منگلورومیں بارش کا قہر۔ چٹانیں کھسکنے، درخت اور بجلی کے کھمبے اکھڑنے سے مکانات اور موٹر گاڑیوں کو پہنچا نقصان۔ ضلع انتظامیہ نے جاری کیا ریڈ الرٹ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 23rd July 2019, 12:20 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو23/جولائی (ایس او نیوز) پچھلے چار پانچ دنوں سے ضلع  جنوبی کینرا ، اُڈپی اور شمالی کینرا  میں جاری تیز بارش کی وجہ سے بھاری نقصانات کی خبریں مل رہی ہیں۔ چونکہ محکمہ موسمیات نے 27جولائی تک تیز بارش کا سلسلہ جاری رہنے کی پیشین گوئی کی ہے اس لئے ضلعی انتظامیہ نے ساحلی کرناٹکا میں   ریڈالرٹ جاری کیا ہے۔

 خیال رہے کہ دو دن پہلے ضلعی انتظامیہ نے خراب موسم کو دیکھتے ہوئے’اورینج الرٹ‘ جاری کیا تھا۔اب ریڈ الرٹ جاری کرنے کے ساتھ تمام سرکاری اور نجی اسکولوں اور کالجوں کے لئے ایک دن کی چھٹی کااعلان کیا ہے۔ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے جاری کیے گئے بیان میں عوام،سیاح اور ماہی گیروں کو سمندری کناروں، ساحلوں، ندیوں اور تالابوں سے دور رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

پیر کے دن ہوئی تیز بارش کی وجہ سے مینگلور کے کنکن ناڈی جنکشن کے پاس صبح کے وقت ایک بڑا درخت گرگیا، جس کی زد میں آنے سے بائک سوار نوجوان اور ایک طالبہ زخمی ہوگئے۔شہر کے مختلف مقامات پر مصنوعی سیلاب کی کیفیت پیدا ہوگئی جس سے عوامی زندگی ابتر ہوگئی۔ کونجات بیل نامی علاقے میں ایک گھر کا نصف حصہ ڈھل گیاجبکہ گھر والوں نے احتیاطی تدبیر کرتے ہوئے مکان کو پوری طرح گرنے سے بچالیا۔ امبلاموگارو علاقے میں چٹان کھسکنے سے عباس اورعبدالرزاق نامی افراد کے گھروں کوبڑاخطرہ لاحق ہوگیا ہے۔اس علاقے میں مزید پہاڑی حصہ کھسکنے کا خدشہ دکھائی دے رہا ہے۔کئی مقامات پر الیکٹرک کھمبے اکھڑنے سے موٹر گاڑیوں کو نقصان پہنچنے کی بھی خبر ملی ہے۔

 فالنیر کے علاقے میں مین ڈرینیج بھر کر پانی ابلنے لگا توگھروں میں گندا پانی گھسنے کی وجہ سے مقامی لوگوں کے لئے بڑی مصیبتوں کا سامنا کرنا پڑا۔ شہر کے مختلف علاقوں میں گندے پانی کی نکاسی اور فٹ پاتھ کی مرمت کا کام برسات کی وجہ سے ادھورا چھوڑ دیا گیا ہے اور اس سے برساتی پانی کی نکاسی اور ٹریفک کے لئے میں بہت زیادہ مسائل پیدا ہورہے ہیں۔امبیڈکر سرکل، ملّی کٹّے جیسے علاقوں میں عوام کو اس طرح کے مسائل کا بہت زیادہ سامنا کرنے کی نوبت آئی ہے۔

محکمہ موسمیات کے ذریعے جاری کیے گئے اعداد وشمار کے مطابق پیر کے دن 24گھنٹوں کے دوران ضلع جنوبی کینرا میں اوسطاً 66.8ایم ایم بارش ہوئی ہے۔ بنٹوال میں 66.5،بیلتنگڈی میں 65.2، منگلورو میں 76.4، سولیا میں 51اور پتور میں 75ایم ایم بارش ریکارڈ کی گئی ہے۔    

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔