حیدرآباد انکاؤنٹر میں ملوث پولیس اہلکاروں کے خلاف سپریم کورٹ سے کارروائی کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | Published on 7th December 2019, 8:26 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،7/دسمبر(ایس او نیوز/ایجنسی) ہفتہ کے روز سپریم کورٹ میں ایک درخواست دائر کی گئی ہے جس میں پولیس اہلکاروں کے خلاف تحقیقات اور ایف آئی آر کے اندراج کی درخواست کی گئی ہے جو تلنگانہ میں ایک ویٹرنرینیج کے اجتماعی زیادتی اور قتل کے چار ملزموں کے انکاؤنٹر میں ملوث تھے۔

وکلاء جی ایس مانی اور پردیپ کمار یادو نے سپریم کورٹ سے رجوع کیا ہے کہ اس معاملے میں اعلی عدالت کے 2014 کے رہنما اصولوں پر عمل نہیں کیا گیا تھا۔

پولیس نے جمعہ کے روز بتایا کہ چاروں ملزمان پولیس سے مقابلے میں مارے گئے جب انہوں نے فرار ہونے کی کوشش کی تو اسے جرائم کی جگہ لے جایا گیا۔

27 نومبر کو شمش آباد کے علاقے میں ڈاکٹر دیشا نے ان کی لاش کو نذر آتش کرنے سے قبل ان چاروں کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی تھی اور اسے ہلاک کردیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

راجستھان میں سیاسی صلح، بی جے پی کے منھ پر زور کا طمانچہ: کانگریس

کانگریس نے راجستھان یونٹ میں کئی دنوں سے جاری تنازعہ کے سلجھنے پر ریاست کے عوام کو مبارکباد دیتے ہوئے اسے پارٹی اعلیٰ کمان کے ’سب کو ساتھ لے کر چلنے‘ کی پالیسی کا نتیجہ بتایا کہ اور کہا کہ یہی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو کرارا جواب ہے۔

یو جی سی امتحانات معاملے میں سماعت جمعہ تک ملتوی

سپریم کورٹ نے پیر کے روز حکومت سے یہ جاننے کی کوشش کی کہ کیا اسٹیٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ یونیورسٹی گرانٹس کمیشن (یو جی سی) کی ہدایت کو متاثر کر سکتا ہے؟ ۔ اس کے ساتھ ہی عدالت نے معاملے کی سماعت 14 اگست تک ملتوی کردی ۔

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...