ہبلی میں نماز جمعہ کے لئے مسلمان جمع نہیں ہوئے تھے، بلکہ پولیس کی زیادتیوں کی وجہ سے ہوا تھا پتھراؤ۔ مقامی لوگوں کا الزام

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 5th April 2020, 12:26 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بھٹکل 5/اپریل (ایس او نیوز) ریاست کرناٹک کے ہبلی میں جمعہ کے دن  نماز جمعہ کے لئے لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرتے ہوئے لوگوں کے جمع ہونے اور باجماعت نماز سے روکنے والی پولیس پر پتھراؤ جو میڈیا میں عام ہورہی ہے، اس پرہبلی کے مقامی لوگوں کاکہنا ہے کہ مقامی مسلمان مسجد میں نماز کے لئے جمع نہیں ہوئے تھے بلکہ پولیس کی زیادتیوں اور زور زبردستی کی وجہ سے ایسی صورتحال ہوگئی کہ عوام نے پتھراؤ کرنا شروع کیا تھا۔

کنڑا اخبار وارتھا بھارتی کی رپورٹ کے مطابق   جمعہ کے دن منٹور روڈ پر واقع مسجد میں پولیس جوتوں سمیت داخل ہوئی اور وہاں پر موجو د عملے کے افراد پر حملہ کردیا۔ چونکہ یہ ایک مسلم اکثریتی علاقہ ہے اس وجہ سے پولیس کی زیادتی دیکھ کر وہاں کا ماحول کشیدہ ہوگیا۔اور پھر لوگوں نے پولیس پر پتھراؤ شروع کردیا۔

 مسجد کے مؤذن اسلم کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے مسجدوں پر باجماعت نمازوں پر پابندی ہونے کی وجہ سے مسجد میں صرف مؤذن اور امام دونوں ہی نماز اداکرتے تھے۔ ”جمعہ کے دن میں اکیلا جب اذان دے رہا تھا، اس وقت پاؤں جوتے پہن کر ہی پولیس مسجد کے اندر داخل ہوئی اور مجھے پیٹنا شروع کیا۔“ مسجد کمیٹی کے صدر داول نداف اور مقامی شخص باشاہ مسجد کے باہر کھڑے تھے۔پولیس مؤذن اسلم کے ساتھ ان دو افراد کو بھی مارپیٹ کر اپنے ساتھ پولیس اسٹیشن لے گئی۔ شائستہ نامی ایک خاتون نے بتایا کہ ”میری آنکھوں کے سامنے ہی پولیس ان تینوں کی پٹائی کررہی تھی۔میری بہن اور میں نے پولیس سے کہا کہ ان تینوں کو چھوڑ دے، لیکن پولیس نے میری بہن کے سر کے بال پکڑ کھینچنا شروع کیااور اسے بھی پولیس اسٹیشن لے گئے۔“
    اس واقعہ کے ایک اور عینی گواہا الطاف ہلوور نے بتایاکہ بعد میں پولیس نے ان تینوں کو وارننگ دے کرمسجد سے تقریباً 150میٹر دوری پر لاکر چھوڑ دیا۔ تب تک وہاں پر بہت ساری خواتین کا ہجوم جمع ہوگیاتھا۔ ان میں سے ایک خاتون نے پولیس کی مذمت کی تو ایک پولیس والے نے اس پر لاٹھی چلادی۔پولیس کی اس زیادتی سے مشتعل کچھ خواتین اور نوجوانوں نے پولیس پر پتھراؤ شروع کردیا۔اس جہ سے خواتین سمیت بہت سارے مقامی افراد کے علاوہ کچھ پولیس والے بھی زخمی ہوگئے۔

 دوسری طرف پولیس نے مسجد میں گھس کر کسی پر حملہ کرنے کی بات سے انکار کیا ہے۔ہبلی شہری پولیس اسٹیشن کے انسپکٹریم ایس پاٹل کا کہنا ہے کہ ’جب مؤذن نے اذان دینا شروع کیا تو وہاں لوگ  گروہ کی صورت میں جمع ہونے لگے تھے۔ ہمارے افسروں نے انہیں وہاں جمع ہونے سے منع کیا اور گھروں میں ہی نماز ادا کرنے کی تاکید کی تو وہاں پر جمع ہونے والے لوگوں نے پولیس کے ساتھ بدزبانی کی اور پتھراؤ شروع کیاتھا۔‘  اس کے بعد پولیس نے انڈین پینل کوڈ کی مختلف دفعات کے تحت کچھ خواتین سمیت 13 لوگوں کو گرفتار کرلیا ہے۔پولیس کی زیادتیوں کے خوف سے کئی مقامی افراد اپنے گھروں کو تالا لگاکر کسی اور مقام پر منتقل ہوگئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں ایک شخص نے کی خودکشی

یہاں آزادنگر فورتھ کراس میں ایک 22 سالہ نوجوان نے گھر کے ایک کمرے میں ہی  چھت سے لٹک کر خودکشی کرلی جس کی شناخت محمد مستقیم شیخ کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

بھٹکل کے کورونا سے متاثرہ مزید چار لوگ صحت یاب ہوکر کاروار اسپتال سے ڈسچارج؛ پہنچے بھٹکل

مینگلور اسپتال لنک کے جن 29 لوگوں کو کاروار کمس اسپتال میں ایڈمٹ کیا گیا تھا، اُس میں سے 20 لوگوں کو سنیچر کے دن اسپتال سے ڈسچارج کیا گیا تھا ، اُن ہی میں سے مزید چار لوگوں کو آج کمس  سے ڈسچارج کیا گیا ہے۔ چاروں بذریعہ ایمبولنس آج منگل کو بھٹکل سرکاری اسپتال پہنچے جہاں سے ضروری ...

بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور سابق ایم ایل اے کے تعاون سے کیا گیا مہاجر مزدوروں کی روانگی کا انتظام

اوڈیشہ اور جھار کھنڈ کے سیکڑوں مزدور جو ماہی گیری اور دیگر سرگرمیوں میں خدمات انجام دے رہے تھے اور لاک ڈاؤن کی وجہ سے پریشان تھے ان کو اپنے گھروں کے لئے روانہ کرنے کا انتظام بھٹکل تعلقہ انتظامیہ اور سابق ایم ایل اے منکال وئیدیا کی جانب سے کیا گیا۔

پولیس افسران اور اہلکاروں میں کووِڈ 19پوزیٹیو نکلنے کے بعداڈپی کے تمام پولیس اسٹیشنوں کو کیا جا رہا ہے سینیٹائز

اڈپی ضلع کے بعض پولیس اسٹیشنوں سے وابستہ پولیس افسران اور اہلکاروں کو کورونا مرض لاحق ہونے کے بعد محکمہ پولیس کی طرف سے فیصلہ کیا گیا ہے کہ ضلع کے تمام پولیس اسٹیشنوں کو مرحلہ وار سینیٹائز کیا جائے۔

کاروار سمیت ریاست کے سمندر میں 14جون تک ماہی گیری کا موقع

کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے نافذ کئے گئے لاک ڈاؤن کی وجہ سے ماہی گیری کو ہوئے نقصان کو دیکھتے ہوئے مرکزی حکومت نے 14جون تک گہرے سمندر میں مشینی ماہی گیر ی پر پابندی عائد کرتے ہوئے روایتی ماہی گیر ی کو جاری رکھنے کی منظوری دی ہے۔ ترمیم شدہ حکم نامے کے مطابق 31جولائی تک ...

کیا کرناٹکا میں یکم جون سے مسجد، گرجا گھر اور مندروں کو کھولنے کی دی جائے گی اجازت ؟

کورونا وائرس کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے کے لئے ملک میں لاک ڈاؤن لاگو ہے۔لاک ڈاؤن 4.0 میں حکومت کی جانب سے بہت سی مراعات دی گئی ہیں، تاہم مندر، مسجد کو لے کر پابندیاں جاری ہیں لیکن حکومت نے لاک ڈاؤن میں رعایت کو لے کر ریاستوں کو بھی فیصلہ لینے کا حق دیا تھا۔دریں اثنا کرناٹک ...

حاملہ خاتون کی رپورٹ  کورونا پوزیٹو آنے پر  ہوسکوٹے کے ایک گائوں میں4 ہزار لیٹر دودھ نالی میں بہادینے کی واردات

کرناٹک کے ہوسکوٹے کے قریب چکّا کوریٹی گاؤں کے دودھ تیار کرنے والے کسانوں کو مجبوراً 4ہزار لیٹر دودھ نالی میں بہا دینا پڑا کیونکہ گاؤں میں کورونا کا مریض ہونے کی وجہ سے فیڈریشن نے دودھ لینے سے انکار کردیا۔

کرناٹک میں مجموعی طورپر100افراد میں کورونا کی تصدیق؛ تعداد بڑھ کر ہوگئی 2282

آج منگل کو کرناٹک میں مجموعی طورپر100افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے‘ جبکہ 17افراد کورونا کو شکست دے کر اپنے گھر واپس چلے گئے ہیں۔ آج سو لوگوں کی رپورٹ پوزیٹو آنے کے ساتھ ہی ریاست میں مریضوں کی جملہ تعداد بڑھ کر 2282 ہوگئی ہے جن  میں سے722افراد علاج کے بعد صحت مند ہوکر اسپتال سے ...

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا میں زبردست گرمی ؛ 26مئی سے اگلے تین دنوں تک کرناٹکا میں زبردست بارش کے امکانات

بحرہ عرب اور خلیج بنگال میں طوفانی ہواؤں سے پیدا ہونے والے دباؤ کے نتیجے میں ریاست کے جنوبی اندرونی علاقوں اور ساحلی پٹی پر 26مئی سے اگلے تین دنوں تک زبردست بارش ہونے کا محکمہ موسمیات نے امکان جتایا ہے۔

کورونا اَپ ڈیٹ:اڈپی ضلع کے تین پولیس اسٹیشنوں کو کیا گیا سیل ڈاؤن۔کارکلا،ہلیال اور برہماور میں پولیس افسران اور اہلکارآئے کووِڈ 19کی زد میں 

اڈپی ضلع میں کووِڈ وباء کا قہر کا کچھ زیادہ ہی بڑھتا ہوا محسوس ہورہا ہے۔ اب تک ممبئی اور خلیج سے واپس لوٹنے والوں میں مرض پائے جانے کی وجہ سے یہاں مریضوں کا گراف بڑھتا جارہا تھا۔ لیکن اب ایسا لگتا ہے کہ پولیس افسران اور اہلکار بھی اس کی زد میں آ گئے ہیں۔

بنگلورو میں کل بروز پیر 25؍ مئی کو عید الفطرمنائی جائے گی

مرکزی رو ئیت ہلال کمیٹی کر نا ٹک کے رکن مولانا محمد مقصود عمران رشادی نے یہ اطلاع دی ہے کہ آج مؤرخہ29 رمضان المبارک 1441ھ م 23مئی 2020 ؁ ء بروز ہفتہ مرکزی رؤیت ہلال کمیٹی کرناٹک،بنگلورو کا ماہانہ اجلاس زیر صدارت حضرت مولانا صغیر احمد خان صاحب رشادی کنوینر مرکزی رو ئیت ہلال کمیٹی امیر ...