ہریانہ حکومت کا بڑا فیصلہ:11 سال بعداب آٹھویں جماعت کے طلبا دیں گے بورڈ کا امتحان

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 6th August 2020, 9:24 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،06 /اگست (آئی این ایس انڈیا) ہریانہ بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن (ایچ بی ایس ای) نے ایک بڑا اعلان کیا ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ وہ 11 سال کے طویل عرصے کے بعد 2021 میں 8 ویں جماعت کے طلبا کے لئے بورڈ کے امتحانات کا انعقاد کریں گے۔

بورڈ نے موجودہ تعلیمی سیشن 2020-21 میں ہونے والے آٹھویں کلاس کے لئے  بورڈ کے امتحانات کی تیاریوں کا آغاز کردیا ہے۔ ہریانہ بورڈ کے صدر ڈاکٹر جگبیر سنگھ اور سکریٹری راجیو پرساد نے کہا کہ حکومت ہریانہ کی ہدایت کے مطابق ہریانہ آر ٹی ای قوانین 2011 میں ترمیم کئے گئے ہیں اور پوری ریاست میں 8ویں کلاس کے طلباء کے لئے بورڈ کے امتحانات منعقد کئے جائیں گے۔ آخری بار ہریانہ بورڈ نے 8ویں کلاس کے بورڈ امتحان 2010 میں منقعد کیا تھا، جس میں 367247 طلباء شامل ہوئے تھے اور 344698 طلباء امتحان میں کامیاب ہوئے تھے۔

اس وقت سے اب تک ہریانہ بورڈ صرف دسویں اور بارہویں جماعت کے طلباء کے لئے ریگولر اور اوپن اسکولوں کے لئے بورڈ کے امتحانات منعقد کررہا ہے۔ اس سال کورونا وائرس کی وبا کی وجہ سے بورڈ کو مشکل حالات کا سامنا کرنا پڑا۔ ریاست میں بورڈ کے امتحانات کو بھی ملتوی کرنا پڑا۔اس سال 80.34فیصد طلبا نے ہریانہ بورڈ 12 ویں کلاس میں کامیابی حاصل کی ہے۔ وہیں لڑکیوں کی کارکردگی بھی اس سال لڑکوں سے بہتر رہی ہے۔ اس بار بارہویں بورڈ کے امتحانات میں لڑکیوں کی پاس ہونے کی شرح 86.30 فیصد رہی۔ جبکہ لڑکیوں کے مقابلہ میں 75.06 فیصد لڑکے امتحان میں کامیاب ہوئے ہیں۔اس بار دسویں کے امتحان میں 337691 طلباء نے حصہ لیا، جس میں 64.59فیصد لڑکے کامیاب ہوئے۔ اور 69،86فیصد لڑکیوں نے کامیابی حاصل کی۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی-نتیش قسم کسانوں کی کھاتے ہیں اور دوستی سرمایہ داروں سے نبھاتے ہیں: کانگریس

کانگریس جنرل سکریٹری اور پارٹی کے میڈیا سیل انچارج رندیپ سنگھ سرجے والا نے جمعرات کو پٹنہ میں زرعی بلوں کو لے کر مرکزی حکومت اور حکومت بہار کے خلاف محاذ کھولتے ہوئے کہا کہ مودی جی اور نتیش بابو قسم کسانوں کی کھاتے ہیں اور دوستی مٹھی بھر سرمایہ داروں سے نبھاتے ہیں۔