حکومت اعتماد بحالی کے لیے کام کرے: مایاوتی

Source: S.O. News Service | Published on 13th July 2020, 10:56 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،13؍جولائی(ایس او نیوز؍یو این آئی) بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی قومی صدر مایاوتی نے اتوار کو کہا کہ وکاس ڈوبے کے واقعہ کی آڑ میں اتر پردیش حکومت کو سیاست نہیں کرنی چاہیے اور اعتماد بحالی کی سمت میں بڑھنا چاہیے۔

 

محترمہ مایاوتی نے ایک سلسلے وار ٹویٹ میں کہا کہ اتر پردیش حکومت کو اب وکاس دوبے واقعہ کی آڑ میں بلکہ عوامی اعتماد بحالی کے لیے بی وثوق حقائق کی بنیاد پر کارروائی کرنی چاہیئے۔  انہوں نے کہا کہ حکومت کو ایسا کوئی کام نہیں کرنا چاہیئے جس سے برہمن سماج کو خوف، دہشت اور عدم تحفظ کا احساس ہو۔

انہوں نے کہا ، "بی ایس پی کا خیال ہے کہ کسی غلط شخص کے جرم کی سزا کے طور پر اس کے پورے معاشرے کو اذیت نہیں دی جانی چاہئے اور اسے کٹہرے میں نہیں کھڑا کرنا چاہئے"۔
محترمہ مایاوتی نے کہا کہ کانپور پولیس قتل کی واردات کے مجرم خونخواروکاس دوبے اور اس کے حواریوں کے جرم کے بارے میں اس کے سماج میں جو خوف اور دہشت کی باتیں زوروں پر ہیں اسے دور کیا جانا چاہئے۔

انہوں نے کہا کہ اسی طرح اترپردیش میں مجرم عناصر کے خلاف مہم چلانے کی آڑ میں چن چن کر دلت، پسماندہ اور مسلم معاشرے کے افراد کو نشانہ بنانا،یہ بھیبہت کچھ سیاست سے متاثر لگتا ہے جبکہ ان تمام معاملات میں مجموعی طور پر حکومت منصفانہ اور ایماندار ہونا چاہئے تبھی ریاست جرائم سے پاک ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

”دہلی کا فساد بدلے کی کارروائی تھی۔ پولیس نے ہمیں کھلی چھوٹ دے رکھی تھی“۔فسادات میں شامل ایک ہندوتوا وادی نوجوان کے تاثرات

دہلی فسادات کے بعد پولیس کی طرف سے ایک طرف صرف مسلمانوں کے خلاف کارروائی جاری ہے۔ سی اے اے مخالف احتجاج میں شامل مسلم نوجوانوں اور مسلم قیادت کے اہم ستونوں پر قانون کا شکنجہ کسا جارہا ہے، جس پر خود عدالت کی جانب سے منفی تبصرہ بھی سامنے آ چکا ہے۔

کورونا کے خلاف لڑائی میں بہار حکومت سب سے پیچھے: یشونت سنہا

سابق مرکزی وزیر خزانہ یشونت سنہا نے کورونا وبا کے خلاف لڑائی میں حکومت بہار کو پھسڈی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ مناسب وقت ملنے کے باوجود بھی حکومت اس سنگین صورت حال میں لوگوں کے لئے معقول انتظام کرنے میں ناکام رہی ہے۔

مدھیہ پردیش: کورونا سے کل 886 افراد ہلاک، 921 نئے معاملے

مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کووڈ۔19 کے انفیکشن میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے اور 921 نئے معاملے سامنے آنے کے بعد ان کی مجموعی تعداد بڑھ کر 33535 ہوگئی ہے۔ ان میں سے 23550 صحتیاب ہوچکے ہیں۔ سرگرم معاملوں کی تعداد 9099 ہے۔

ملک کے وزیرداخلہ کے بعد اب کرناٹک کے وزیراعلیٰ کی کورونا رپورٹ بھی نکلی پوزیٹیو؛ کرناٹک میں آج بھی کورونا کے معاملات پانچ ہزار سے زائد

کرناٹک کے وزیراعلیٰ بی ایس یڈی یورپا نے ٹویٹ کرتے ہوئے خبر دی ہے کہ اُن کی کوویڈ۔19 رپورٹ آج اتوار کو  پوزیٹیو پائی گئی ہے۔ رات قریب 11:30 بجے ٹویٹ کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ ویسے تو وہ بالکل ٹھیک ٹھاک ہیں لیکن ڈاکٹروں کی ہدایت پر   احتیاطاً   اسپتال میں  ایڈمٹ ہوگئے ہیں۔