آئی سی سی نے میدان اور ڈریسنگ روم میں ’اسمارٹ واچ‘پہننے پر روک لگائی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 26th May 2018, 12:23 PM | اسپورٹس |

دبئی ،25؍مئی ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) بین الاقوامی ککیٹ کونسل (آئی سی سی)نے کھیل سے بدعنوانی ختم کرنے کی جانب اگلا قدم اٹھاتے ہوئے کھلاڑیوں اور حکام پر کھیل کے وقت میدان پر اور ڈریسنگ روم میں بھی مواصلات کے سامان، خاص طور ’سمارٹ واچ‘کے استعمال پر روک لگا دی ہے۔آئی سی سی نے تصدیق کی کہ کھلاڑی اور میچ حکام (پی ایم او اے )ہدایات کے تحت میدان میں اور پی ایم او اے کیلئے بنائے گئے علاقے میں ’سمارٹ واچ‘پہننے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔آئی سی سی نے ریلیز میں کہاکہ پی ایم او اے میں مواصلات کے سامان پر پابندی ہوگی اور کسی بھی کھلاڑی کو اس طرح کی چیزیں رکھنے یا ان کے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی جو انٹرنیٹ سے منسلک ہوں۔کھیل کے آپریشن ادارے نے کہاکہ سمارٹ واچ کو فون سے یا وائی - فائی یا پھر کسی بھی آلے سے مواصلات حاصل کر سکتی ہو، اس کے استعمال کی اجازت نہیں دی جائے گی۔اس لئے ہم تمام کھلاڑیوں کو یاد دلائیں گے کہ انہیں میچ کے دن میدان پر داخل ہوتے ہی اس طرح کی چیزوں کو اپنے موبائل کے ساتھ جمع کردینا چاہئے۔ میچ فکسنگ کے کسی بھی طرح کے الزامات سے بچنے کیلئے پاکستانی کھلاڑیوں کو لارڈس میں پہلے ٹیسٹ کے دوران اسمارٹ واچ پہننے سے روکنے کے ایک دن بعد یہ قدم اٹھایا گیا ہے۔آئی سی سی کے کھلاڑی کو میدان پر کسی بھی مواصلات کے سامان لے جانے کی اجازت نہیں دیتا اور یہ بات ڈریسنگ روم میں بھی نافذ ہوتی ہے۔حکاموں کو خصوصی آلات استعمال کے لئے دیئے جاتے ہیں جس سے وہ اپنے ساتھیوں کے ساتھ بات چیت کر سکتے ہیں۔یہاں اس بات کا ذکر کیا جا سکتا ہے کہ ٹی وی کیمروں میں ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی کو گزشتہ سال نومبر میں نیوزی لینڈ کے خلاف بین الاقوامی میچ کے دوران ڈگ آؤٹ میں بیٹھ کر واکی ٹاکی پر بات چیت کرتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی