں کیا ہو رہا ہے، ہر جمعہ ہم ایک پروگرام کریں گے جس میں 12 بجے سے لے کر ساڑھے 12 بجے تک آدھے گھنٹے کے لیے پوری قوم شریک ہوگی۔ مودی سرکار کی پالیسی آر ایس ایس کے نظریے پر قائم ہے جس میں مسلمانوں کیخلاف نفرت ہے، اسی نظریے نے گاندھی کو قتل، بابری مسجد کو شہید اور گجرات میں مسلمانوں کا قتل عام کیا، یہی نسل پرستی کا نظریہ آج ہندوستان پر حکومت کر رہا ہے۔عمران خان نے کہا کہ آج مسلمان ممالک ہمارے ساتھ نہیں تو کل ہمارے ساتھ ہوں گے، بوسنیا میں قتل عام پر بھی مسلمان ممالک خاموش تھے، میڈیا نے بوسنیا کی آواز اٹھائی تو مسلمان ممالک بھی آگے آگئے، یہ مسئلہ جنگ کی طرف چلا گیا تو پاکستان اور ہندوستان دونوں کے پاس ایٹمی ہتھیار ہیں اور یہ جنگ کوئی بھی نہیں جیتے گا، پاکستان آخری سانس تک کشمیریوں کے ساتھ جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:سی اے اے کی حمایت میں اجلاس عام وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ کی شرکت۔ نیشنل ہائی وے پر ٹریفک کا رخ موڑ دیا گیا ہے۔ بھٹکل سے منگلورو سفر کرنے والے نوٹ کریں

منگلورو میں شہریت ترمیمی قانون سی اے اے اور این آر سی کی حمایت میں اجلاس عام کا انعقاد کیا گیا ہے جس میں ملک کے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ شرکت کررہے ہیں۔

آئین کے بنیادی اقدار کے مطابق بھائی چارہ، یکجہتی قائم رکھیں: اشوک گہلوت

راجستھان کے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت نے یومِ جمہوریہ 2020 کے موقع پر ریاست کے باشندوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس مبارک موقع پر ہم میں ہرشخص آئین کے بنیادی اقدار کے مطابق آپسی بھائی چارے اور یکجہتی کے ساتھ ملک کے اتحاد اور سالمیت کو قائم رکھیں۔

دہلی کے راج پتھ پر دھوم دھام سے71 واں جشن یوم جمہوریہ منایا گیا دنیانے فوج کی طاقت، ہندوستان کی شان و شوکت اور ثقافتی ورثے کا کیا مشاہدہ

صدر رام ناتھ کووندنے اتوار کو 71 ویں یوم جمہوریہ کے موقع پر راج پتھ پرسلامی لی۔لیفٹیننٹ جنرل مستری، جنرل آفیسرکمانڈنگ، ہیڈکوارٹر دہلی ایریا کی طرف سے اس سال یوم جمہوریہ کی پریڈ کی قیادت کی گئی۔ اس دوران راج پتھ پر سخت سیکورٹی کے درمیان ملک کے وزیر اعظم نریندر مودی، مہمان خصوصی ...

کورونا وائرس کو عالمی وبا قرار دیا گیا، چین میں ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر 56 ہوگئیں ؛ چین سے دوسرے ممالک میں بھی پھیلنے کا خدشہ

چین کی حکومت نے کہا ہے کہ 25 جنوری تک 1975 افراد کے 'کورونا' وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق کی ہوئی ہے اور اس وائرس سے اب تک ہلاکتوں کی تعداد 56 ہوگئی ہے۔دوسری طرف 'کورونا' وائرس کو عالمی وباء قرار دیتے ہوئیاس کے انسداد کے لیے عالمی سطح پر مزید اقدامات پر زور دیا جا رہا ہے۔یہ وائرس گذشتہ ...

ترکی میں زلزلے کے باعث ملبے تلے دبے افراد کی تلاش جاری طاقت ور زلزلے کے باعث ہلاکتوں کی تعداد 29 ہوگئی، 1400 زخمی

ترکی میں جمعہ کی شام آنے والیطاقت ور زلزلے کے نتیجے میں اب تک 29 افراد جاں بحق جب کہ 1400 زخمی ہوئے ہیں۔ متاثرہ علاقوں میں ہنگامی بنیاداوں پر امدادی کام جاری ہے اور ملبے تلے دبے افراد کی تلاش کی جا رہی ہے۔ مشرقی ترکی کے علاقوں میں آنے والے اس تباہ کن زلزلے کیباعث دسیوں افراد لاپتا ...

آپ کا شکریہ... ٹرمپ نے مذاکرات سے متعلق ایران کی مشروط پیش کش مسترد کر دی

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کی اس پیش کش کو یکسر مسترد کر دیا ہے کہ وہ پابندیاں اٹھائے جانے کی شرط کے ساتھ مذاکرات کے لیے تیار ہے۔ ٹرمپ کا یہ موقف ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کی حالیہ تجویز کے جواب میں سامنے آیا ہے۔ٹرمپ نے اتوار کے روز اپنی ٹویٹ میں کہا کہ ’ایرانی وزیر ...

امریکی ڈیموکریٹس پرصدر ٹرمپ کے خلاف من گھڑت معلومات فراہم کرنے کا الزام

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے مواخذے کے لیے اپوزیشن جماعت ڈیموکریٹک پارٹی کی طرف سے فراہم کردہ معلومات پر ری پبلیکنز کی طرف سے شدید تنقید کرتے ہوئے ان معلومات کو جعلی اور من گھڑت قرار دیا ہے۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی دفاعی ٹیم کے رکن سینیٹر رِک اسکاٹ نے کہا ہے کہ 'ڈیموکریٹس نے صدر کے ...

اردغان کی معاہدے کی خلاف ورزی، ترک فوجیوں کی لیبیا آمد جاری

ترکی کے صدر رجب طیب ایردوآن کی طرف سے لیبیا میں عدم مداخلت سے متعلق طے پائے برلن معاہدے کی خلاف ورزیاں بدستور جاری ہیں۔ ترکی کی طرف سے لیبیا میں قومی وفاق حکومت کی مدد کے لیے مسلسل فوجی بھیجے جا رہے ہیں۔کل جمعہ کو ترک صدر نے ایک بیان میں کہا کہ لیبیا میں فائز السراج کی قیادت میں ...