ہوناورمیں بیرونی ممالک بھیجنے کے نام پر دھوکہ ؛پرنسپال کے خلاف طلبہ اور والدین کا احتجاجی مظاہرہ؛ طلبا کو دہلی ہوٹل میں چھوڑ کر پرنسپال فرار

Source: S.O. News Service | Published on 21st May 2019, 1:24 PM | ساحلی خبریں |

ہوناور 21/مئی (ایس او نیوز) ہوناور تعلقہ کے کاسرکوڈ میں واقع کلپترو کالج آف منیجمنٹ کے پرنسپال کے خلاف طلبہ نے دھوکہ دہی کا الزام لگاتے ہوئے سخت غصہ اور اشتعال کا مظاہرہ کیا ہے۔

 طلبہ اور ان کے والدین نے مذکورہ کالج کے سامنے جمع ہوکر کالج اور اس کے پرنسپال گنگادھر کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے شدید برہمی کا اظہار کیااور سنگین الزام لگایا کہ پچھلے دنوں کالج کی طرف سے بیرونی ممالک میں طلبہ کو روزگار فراہم کرنے کا یقین دلایا گیااورہانگ کانگ بھیجنے کی بات کہتے ہوئے 53طلبہ کو  دہلی لے جایاگیا۔دہلی میں ’ہوٹل سَن انٹرنیشنل‘ میں قیام کرنے کے بعد پرنسپال طلبہ کو چھوڑ کر وہاں سے فرار ہوگیا۔ ہانگ کانگ میں روزگار کے سپنے اپنی آنکھوں سجائے ہوئے طلبہ اس صورتحال سے بے حدپریشان ہوگئے۔بے بس طلبہ نے بالآخر اپنے گھر والوں کو فون کرکے ہوٹل کا بِل اداکیا اور خود ہی واپسی اپنے شہر لوٹنے کا انتظام کیا۔

    کلپترو منیجمنٹ کالج کے پرنسپال کہلانے والے گنگا دھر کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ وہ تملناڈو کا رہنے والاہے اورایک باورچی کے طور پر صرف 6 برس قبل وہ ہوناور پہنچا تھا۔ گھر گھر جاکر وہ بریانی کا آرڈر لیا کرتاتھا۔ پھرمیٹھی میٹھی باتیں کرنے والے اس شخص نے اچانک کاسرگوڈ میں منیجمنٹ کالج قائم کیا تو عوام کو بہت حیرت ہوئی تھی۔اس کے علاوہ یہاں کے بازار میں مہنگی عیش و آرام کی چیزیں خریدنا اس کے معمولات میں شامل تھا۔اس کی اس شاہ خرچی کو دیکھتے ہوئے کئی لوگوں نے اس کی آمدنی کا راز جاننے کی کوشش کی تھی، مگر وہ کبھی بھی اپنا راز کسی کو نہیں بتاتاتھا۔

    اب طلبہ کومنیجمنٹ کالج اور بیرونی ممالک میں روزگار کے خواب دکھاکر ان سے لاکھوں روپے لوٹنے کے بعد راہ فرار اختیار کرنے والے گنگا دھر کی وجہ سے طلبہ کو ایک طر ف مالی نقصان ہوا ہے تو دوسری طرف ان کا مستقبل بھی خطرے میں پڑگیا ہے کیونکہ طلبہ کے مارکس کارڈ اور ٹرانسفر سرٹفیکیٹس وغیرہ اس کی تحویل میں رہ گئے ہیں۔ جس سے ذہنی اذیت اور کوفت ہونا فطری بات ہے۔

    احتجاجی طلبہ اور والدین کو پولیس نے یقین دلایا ہے کہ وہ ضروری کارروائی کرتے ہوئے ان کے تعلیمی دستاویزات گنگادھر کے قبضے سے انہیں واپس دلانے کے اقدامات کرے گی۔اس موقع پر ہوناور سرکل پولیس انسپکٹر چیلواراجو، کمٹہ سرکل پولیس انسپکٹر سنتوش شیٹی، ہوناور پی ایس آئی نیتو گوڈے کے علاوہ منکی اور ہوناور پولیس اسٹیشن کا دیگر عملہ بھی موجود تھا۔
 

ایک نظر اس پر بھی

مرڈیشور ساحل پر ماہی گیروں اور انتظامیہ افسران کے درمیان پارکنگ جگہ کو لےکر تنازعہ: ماہی گیروں کا احتجاج  

مرڈیشور میں مچھلی شکار پیشہ کے لئے جگہ مختص کرنے اور ماہی گیر کشتیوں کو  محفوظ رکھنے کےلئے جگہ متعین کرنے کے متعلق   ماہی گیروں اور مقامی انتظامیہ کے درمیان پھر ایک بار تنازعہ پیدا ہوگیا ہے۔

بھٹکل محکمہ تحصیل کے عملے  نے   سیاہ پٹی باندھ کرانجام دیں خدمات : ’ بنگلورو چلو ‘احتجاج کی حمایت

کرناٹکا سروئیر،رونیو مینجمنٹ اور رجسٹرار ملازمین سنگھ (کرناٹکا راجیا بھوماپنا ، کندایا ووستھے متو بھو داخلیگل کاریانرواہک نوکررسنگھ  ) کی جانب سے مختلف مطالبات کو حل کرنےکی مانگ لے کر 4ستمبر کو منائی جارہی ’ بنگلورو چلو ‘ احتجاج کی حمایت میں بھٹکل کے مختلف محکمہ جات کے عملے ...

بھٹکل میونسپالٹی میں پلاسٹک پابندی کے متعلق میٹنگ : پلاسٹک کی تیاری پر ہی روک لگانے کی مانگ

بھٹکل میونسپالٹی حدود میں پلاسٹک پر پابندی  اور کچرا نکاسی کا مناسب انتظام کے متعلق میونسپالٹی افسران کی موجودگی میں بھٹکل مرچنٹ اسوسی ایشن کے عہدیداران اور شادی ہال کے ذمہ داروں کے ساتھ میٹنگ کا انعقاد ہوا۔

بھٹکل میں بارش کی وجہ سے 50ایکڑ سے زائد زرعی زمین برباد : دھان کی فصل پانی میں بہہ گئی

تعلقہ میں  سیلاب کے کم ہونے کے بعد بارش سےہونے والے نقصانات ظاہر ہونےلگے ہیں۔ موسلا دھار بارش اور طوفانی ہواؤں سے گرنے والے گھروں کی مرمت و درستی ایک طرف تو  کیچڑ میں تبدیل ہوئی زرعی زمین اور فصل کی بربادی دوسری دکھ بھری کہانی سنارہی ہیں۔