منگلورومیں بارش کا قہر۔ چٹانیں کھسکنے، درخت اور بجلی کے کھمبے اکھڑنے سے مکانات اور موٹر گاڑیوں کو پہنچا نقصان۔ ضلع انتظامیہ نے جاری کیا ریڈ الرٹ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 23rd July 2019, 12:20 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو23/جولائی (ایس او نیوز) پچھلے چار پانچ دنوں سے ضلع  جنوبی کینرا ، اُڈپی اور شمالی کینرا  میں جاری تیز بارش کی وجہ سے بھاری نقصانات کی خبریں مل رہی ہیں۔ چونکہ محکمہ موسمیات نے 27جولائی تک تیز بارش کا سلسلہ جاری رہنے کی پیشین گوئی کی ہے اس لئے ضلعی انتظامیہ نے ساحلی کرناٹکا میں   ریڈالرٹ جاری کیا ہے۔

 خیال رہے کہ دو دن پہلے ضلعی انتظامیہ نے خراب موسم کو دیکھتے ہوئے’اورینج الرٹ‘ جاری کیا تھا۔اب ریڈ الرٹ جاری کرنے کے ساتھ تمام سرکاری اور نجی اسکولوں اور کالجوں کے لئے ایک دن کی چھٹی کااعلان کیا ہے۔ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے جاری کیے گئے بیان میں عوام،سیاح اور ماہی گیروں کو سمندری کناروں، ساحلوں، ندیوں اور تالابوں سے دور رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

پیر کے دن ہوئی تیز بارش کی وجہ سے مینگلور کے کنکن ناڈی جنکشن کے پاس صبح کے وقت ایک بڑا درخت گرگیا، جس کی زد میں آنے سے بائک سوار نوجوان اور ایک طالبہ زخمی ہوگئے۔شہر کے مختلف مقامات پر مصنوعی سیلاب کی کیفیت پیدا ہوگئی جس سے عوامی زندگی ابتر ہوگئی۔ کونجات بیل نامی علاقے میں ایک گھر کا نصف حصہ ڈھل گیاجبکہ گھر والوں نے احتیاطی تدبیر کرتے ہوئے مکان کو پوری طرح گرنے سے بچالیا۔ امبلاموگارو علاقے میں چٹان کھسکنے سے عباس اورعبدالرزاق نامی افراد کے گھروں کوبڑاخطرہ لاحق ہوگیا ہے۔اس علاقے میں مزید پہاڑی حصہ کھسکنے کا خدشہ دکھائی دے رہا ہے۔کئی مقامات پر الیکٹرک کھمبے اکھڑنے سے موٹر گاڑیوں کو نقصان پہنچنے کی بھی خبر ملی ہے۔

 فالنیر کے علاقے میں مین ڈرینیج بھر کر پانی ابلنے لگا توگھروں میں گندا پانی گھسنے کی وجہ سے مقامی لوگوں کے لئے بڑی مصیبتوں کا سامنا کرنا پڑا۔ شہر کے مختلف علاقوں میں گندے پانی کی نکاسی اور فٹ پاتھ کی مرمت کا کام برسات کی وجہ سے ادھورا چھوڑ دیا گیا ہے اور اس سے برساتی پانی کی نکاسی اور ٹریفک کے لئے میں بہت زیادہ مسائل پیدا ہورہے ہیں۔امبیڈکر سرکل، ملّی کٹّے جیسے علاقوں میں عوام کو اس طرح کے مسائل کا بہت زیادہ سامنا کرنے کی نوبت آئی ہے۔

محکمہ موسمیات کے ذریعے جاری کیے گئے اعداد وشمار کے مطابق پیر کے دن 24گھنٹوں کے دوران ضلع جنوبی کینرا میں اوسطاً 66.8ایم ایم بارش ہوئی ہے۔ بنٹوال میں 66.5،بیلتنگڈی میں 65.2، منگلورو میں 76.4، سولیا میں 51اور پتور میں 75ایم ایم بارش ریکارڈ کی گئی ہے۔    

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل انجمن پی یوکالج فارویمن کے زیراہتمام چالیسویں سالانہ اجلاس کا انعقاد

الحمد للہ ،3دسمبر 2019ء بروز منگل صبح سا ڑھے دس بجے انجمن پی یو کا لج فار ویمن کے خدیجہ سید علی کیمپس کے احا طے میں پر نسپل ڈاکٹر فر زانہ محتشم صا حبہ کی زیر سر پر ستی نہا یت تزک و احتشام کے ساتھ چالیسواں سالانہ اجلاس منعقد کیا گیا۔       

بھٹکل کے کوگتی تالاب علاقے میں کچرے کا ڈھیر : کچرے میں ملے کرنٹ بل اور شناختی کارڈ کی نقول پولس کے حوالے : عوامی احتجاج اور سخت کارروائی کامطالبہ

گاؤں، گھر ، دکانوں کا کچرا لاکر کوگتی تالاب کے اطراف جمعہ کی رات  انجانوں کی طرف سے پھینکے  جانے پر علاقہ کے عوام نے سخت برہمی کا اظہار کرتےہ وئے جائے وقوع پہنچ کر احتجاج کیا۔

بھٹکل کے بیلکے پر موجود شیرور چک پوسٹ کو منتقل کرنے پنچایت کی جانب سے ڈی سی کو خط

تعلقہ کی سرحد بیلکے  گرام پنچایت حدود کے سروے نمبر 223پر قومی شاہراہ اتھارٹی کی جانب سے ٹول گیٹ کی تعمیر کی گئی ہے ، اس سےمتصل اترکنڑا ضلع حددو میں شامل ٹول گیٹ کے پیچھے تعمیر کئے گئے شیرور پولس چک پوسٹ کو وہاں سے نکال کر اُڈپی ضلع کی سرحد میں منتقل کرنے کا مطالبہ لےکر بیلکے گرام ...

بھٹکل آنگن واڑی کارکنان کی  10دسمبر کو ہونےو الے ریاست گیر احتجاج میں شرکت: آنگن واڑی مراکز بند

آنگن واڑی ملازمین اپنی مختلف مانگوں کو لے کر 10دسمبر سے غیر معینہ احتجاج شروع کررہے ہیں، اس سلسلے میں بھٹکل آنگن واڑی کارکنان بھی اپنے کام کاج کو بند رکھنےکو لے کر بھٹکل آنگن واڑی کارکنان سنگھ کے عہدیداران نے سنیچر کو محکمہ خواتین و اطفال کے افسران کو جانکاری پر مبنی میمورنڈم ...

بھٹکل : گڈلک روڈ کی درستی و نئے تارکول بچھانے کا مطالبہ لے کر علاقائی عوام کا رکن اسمبلی کو میمورنڈم

جالی پٹن پنچایت حدود کے گڈلک روڈ اور ہندو کالونی کراس کی سڑک برباد ہونے جانے پر اس کی دوبار ہ درستی اور تارکول بچھانے کا مطالبہ لے کر بھٹکل کے رکن اسمبلی سنیل نائک کو علاقے کے عوام نے میمورنڈم سونپا۔