کاسرگوڈ میں گھروں کے اندر گھسا پانی - 100 سے زائد خاندانوں کو کیا گیا منتقل 

Source: S.O. News Service | Published on 6th July 2022, 1:32 PM | ساحلی خبریں |

کاسرگوڈ، 6 ؍ جولائی (ایس او نیوز) کاسرگوڈ ضلع میں بھاری بارش ہونے کی وجہ سے نشیبی علاقے برساتی پانی کے تالاب میں تبدیل ہوگئے ۔ کئی گھروں میں پانی گھس گیا ۔ حالات کو دیکھتے ہوئے 100 سے زائد خاندانوں کو محفوظ مقام پر منتقل کیا گیا ۔
    
 ذرائع سے ملی اطلاع کے  مطابق اوپلّا پیرنگڈی ، منجیشور، کونجتور، شیریا ، کمبلے ، کاسرگوڈ ، تلنگرے ، مدھور ، چمناڈ علاقوں میں گھروں کے اندر پانی گھسنے کی وجہ سے مالی نقصان ہوا ہے ۔ ضلع کی تمام ندیاں خطرے کے نشان تک پہنچ گئی ہیں ۔ ان علاقوں کے لوگوں کو محتاط اورچوکنا رہنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں ۔
    
کہا جاتا ہے کہ نیشنل ہائی وے کا تعمیری کام جاری رہنے کی وجہ سے برساتی پانی کے لئے نکاسی نالے درست حالت میں نہیں ہیں ۔ اسی سبب سے اس علاقے میں زیادہ پانی جمع ہونے لگا ہے ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں بارش سے مچی تباہی کے بعد ضلع انچارج وزیر نے کہا؛ اتی کرم والوں کو بھی دی جائے گی ریلیف

ضلع اُترکنڑا  میں شدید بارشوں سے ہونے والے نقصانات کے لیے خصوصی معاوضہ فراہم کرنے کے لیے حکومتی سطح پر کوششیں جاری ہیں۔ بھٹکل میں  اتی کرم  والی زمینات پرتعمیر  مکانات اور دکانوں کو بھی  نقصان پہنچا ہے تو اُنہیں بھی معاوضہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ یہ بات ضلع انچارج وزیر ...

کاروار: بارش سے نقصان اٹھانے والے دکانداروں کو سرکاری معاوضہ دیا جائے گا - کوٹا سرینواس پجاری  کا اعلان

ضلع انچارج وزیر کوٹا سرینواس پجاری نے کاروار میں منعقدہ پریس کانفرنس کے دوران بتایا کہ وزیر اعلیٰ بسواراج بومئی نے برسات اور سیلاب سے نقصان اٹھانے والے دکانداروں کو معاوضہ ادا کرنے کی ہدایت دی ہے۔

بھٹکل : بارش کی تباہی کا سروے کرنے کے لئے 11 ٹیمیں تشکیل

ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر راجو موگویرا نے بتایا کہ بھٹکل تعلقہ میں زبردست برسات کی وجہ سے ہوئی تباہ کاریوں کا جائزہ لینے کے لئے انتظامیہ کی طرف سے 11 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں  جو متاثرین کے گھر گھر جا کر نقصانات کا جائزہ لے رہی ہیں۔