کسان تحریک: کسانوں نے  زرعی قوانین کی جلائی کاپیاں،کسان مظاہرین کو ’مدعا‘کا بھی علم نہیں، سازش کے شکار ہیں،ہیما مالینی کا شکوہ  

Source: S.O. News Service | Published on 13th January 2021, 9:47 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،13جنوری (آئی این ایس انڈیا) زرعی قوانین کیخلاف کسان تحریک کا آج 49 واں دن ہے۔کسان مظاہرین آج لوہری کے موقعہ پر زرعی قوانین کی کاپیاں جلا رہے ہیں،ادھر بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ ہیما مالینی نے کہا ہے کہ جو لوگ احتجاج کر رہے ہیں، وہ خود نہیں جانتے کہ وہ کیا چاہتے ہیں اور زرعی قوانین میں کیاکیا ہے؟

اس سے واضح ہوتا ہے کہ وہ کسی کے اشارہ پر مظاہرہ کررہے ہیں۔ہیما مالینی نے یہ بھی کہا کہ زرعی قوانین کے نفاذ کو روکنا اچھی بات ہے، اس سے معاملہ کو رفع دفع ہونے کی توقع کی جا سکتی ہے۔ کسانوں نے کئی مراحل میں مذاکرات کے بعد بھی کالے قانون کو قبول کرنے کو تیار نہیں ہیں۔منگل کو سپریم کورٹ نے تینوں زرعی قوانین پر عمل درآمد پر روک لگادی، نیز اس مسئلے کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کے لئے 4 ماہرین کی ایک کمیٹی تشکیل دی گئی تھی، لیکن کسانوں کا کہنا ہے کہ قوانین جب تک ختم نہیں کئے جا تے، تحریک ختم نہیں کریں گے۔

خیال رہے کہ عدلیہ کے ذریعہ جن لوگوں کو کمیٹی کاممبر بنایا گیا ہے، انہوں نے ماقبل میں ہی زرعی قانون کی حمایت کرچکے ہیں۔ کسان رہنما راکیش  ٹکیت اور ڈاکٹر درشن پال سنگھ نے کہا کہ سپریم کورٹ کی تشکیل کردہ کمیٹی کے چار ممبران نئے زرعی قوانین کی کھل کر حمایت کرتے رہے ہیں، یہ سرکاری لوگ ہیں۔ لہٰذا یہ احتجاج ختم نہیں ہوگا، 26 جنوری کو راج پتھ پر ٹریکٹر پریڈ کی تیاریاں تیز ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں یوم جمہوریہ کے موقع پر کسانوں کی ٹریکٹر ریلی کے دوران ہنگامہ ؛ پولس لاٹھی چارج، آنسو گیس کے گولے بھی داغے گئے؛ کسانوں نے پولس کی بیریکیڈ توڑ کر داخل ہوگئے دہلی

  کسان تنظیموں کی ٹریکٹر ریلی کے دوران  دہلی میں کئی مقامات پر کسانوں اور پولس کے درمیان جھڑپوں کی خبریں موصول ہوئی ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق  کسانوں نے پولیس بس کو آئی ٹی او پر ہائی جیک کرلیا ہے ، جبکہ ایک کرین بھی چھین لی گئی ہے۔ میڈیا میں آئی خبروں کے مطابق  آئی ٹی او پر ...

بھاجپائیوں کیلئے مشکلیں کھڑی :بھاجپا کے ’جے شری رام‘ کے جواب میں ترنمول کا ’ہرے کرشنا ہرے رام ‘ کا نعرہ

23 جنوری کو سبھاش چندر بوس کی یاد میں منعقدہ تقریب کے دوران جب مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی کو اسٹیج پر خطاب کے لئے مدعو کیاگیا ،تو سامعین کی طرف سے ،جن کی اکثریت بھاجپانواز کی تھی، نے ’جے شری رام‘ کا نعرہ لگاکر خطاب میں مخل ہونے کی کوشش کی ۔

مہاراشٹر: آزاد میدان میں کسانوں کی یلغار

مرکزی حکومت کے زرعی قوانین کے خلاف دہلی میں دوماہ سے جاری کسانوں کا احتجاج تاریخ رقم کر رہا ہے- ان قوانین کے خلاف پنجاب و ہریانہ کے کسانوں کے سڑکوں پر اترنے کے بعد سخت سردی میں مودی حکومت نے ان کسانوں پر پانیوں کی بوچھارماری مگر کسان پیچھے نہیں ہٹے-

توپھربابری مسجدکی شہادت کاعدالت میں فخرکے ساتھ اعتراف کیوں نہیں کیا؟ پرکاش جاوڈیکرکے بیان پراویسی کی تنقید، سپریم کورٹ کہہ چکاہے،مندرتوڑنے کاثبوت نہیں

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسدالدین اویسی نے مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر کے بابری مسجدکی شہادت کیس کے بارے میں دیئے گئے تبصرہ کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

حکومت کسانوں کے مفادات کے تحفظ کیلئےپورے طور سے وقف: صدر رام ناتھ

صدر رام ناتھ کووند نے زرعی شعبہ میں ترقی کے لئے کسانوں، ملک کی سرحدوں کی سلامتی یقینی  بنانے میں کامیاب رہے جوانوں اور کووڈ سے  نمٹنے اور ترقی  کے مختلف شعبوں میں خدمات کے لئے سائنسدانوں کومبارک باد دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کسانوں سمیت تمام طبقوں کی فلاح وبہبود کے لئے پوری  ...