بریکنگ نیوز

تمل ناڈو میں موسلادھار بارش کا امکان، دریا کے کنارے رہنے والے لوگوں کے لیے الرٹ جاری

Source: S.O. News Service | Published on 20th November 2022, 11:27 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

چنئی،20؍نومبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) بارش کے امکان کے پیش نظر تمل ناڈو کے محکمہ محصولات نے دریاؤں کے کنارے رہنے والے لوگوں کے لیے الرٹ جاری کیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ آبی ذخائر سے پانی چھوڑا جا سکتا ہے۔ ریاستی محکمہ محصولات نے کہا کہ 121 کثیر مقصدی سائیکلون شیلٹر اور 5093 ریلیف مراکز تیار کیے گئے ہیں۔

ہفتہ کو چیمبرم بکم جھیل سے 912 کیوسک اور ریڈ ہلز کے ذخائر سے 677 کیوسک پانی چھوڑا گیا۔ انتظامیہ نے نشیبی علاقوں میں رہنے والے لوگوں کو محفوظ مقامات پر منتقل ہونے کا مشورہ دیا ہے۔ چنئی کے لیے 17 نگرانی افسران اور دیگر اضلاع کے لیے 43 نگرانی افسران کو بھاری بارش کی وجہ سے کسی بھی پریشانی سے نمٹنے کے لیے مقرر کیا گیا ہے۔

آج موسلا دھار بارش کا امکان ہے کیونکہ خلیج بنگال میں کم دباؤ کا علاقہ مغرب-شمال مغرب کی طرف بڑھ رہا ہے۔ جس کی وجہ سے تمل ناڈو کے چنگل پٹو، ویلوپورم اور کڈالور اضلاع میں شدید بارش ہو سکتی ہے۔ چنئی میں بھی موسلادھار بارش کے آثار ہیں۔

ریونیو ڈپارٹمنٹ نے گریٹر چنئی کارپوریشن اور دیگر ضلعی انتظامیہ کو بھی ہدایت کی ہے کہ وہ اگلے تین دنوں میں شدید بارشوں کا سامنا کرنے کے لیے سیلاب کی تیاریوں کو بہتر بنائیں۔

نیشنل ڈیزاسٹر ریسپانس فورس (این ڈی آر ایف) اور اسٹیٹ ڈیزاسٹر ریسپانس فورس (ایس ڈی آر ایف) کی ٹیموں نے پہلے ہی بارش کے اگلے مرحلے کے دوران کسی بھی صورت حال کا سامنا کرنے کے لیے چوکس رہنے کی وارننگ دی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

گھرسے ماں اور  اس کے دوبچوں کی جلی ہوئی نعشیں برآمد : بیوی ، بیٹا اور بیٹی ہلاک

ریاست تمل ناڈو کے کُنّم کولم کے پنّیتا ڈمنلی میں ماں اور اس کے دو بچوں کی  گھر میں نعشیں پائی گئیں ۔ صبح سویرے  نعشیں جلی ہوئی  حالت میں پتہ چلیں۔ مہلوکین کی شناخت حارث کی بیوی شفینہ ، تین سالہ اجوہ اور ڈیڑھ سالہ امن کے طورپر کی گئی ہے۔ واقعے کے وقت گھر میں صرف حارث کی ماں ہونے کی ...

دہلی میں بی بی سی دفتر کے سامنے ہندو سینا کا احتجاج

ہندوسینا کارکنوں نے نئی دہلی میں کستورباگاندھی مارگ پر واقع بی بی سی دفتر کے سامنے پلے کارڈس رکھے۔ وہ 2002ء کے گجرات فسادات پر بی بی سی سیریز کے خلاف احتجاج کررہے تھے۔بی بی سی کا صدر دفتر برطانیہ میں ہے۔

بینک ملازمین کی 30 اور 31 جنوری کی ہڑتال ملتوی

 یونائیٹڈ فورم آف بینک یونینز (یو ایف بی یو) نے ممبئی میں ہونے والی مفاہمت کی میٹنگ میں طے پانے والے معاہدے کے بعد 30 اور31 جنوری کو ہونے والی دو روزہ ملک گیر بینک ہڑتال کو ملتوی کر دیا ہے۔

کانگریس کے سینئر رہنما  رندیپ سنگھ سرجے والا کا بی جے پی پر حملہ، کہا؛ ملک میں نہ نفرت چلے گی نہ تقسیم

کانگریس کے سینئر رہنما  رندیپ سنگھ سرجے والا نے کہا کہ وزیر اعظم مودی اپنے دل  کے چور کو دیکھیں، تب انہیں پتہ چلے گا کہ ملک میں نفرت کون پھیلا رہا ہے اور  ملک کو تقسیم کون کر رہا ہے۔

بھارت جوڑو یاترا اپنے آخری پڑاؤ پر،پلوامہ پہنچ گئی

بھارت جوڑو یاترا  جو کشمیر میں اپنے آخری پڑائو میں پلوامہ پہنچ گئی ہے سنیچر کو دوبارہ شروع ہوئی۔ کانگریس کے رکن پارلیمنٹ راہل گاندھی نے اونتی پورہ سے  یاترا کا آغاز کیا۔ اس دوران پی ڈی پی سربراہ محبوبہ مفتی  اور پرینکا گاندھی بھی یاترا میں شامل  ہوئیں۔ یاترا کے دوران راہل ...

بھٹکل : آسارکیری میں تعمیر کردہ مہادوار کا رکن اسمبلی کے ہاتھوں افتتاح

تعلقہ کی مشہور آسارکیری نامدھاری سماج کی نچل مکی شری ترومل وینکٹ رمن مندر تجدید کردہ مورتی کی نصب کاری ، پالکی مہوتسومذہبی پروگرام سمیت  رکن اسمبلی سنیل کی جانب سے مندر کے لئے تعمیر کردہ مہا دوار(صدردروازہ) کی افتتاحی تقریب کاانعقاد ہوا۔  شری رام اکشھتر کے شری برہمانند ...

بینک ملازمین کی 30 اور 31 جنوری کی ہڑتال ملتوی

 یونائیٹڈ فورم آف بینک یونینز (یو ایف بی یو) نے ممبئی میں ہونے والی مفاہمت کی میٹنگ میں طے پانے والے معاہدے کے بعد 30 اور31 جنوری کو ہونے والی دو روزہ ملک گیر بینک ہڑتال کو ملتوی کر دیا ہے۔

بھٹکل ڈونگرپلی میں آٹو رکشہ کھائی میں جاگرا؛ چار زخمی

  بھٹکل  جالی روڈ سے بندرروڈ کے راستے  نستار جانے کے دوران ایک آٹو رکشہ بے قابو ہوکر قریب  20 فٹ گہری کھائی میں جاگرا، لیکن اللہ کا شکر یہ ہوا کہ آٹو پر سوار تمام لوگ معمولی  زخموں کے ساتھ بال بال بچ گئے۔ حادثہ جمعرات شام قریب چھ بجے ڈونگرپلّی، درگاہ کے اوپری حصہ میں  پیش ...

بھٹکل میں 5فروری کو ہوگاکینسر بیداری ’میراتھن ؛ 31 جنوری سے پہلے نام رجسٹرڈ کرنے کی اپیل

عالمی یومِ کینسر کی مناسبت سے 5 فروری کو بھٹکل میں  کینسر کے متعلق عوام میں بیداری پیدا کرنے کے مقصد سے  میراتھن 2023 کا انعقاد کیا جارہا ہے جس کے لئے عوام الناس سے درخواست کی گئی ہے کہ اس میراتھن میں شریک ہوں۔