جموں وکشمیرمیں دہشت گردانہ حملے کا خطرہ، ہائی الرٹ پرتینوں افواج

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th August 2019, 11:32 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

جموں،17اگست(ایس او نیوز؍ایجنسی) جموں وکشمیرمیں دفعہ 370 ہٹائے جانے کے بعد وادی کا ماحول خراب کرنے کیلئے پاکستان کی دہشت گردانہ تنظیمیں حملے کا منصوبہ بنا رہی ہیں۔ اسے دیکھتے ہوئے سبھی ہندوستانی فوجیوں اورسکیورٹی اہلکاروں کو ہائی الرٹ پررکھا گیا ہے۔ سرکاری ذرائع نے یہ اطلاع دی ہے۔جموں وکشمیرکے چیف سکریٹری بی وی آرسبرامنیم نے کہا کہ جمعہ کی نمازکے بعد پوری ریاست میں صورتحال ٹھیک رہی۔ انہوں نے کہا کہ آنے والے دنوں میں اورچھوٹ میں اضافہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کشمیرمیں مرحلہ واراورمنظم اندازمیں پابندیوں میں نرمی دی جائے گی اورہفتہ کے اختتام تک کشمیرمیں زیادہ ترفون لائنیں بحال کردی جائیں گی اور اسکول اگلے ہفتے کھل جائیں گے۔سبرامنیم نے پریس کانفرنس میں کہا کہ وادی میں جمعہ کو ریاستی حکومت کے دفاترمیں عام طریقے سے کام کاج ہوا اورکئی دفاترمیں تو حاضری اچھی رہی۔ انہوں نے کہا کہ 5اگست کوجب پابندیاں لگائی گئیں، تب سے نہ کسی کی جان گئی اورنہ کوئی زخمی ہوا۔پانچ اگست کوجموں وکشمیرکے خصوصی ریاست کے درجے کومنسوخ کردیا گیا تھا اوراسے مرکزکے زیرانتظام دو خطوں میں تقسیم کردیا گیا تھا۔ سبرامنیم نے کہا جمعہ کی نمازکے بعد ملی رپورٹ کے مطابق پوری ریاست میں سب کچھ پرامن رہا۔ دہشت گردانہ تنظیموں، شدت پسند گروپوں اورپاکستان کے حالات بگاڑنے کی مسلسل کوشش کے باوجود ہم نے کسی کی بھی جان نہیں جانے دی۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا انفیکشن نے پھر بنایا ریکارڈ، 24 گھنٹوں میں ملے 22,771 نئے کیس، 442 لوگوں کی موت

ملک میں کورونا وائرس روز بروز شدید شکل اختیار کرتا جارہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس کے ریکارڈ 22،771 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد بڑھ کر 6.48 لاکھ ہوچکی ہے۔

ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔

دہلی میں کورونا کے معاملات 94000سے زیادہ، 2900سے زیادہ لوگو ں کی موت

کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور راجدھانی میں کل 2520نئے معاملے سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد جمعہ کو بڑھ کر 94000سے زیادہ ہوگئی ہے اور 59مزید لوگوں کی موت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 2923ہوگئی ہے۔

آج 16 پوزیٹیو آنے والوں میں تین دبئی سے اور آٹھ وجے واڑہ سے لوٹے لوگ شامل

بھٹکل کے آج جن 16 لوگوں کی رپورٹ کورونا  پوزیٹیو آئی ہے، اُن میں سے تین لوگ دبئی سے آئے ہوئے لوگ ہیں، آٹھ لوگ وجئے واڑہ ،  تین لوگ  اُترپردیش  اور مہاراشٹرا سے لوٹا ہوا ایک شخص بھی آج کی لسٹ میں شامل ہیں۔

کورونا اَپ ڈیٹ:جنوبی کینرامیں آج صبح سے اب تک ہوئی 2افراد کی موت۔ضلع میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد ہوئی 22

جنوبی کینرا میں کورونا وباء کے اثرات بہت زیادہ سنگین صورت اختیار کرتے جارہے ہیں۔ آج صبح سے اب تک کووِڈ کے 2 مریض موت کا شکار ہوگئے ہیں جس کے بعد ضلع میں وباء کی وجہ سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 22ہوگئی ہے۔

بھٹکل میں نجی اسپتال کی نرس کو لگ گیا کورونا کا مرض۔ایس ایس ایل سی کی طالبہ نرس کی بیٹی کو کیا گیا ہوم کوارنٹین

ایک نجی اسپتال میں خدمات انجام دینے والی نرس کو کووِڈ کا مرض لاحق ہونے کے بعدایس ایس ایل سی کا امتحان دے رہی اس کی بیٹی کو امتحان سے باز رکھتے ہوئے ہوم کوارنٹین کیا گیا ہے۔