حجاب پر پابندی کے بعد 16 فیصد سے زائد مسلم طالبات نے منگلورو یونیورسٹی کو کیا الوداع

Source: S.O. News Service | Published on 20th August 2022, 11:49 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

منگلورو،20؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) کرناٹک میں حجاب تنازعہ شروع ہونے کے بعد 16 فیصد سے بھی زائد مسلم طالبات نے مینگلور یونیورسٹی کو بائی بائی کرتے ہوئے اپنا ٹرانسفر سرٹی فیکٹ لے کر چلتے بنے ہیں لیکن بغیر حجاب تعلیم کو جاری رکھنے سے صاف انکار کردیا ہے۔

انگریزی اخبار دکن ہیرلڈ کی رپورٹ کے مطابق حجاب پر پابندی عائد کرنے کے بعد کئی طالبات نے حجاب کی اجازت دینے کی ضد کی تھی جس پر منگلورو یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر پی ایس یدپدتھیا نے صاف کہہ دیا تھا کہ جو طالبات بغیر حجاب کے کلاسز میں دسخل ہونا نہیں چاہتیں، انھیں ٹی سی (ٹرانسفر سرٹیفکیٹ) دے دیا جائے گا اور جہاں چاہیں وہاں جاکر تعلیم حاصل کرسکتی ہیں۔اس کا نتیجہ یہ سامنے آیا  کہ 16 فیصد سے بھی زائد مسلم طالبات نے منگلور یونیورسٹی سے ملحق سرکاری اور امداد یافتہ کالجوں کے دوسرے، تیسرے، چوتھے اور پانچویں سیمسٹر میں تعلیم حاصل کرنے کے دوران اپنا ٹی سی لے کر چلے گئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق جنوبی کنڑا اور اڈپی اضلاع میں منگلورو یونیورسٹی کے سرکاری، امداد یافتہ اور ملحقہ کالجوں میں 21-2020 اور 22-2021 میں مختلف کورسز کے لیے داخلہ لینے والی تقریباً 900 مسلم طالبات میں سے 145 نے ٹی سی لے لیا۔ ان میں سے کچھ نے ان کالجوں میں داخلہ کرایا ہے جہاں حجاب پہننے کی اجازت ہے۔ دیگر طالبات نے فیس کی ادائیگی میں آ رہی پریشانی جیسے اسباب کو دیکھتے ہوئے کالج کی تعلیم کو ادھورا چھوڑ دیا ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ امداد یافتہ کالجوں (8 فیصد) کے مقابلے میں سرکاری کالجوں (34 فیصد) میں ٹی سی حاصل کرنے والی مسلم طالبات کی تعداد زیادہ ہے۔ جنوبی کنڑا کے سرکاری کالجوں میں اس معاملے میں ڈاکٹر پی دیانند پائی-پی ستیشا پائی گورنمنٹ فرسٹ گریڈ کالج سب سے اوپر ہے۔ یہاں 51 مسلم طالبات میں سے 35 نے اپنا ٹی سی لے لیا ہے۔ جنوبی کنڑ اور اڈپی اضلاع میں 39 سرکاری، 36 امداد یافتہ کالجز ہیں۔

حجاب پر پابندی کا مرکز بننے والی اجرکاڈ  گورنمنٹ فرسٹ گریڈ کالج میں 9 طالبات نے اپنا ٹی سی لے لیا ہے۔ حالانکہ آر ٹی آئی سے حاصل جانکاری کے مطابق کوڈاگو ضلع میں سبھی 113 مسلم طالبات نے اپنے پرانے کالجوں میں پڑھنا جاری رکھا ہے۔ کوڈاگو ضلع میں منگلور یونیورسٹی کے 10 سرکاری، امداد یافتہ اور ملحقہ کالجز ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: قائد قوم ڈاکٹر ایس ایم سید خلیل کی خدمات کے اعتراف میں 10 ڈسمبر کو دبئی میں ہوگا اہم تہنیتی پروگرام؛ دیا جائے گا افتخار قوم کا خطاب؛ ریلیز کی جائے گی وڈیو ڈوکومینٹری

بھٹکل مسلم خلیج کونسل (بی ایم کے سی) نے قائد قوم ڈاکٹر ایس ایم سید خلیل الرحمٰن کو افتخار قوم کے خطاب سے نوازتے ہوئے ان کی خدمات کو زبردست خراج عقیدت پیش کرنے کا منصوبہ بنایا ہے

منگلورو:کانگریس لیڈر رماناتھ رائے نے کہا؛ سی ٹی روی کے بیان نے بی جےپی کو ننگا کردیا ہے

بی جے پی میں راؤڈی شیٹر وں کی شمولیت کی حمایت میں سی ٹی روی نے جو بیان دیا ہے، اُس بیان نے بی جے پی کو ننگاکردیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار  سابق وزیر  اور کے پی سی سی کے نائب صدر بی ، رماناتھ رائی  نے کیا۔

بھٹکل: پرائمری طلبا کی اسکالرشپ بند کئےجانےکے خلاف ایس آئی اؤ نے ریاستی وزیر تعلیم کے نام دیا میمورنڈم

مرکزی حکومت کی جانب سے 8ویں تک کی پری پرائمری اسکالرشپ بند کئےجانےکے خلاف اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن آف انڈیا (ایس آئی اؤ) بھٹکل شاخ نے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کی معرفت ریاستی وزیر برائے پرائمری تعلیم کو میمورنڈم سونپتے مطالبہ کیا ہےکہ پرائمری طلبا کی اسکالرشپ کو جاری رکھتےہوئے ...

کمٹہ : ضلع میں بڑھ گیا ہے نقلی نوٹوں کا چلن

ضلع شمالی کینرا کے کمٹہ سمیت بھٹکل ، ہوناور جیسے علاقوں میں پانچ سو اور دو ہزار کے نقلی نوٹوں کا چلن عام ہونے خبروں کے درمیان اب ایک سو روپے کے نقلی نوٹوں کی بھرمار ہونے کی بات سامنے آئی ہے ۔

منگلورو:کانگریس لیڈر رماناتھ رائے نے کہا؛ سی ٹی روی کے بیان نے بی جےپی کو ننگا کردیا ہے

بی جے پی میں راؤڈی شیٹر وں کی شمولیت کی حمایت میں سی ٹی روی نے جو بیان دیا ہے، اُس بیان نے بی جے پی کو ننگاکردیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار  سابق وزیر  اور کے پی سی سی کے نائب صدر بی ، رماناتھ رائی  نے کیا۔

مہاراشٹر-کرناٹک سرحد تنازعہ میں شدت، بیلگاوی میں مہاراشٹر کے ٹرکوں پر پتھراؤ، حالات کشیدہ

کرناٹک اور مہاراشٹر کے درمیان جاری سرحد تنازعہ نے بیلگاوی علاقہ میں حالات کو کشیدہ کر دیا ہے۔ سرحدی علاقہ بیلگاوی میں تشدد کے واقعات پیش آ رہے ہیں اور منگل کے روز تو بیلگاوی کے باگیواڑی میں شدید احتجاجی مظاہرہ دیکھنے کو ملا۔ اس دوران کرناٹک رکشن ویدیکے سے جڑے کارکنان نے ...

’مہاراشٹر کے وزراء نے بیلگاوی میں قدم رکھا تو ہوگی قانونی کارروائی‘، کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی نے کیا متنبہ

مہاراشٹر اور کرناٹک کے درمیان سرحدی تنازعہ کو لے کر بیان بازی لگاتار بڑھتی جا رہی ہے۔ تازہ بیان کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کا سامنے آیا ہے جس میں انھوں نے مہاراشٹر حکومت کو متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ان کے وزراء نے کرناٹک کے بیلگاوی میں قدم رکھنے کی کوشش کی تو ان کے ...

منڈیا : مالا دھاری بھکتوں نے لگائے سری رنگا پٹن جامع مسجد کو ہنومان مندر بنانے کے نعرے - مسجد میں گھسنے کی کوشش پولیس نے کر دی ناکام  

زعفرانی جھنڈے اٹھائے ہوئے ہزاروں  مالا دھاری ہنومان بھکتوں کا جلوس 'سیکیرتھنا یاترا' کی شکل میں ہنومان مندر کی طرف جاتے ہوئے جب تاریخی سری رنگا پٹن جامع مسجد کے سامنے پہنچا تو نوجوان بھکتوں نے اچانک اشتعال انگیزی شروع کر دی اور جامع مسجد کو ہنومان مندر میں بدلنے کے نعرے لگانے ...

مرکزی حکومت کی طرف سے دلت، پسماندہ اور اقلیتی طلباء کا اسکالرشپ ختم کیا جانا انہیں تعلیمی حقوق سے بتدریج محروم کرنے کی حکمت عملی ہے: ایس ڈ ی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا کرناٹک کے ریاستی صدر عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں کہا ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے تعلیمی سال 23۔2022سے ایس سی، ایس ٹی، پسماندہ طبقات، اور اقلیتی برادریوں سے تعلق رکھنے والے پہلی سے آٹھویں جماعت کے تمام طلباء کو کوئی اسکالرشپ ختم ...