موربی پل حادثہ: گجرات ہائی کورٹ نے کارپوریشن افسر کو ٹھہرایا ذمہ دار، معاوضہ کی رقم کو بھی بتایا ناکافی

Source: S.O. News Service | Published on 24th November 2022, 9:13 PM | ملکی خبریں |

احمد آباد،24؍نومبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) گجرات ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اروند کمار نے 30 اکتوبر کو 135 سے زیادہ لوگوں کی جان لینے والے موربی پل حادثہ پر آج سماعت کرتے ہوئے موربی میونسپل کارپوریشن کے افسر ایس وی جالا کو پل گرنے کے لیے ذمہ دار ٹھہرایا۔ ساتھ ہی عدالت نے حادثے کے مہلوکین کے کنبہ کو دی گئی معاوضہ کی رقم پر بھی عدم اطمینان کا اظہار کیا۔

ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اروند کمار اور جسٹس اے جے شاستری کی بنچ نے آج کی سماعت کے دوران بے حد تلخ تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ موربی نگر پالیکا کے چیف افسر ایس وی جالا پہلی نظر میں لاپرواہی کے قصوروار ہیں اور یہاں تک کہ نگر پالیکا کے ذریعہ داخل حلف نامہ میں بھی تفصیل کی کمی ہے۔

ہائی کورٹ نے ریاست میں اسی طرح کے سبھی پلوں پر ایک تفصیلی رپورٹ مانگی اور 10 دنوں کے اندر پیش کرنے کو کہا۔ قابل ذکر ہے کہ عدالت نے اس معاملے میں از خود مفاد عامہ عرضی شروع کی۔ سماعت کے دوران عدالت نے کہا کہ ’’مہلوکین کے کنبوں کو دی گئی معاوضہ رقم سے ہم مطمئن نہیں ہیں۔ ایک کنبہ کو کم از کم 10 لاکھ روپے کا معاوضہ ملنا چاہیے۔‘‘

ساتھ ہی ہائی کورٹ نے حادثے کے کچھ مہلوکین کے نام کے سامنے ذات کا تذکرہ دیکھ کر ناراضگی ظاہر کی۔ عدالت کی پوچھ تاچھ پر سالیسٹر جنرل نے جواب دیا کہ اگر کوئی دیگر منصوبہ یا پروگرام ہے، جس کے تحت کنبہ فائدہ پانے کا حقدار ہے، تو یہ پہچاننے میں مدد کرتا ہے۔ بہر حال، چیف جسٹس نے معاملے میں متعلقہ سرکاری فائلیں اور ذیلی عدالت کے سامنے ایس آئی ٹی کی رپورٹ کب پیش کی گئی، اس کی تفصیل بھی طلب کی ہے۔

گجرات ہائی کورٹ کا کہنا ہے کہ یہ مناسب وقت ہے کہ ریاست بھر میں ایسے پلوں کی نگرانی، مینجمنٹ اور کنٹرول کرنے والے سبھی افسران کو یہ یقینی کرنا چاہیے کہ ان کے حلقہ اختیار میں پل اچھی حالت میں ہیں اور اگر نہیں تو اس کی بہتری کے لیے کارروائی کی جانی چاہیے۔ معاملے کو اب 12 دسمبر کو آئندہ سماعت کے لیے رکھا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی حکومت نے کھاد کے لیے بھی کسانوں کو کیا پریشان: کمل ناتھ

مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلی کمل ناتھ نے ایک بار پھر بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت پر کسان مخالف ہونے کا الزام لگاتے ہوئے آج کہا کہ حکومت نے کھاد کے لیے کسانوں کو بہت زیادہ پریشان کیا ہے۔ اپنے سلسلہ وار ٹوئٹس میں سابق وزیر اعلی کمل ناتھ نے کہا کہ مدھیہ پردیش کے کسانوں کو کیمیائی ...

قومی راجدھانی دہلی کی فضا ’انتہائی خراب‘، 321 اے کیو آئی درج

 قومی راجدھانی کی ہوا کا معیار منگل کی صبح 'انتہائی خراب' زمرے میں رہا اور کوالٹی انڈیکس 321 ریکارڈ کیا گیا۔ سسٹم آف ایئر کوالٹی اینڈ ویدر فورکاسٹنگ اینڈ ریسرچ (سفر) کے مطابق منگل کی صبح شہر کا مجموعی ایئر کوالٹی انڈیکس (اے کیو آئی) انتہائی خراب زمرے میں 321 پر ریکارڈ کیا گیا۔ ماحول ...

مہاراشٹر-کرناٹک سرحد تنازعہ میں شدت، بیلگاوی میں مہاراشٹر کے ٹرکوں پر پتھراؤ، حالات کشیدہ

کرناٹک اور مہاراشٹر کے درمیان جاری سرحد تنازعہ نے بیلگاوی علاقہ میں حالات کو کشیدہ کر دیا ہے۔ سرحدی علاقہ بیلگاوی میں تشدد کے واقعات پیش آ رہے ہیں اور منگل کے روز تو بیلگاوی کے باگیواڑی میں شدید احتجاجی مظاہرہ دیکھنے کو ملا۔ اس دوران کرناٹک رکشن ویدیکے سے جڑے کارکنان نے ...

دسمبر 7 سے شروع ہونے والے سرمائی اجلاس سے قبل ہی اپوزیشن پارٹیوں نے مرکز کے سامنے رکھے اہم مطالبات؛ کل جماعتی میٹنگ میں اہم باتوں پر ہوا تبادلہ خیال

بدھ یعنی 7 دسمبر سے  شروع ہوکر 29 دسمبر کو ختم ہونے والے پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس سے پہلے  ہی  مرکزی حکومت نے کل جماعتی میٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا جو منگل کو  منعقد ہوا۔