بھٹکل میں غیر قانونی ریت سپلائی کا معاملہ : صبح ہوتے ہی ذخیرہ اندوزی اور اندھیرا پھیلتے ہی ہوتا ہے سپلائی ؛ کیا افسران بھی ہیں ملوث؟

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 14th February 2020, 8:03 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:14؍فروری(ایس اؤ نیوز) شرالی گرام پنچایت کی الویکوڑی ندی  کنارے  غیر قانونی ریت کی سپلائی برابر جاری ہے اور مقامی عوام  کی مانیں تو  دن کے اُجالے میں ریت جمع کیا جاتا ہے اور رات کا اندھیرا پھیلتے ہی ریت کی سپلائی شروع ہوجاتی ہے۔

بتایاجارہا ہے کہ مقامی لوگوں کو ہی اس کام کے لئے استعمال کرتےہوئے بہت بڑے پیمانے پر ریت کی ذخیرہ اندوزی کی جارہی ہے اور اندھیرا  پھیلتے  ہی دور دراز مقامات کو سواریوں کے ذریعے سپلائی کیا جاتاہے۔لوگوں نے بتایا کہ اس سے قبل جب  الویکوڑی ندی کنارے چلنے والی غیر قانونی ریت سپلائی کے معاملہ کا پتہ چلا تھا تو اعلیٰ افسران کی کارروائی کے خوف سے کچھ دنوں کے لئے یہ غیر قانونی دھندہ بند کر دیاگیا تھا۔ مگر اب  معاملہ تھنڈا پڑتے ہی دوبارہ ریت کی لوٹ مار    شروع ہوگئی  ہے۔ روزانہ ٹنوں کے حساب سے ریت سپلائی کی جارہی ہے۔ غیر قانونی ریت سپلائی کو لے کر  مقامی لوگ مختلف محکمہ جات کے افسران  پر بھی ملوث ہونے کا  الزام عائد کررہے ہیں۔

جب غیر قانونی ریت سپلائی کے متعلق مقامی عوام سےپوچھا گیا تو ایک نے بتایا کہ ’ہم ہمارے مقام پر جاری غیر قانونی ریت سپلائی کے متعلق کسی بھی افسرکو جانکاری نہیں دےسکتے، کیونکہ جب ہم افسران کو جانکاری دیتےہیں تو افسران دھندہ کرنے والوں کو ہمارا نام بتا دیتےہیں، جس کی وجہ  سےہمیں خوف محسوس  ہوتاہے‘۔ ان لوگوں کے مطابق  افسران کے تعاون کے بغیر شرالی سے  دوسرے مقامات کو ریت سپلائی کرنا ممکن ہی نہیں ہے، ان لوگوں کے مطابق یہاں کے ولیج اکاؤنٹنٹ سے لےکر تحصیلدار اور دیگر آفسران  سبھوں کوپتہ ہے کہ یہاں یہ غیر قانونی کام ہورہا ہے مگر افسران کی خاموشی کو دیکھتے ہوئےسمجھا جاسکتا ہے کہ کیوں وہ لوگ کاروائی نہیں کررہے ہیں۔  انہوں نے پولس اور ساحلی محافظ دستہ پر بھی سوالات اُٹھائے کہ  یہ  عملہ بھی  خاموش ہے تو  آپ خود ہی سوچ لیں کہ کتنے بڑے پیمانے پر کام ہورہا ہے ۔عوام نے بتایا کہ  اگر افسران غیر قانونی ریت سپلائی کوروک نہیں سکتےتو مصدقہ طورپر اجازت حاصل کرکے  کام کریں، جس سے مقامی انتظامیہ کو بھی مالی تعاون ملے گا مگر  اس طرح چوری چھپے   دھندے کی حمایت نہ کرے۔

ایک نظر اس پر بھی

ساحلی پٹی کے عوام کو سہولت دینے والی نئی ٹرین کو افسران کی طرف سے ریڈ سگنل :نئی ٹرین  بہت جلد پٹری پر دوڑے گی ؛وزیر ریلوے سریش انگڑی

ساحلی پٹی کے عوام کو سہولت دینے والی ’بنگلورو۔ کاروار۔ واسکو ‘ٹرین کا اعلان کئے ہوئے کئی دن  بیتنے کے باوجود  افسران کی طرف سے ابھی تک سرخ بتی جلائے رکھنے پر ٹرین پٹری پر نہیں دوڑ ی ہے۔ افسران کے رویہ پر عدم اطمینان کا اظہار کرتےہوئے مرکزی ریلوے وزیر برائے ریاست سریش انگڑی نے ...

بھٹکل تعلقہ میں 14مارچ تک اپنے گھروں کی تعمیر کا موقع ہے مستفیدین استفادہ کریں : رکن اسمبلی

2012سے 2019تک کی مدت میں مختلف رہائشی منصوبہ جات کے تحت منظور ہوئے گھروں کے مستفیدین کو متعینہ وقت میں گھروں کی تعمیر نہیں کئے جانے پر سرکاری معاوضہ منظوری کے لئے روک لگا دی گئی تھی۔ اب ریاستی حکومت اس روک کو ختم کرتےہوئے بھٹکل ہوناور ودھان سبھا حلقہ کے مستفیدین کو استفادہ کا موقع ...

بھٹکل انجمن حامئی مسلمین کے سابق صدر عبدالرحیم جوکاکو ’قومی تعلیمی ایکسلنس ایوارڈ ‘ سے سرفراز

بنگلورو میں22فروری کو منعقدہ اسوسی ایشن آف مسلم پروفیشلنس (اے ایم پی ) کے تیسرے سالانہ دوروزہ کنوینشن میں انجمن  حامئی مسلمین بھٹکل کے سابق صدر محترم عبدالرحیم جوکاکو کو سال 2019کے’ ایکسلنس ان ایجوکیشن ‘ تعلیمی ایوارڈ سے نوازتے ہوئے ان کی تہنیت کی گئی ۔

پی یو دوم کے سالانہ امتحانا ت میں  ضلع کے 14279طلبا و طالبات شریک ہونگے : ڈی سی

رواں سال 4مارچ سے شروع ہونے والی پی یو سی سال دوم کے سالانہ امتحانات کے لئے پوری تیاریاں ختم القریب ہیں۔ اترکنڑا ضلع سے امسال 14279طلبا و طالبات امتحان میں شریک ہونے کی اترکنڑا ضلع ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے جانکاری دی ۔