ہائی کورٹ نے سٹی میونسپالٹی ،ٹاون میونسپالٹی ، پٹن پنچایت کے صدور ونائب صدور عہدوں کی ریزرویشن کو کردیا رد، مگر پھر دی دس دن کی مہلت

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 19th November 2020, 9:17 PM | ریاستی خبریں |

بھٹکل:19؍ستمبر(ایس اؤ نیوز) ریاست کی تمام سٹی میونسپالٹی، ٹاون میونسپالٹی اور پٹن پنچایت کے صدور ونائب صدور کے متعلق ریاستی حکومت کی طرف سے 8اکتوبر کو جاری کردہ حکم نامے کو ہائی کورٹ نے رد کئے جانے کی اطلاع موصول ہوئی ہے، مگر بتایا گیا ہے کہ ہائی کورٹ کی جانب سے رد کئے جانے کے بعد حکومت کے وکلا ء نے  ڈیویژنل بینچ سے دس دن کی مہلت طلب کی تو  ڈیویژنل بنچ نے اپنے ہی فیصلہ پر بھی اسٹے لگادیا ہے۔

میڈیا میں آئی خبروں کے مطابق ریاستی حکومت کی طرف سے جاری کردہ حکم نامے کےخلاف ہاسن، ارسیکیرہ، کوپل، شڈلگٹہ اور ہری ہر میونسپالٹی، چک بلاپور ضلع باگے پلی کی میونسپالٹی ، کورگ ضلع سوموار پیٹ کی پٹن پنچایت سمیت ریاست کے مختلف مقامات کے مقامی انتظامیہ کے منتخب نمائندوں نے صدورو نائب صدور کے عہدوں کو لے کر داخل کی گئی عرضیوں پر سماعت کرتےہوئے ہائی کورٹ کے جج آر دیوداس  کی پنچ نے جمعرات کو یہ حکم جاری کیا ہے۔

ریاستی ہائی کورٹ نے ریاستی حکومت سے کہا ہے کہ حکومت نے صدور ونائب صدور کے ریزرویشن کی نشاندہی کے موقع پر روٹیشن قانون پر عمل نہیں کیا، اسی لئے اگلے چارہفتوں میں روٹیشن کے مطابق ریزرویشن دے کر دوبارہ اعلامیہ جاری کرے۔

معاملہ کی حقیقت کیا ہے؟:عہدوں کی تقسیم میں روٹیشن پر عمل نہیں کئے جانے کا اعتراض جتاتے ہوئے داخل کی گئی عرضیوں کی سماعت کرتےہوئےہائی کورٹ نے 15اکتوبر کوسٹی  میونسپالٹی صدور و نائب صدور عہدوں کے ریزرویشن اعلامیہ اور 19اکتوبر کو میونسپالٹی اور پٹن پنچایت کے صدور و نائب صدور کی ریزرویشن اعلامیہ پر حکم امتناعی صادر کیاتھا۔ اس کے ساتھ ہی تین وکیلوں پر مشتمل ایک کمیٹی کی تشکیل کرتےہوئے کہاتھا کہ ریزرویشن کی تقسیم کی جانچ کرنےکے بعد رپورٹ سونپیں۔  

سنگل بنچ کی طرف سےصادر کئےگئےحکم امتناعی کے خلاف ریاستی حکومت نے 19اکتوبر کو رٹ داخل کی تھی۔ حکومت کی عرضی کو قبول کرتےہوئے ڈویژن  بنچ نے سنگل بنچ کے حکم امتناعی کو رد کیاتھا اور ریاست کے سبھی میونسپالٹی صدور و نائب صدور کے عہدوں کےانتخابات کو ہری جھنڈی دکھائی تھی ۔ اور یوں سنگل بنچ نے  22اکتوبر کو اپنا حکم امتناعی واپس لے کر 9نومبر سےپہلے صدور و نائب صدور کے عہدوں کا انتخابی عمل مکمل کرنے کا حکومت کو حکم دیاتھا۔ اب ہائی کورٹ نے حکومت کو آرڈر دیاہےکہ وہ اگلے چار ہفتوں میں ریزرویشن کے مطابق دوبارہ اعلامیہ جاری کریں۔

اس سلسلےمیں جب حکومت کی طرف سے وکلاء کی ٹیم نے ہائی کورٹ میں متعلقہ  حکم نامہ پر سوال اٹھاتے ہوئے عرضی داخل کر نے کے لئے مہلت کی درخواست کی تو    ہائی کورٹ کی ڈیویژنل  بنچ نے اس کو قبول کیا ہے اور  ریزرویشن اعلامیہ کو ردکئے جانے والے اپنے ہی حکم پر اگلے 10دنوں تک حکم امتناعی کا فیصلہ سنایا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

انکولہ ہوائی اڈہ پروجیکٹ: مقامی عوام کے ساتھ میٹنگ میں پروجیکٹ پرسخت  اعتراض؛ میٹنگ کا کیابائیکاٹ 

انکولہ میں مجوزہ شہری ہوائی اڈے کی تعمیر کے سلسلے میں درپیش تحویل اراضی اور دیگر مسائل پر مقامی عوام کے ساتھ گفتگو کرنے اور ان کا احوال سننے کےلئے  ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرایچ کے کرشن مورتی نے بیلے کیری میں  ایک میٹنگ منعقد کی۔

روشن بیگ کے گھر پرسی بی آئی کا چھاپہ، سابق وزیر کی عرضی ضمانت پر سماعت 25نومبر تک ملتوی

آئی ایم اے کیس کے سلسلہ میں اتوار کے روز سی بی آئی کی طرف سے گرفتار سابق وزیر روشن بیگ کی رہائش گاہ پر پیر کی صبح سی بی آئی افسروں نے چھاپہ مارا اور وہاں کافی دیر تک تلاشی لینے کے بعد لوٹ گئی۔

ریاست کرناٹک کے دو اسمبلی حلقوں میں نئے اراکین اسمبلی نے حلف اٹھایا

است کرناٹک کے دو اسمبلی حلقوں، آر آر نگر اور سرا میں حال ہی میں منعقدہ ضمنی انتخابات میں منتخب ہونے والے منی رتنا اور ڈاکٹر راجیش گوڑا نے اراکین اسمبلی کی حیثیت سے حلف لیا۔ ودھان سودھا کے کانفرنس ہال میں منعقدہ ایک سادہ تقریب میں اسمبلی اسپیکر ویشویشور کاگیری نے دونوں نئے ...

ڈاکٹر کے نارائن راجیہ سبھا کے لئے بلامقابلہ منتخب

حکمران بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے لیڈر ڈاکٹر کے۔ نارائن پیر کے روز راجیہ سبھا میں بلامقابلہ منتخب قرار دیئے گئے۔ریاستی سکریٹریٹ ودھان سودھا کے سکریٹری وشالکمشی نے ڈاکٹر نارائن کو راجیہ سبھا کے لئے بلامقابلہ منتخب قرار دیا۔