بریکنگ نیوز

سری لنکا سے فرار گوٹبایا راج پکشے سنگاپور سے تھائی لینڈ روانہ، ملی 90 دنوں کی مشروط پناہ

Source: S.O. News Service | Published on 11th August 2022, 11:00 PM | عالمی خبریں |

کولمبو، 11؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) سری لنکا کے معزول صدر گوٹبایا راج پکشے جمعرات کو اپنا قلیل مدتی سفری پاس ختم ہونے کے بعد سنگاپور سے تھائی لینڈ روانہ ہو گئے۔ ایک میڈیا رپورٹ کے حوالے سے یہ خبر ملی ہے کہ راج پکشے سنگاپور سے بینکاک کے لیے ایک طیارہ میں سوار ہوئے۔ تھائی لینڈ نے ایک دن پہلے ہی اس بات کی تصدیق کر دی تھی کہ اسے گوٹبایا کے سفر کے لیے موجودہ سری لنکا حکومت سے گزارش ملی تھی۔ ’دی اسٹریٹس ٹائمز‘ اخبار کی رپورٹ کے مطابق میڈیا کے سوالوں کے جواب میں سنگاپور امیگریشن اینڈ چیک پوائنٹس اتھارٹی نے کہا کہ راج پکشے نے جمعرات کو سنگاپور چھوڑ دیا۔

واضح رہے کہ تھائی لینڈ کے وزیر اعظم پریوت چان-او-چا نے بدھ کے روز 73 سالہ سری لنکائی لیڈر کی اخلاقی اسباب سے تھائی لینڈ کے ایک عارضی سفر کی تصدیق کی۔ ساتھ ہی کہا کہ راج پکشے نے مستقل پناہ کے لیے اپنی تلاش کے دوران ریاست میں سیاسی سرگرمیاں نہیں چلانے کا وعدہ کیا تھا۔ حکومت مخالف مظاہروں کے درمیان جولائی میں راج پکشے سری لنکا سے فرار ہو کر سنگاپور پہنچے تھے۔ جمعرات کو ان کا سنگاپور کا ویزا ختم ہونے کے سبب وہ تھائی لینڈ میں پناہ لے رہے ہیں۔

13 جولائی کو مالدیپ کے لیے پرواز بھرنے کے بعد راج پکشے یہاں سے سنگاپور فرار ہو گئے تھے۔ یہاں سے انھوں نے اپنے استعفیٰ کا اعلان کیا۔ بینکاک پوسٹ اخبار نے پریوت کے حوالے سے کہا کہ یہ ایک اخلاقی معاملہ ہے۔ ہم نے وعدہ کیا ہے کہ یہ ایک عارضی رہائش ہے۔ کسی طرح کی (سیاسی) سرگرمیوں کی اجازت نہیں ہوگی اور اس سے انھیں پناہ لینے کے لیے ایک ملک تلاش کرنے میں مدد ملے گی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وزیر خارجہ ڈان پرمدونیئی نے کہا کہ معزول صدر تھائی لینڈ میں 90 دنوں تک رہ سکتے ہیں، کیونکہ وہ اب بھی ایک سفارتی پاسپورٹ ہولڈر ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

دنیا بھر میں بڑھتی مسلم دشمنی نسل پرستی،عدم برداشت دیکھ رہے ہیں: اقوام متحدہ

کوپن ہیگن کی ایک مسجد کے قریب اسلام مخالف شخص کی جانب سے ڈنمارک میں ترک سفارت خانے کے سامنے مسلمانوں کی مقدس کتاب جلانے کے چند گھنٹے بعد اقوام متحدہ نے خبردار کیا کہ انٹرنیٹ نے نفرت انگیز تقریر کو بھڑکایا جس سے مجرموں کو اپنا جھوٹ، سازشیں اور دھمکیاں پھیلانے میں مدد ملی۔

قرآن کو جلانے کے خلاف مظاہروں میں شدت

سویڈن اور ہالینڈ میں انتہائی دائیں بازو کے کارکنوں کی طرف سے حالیہ دنوں میں اسلام کی مقدس کتاب کو نذر آتش کرنے کی مذمت کیلئے جمعہ کو کئی مسلم اکثریتی ممالک میں احتجاجی مظاہرے کیے گئے-

دنیا بھر میں ہورہی ہے چھٹنی،سروے سے کھلا راز، ہر 4 میں سے 1 ہندوستانی کو ملازمت سے برطرفی کا خدشہ

دنیا بھر کی بڑی ٹیک کمپنیوں میں  ملازمین کو نوکریوں سے برطرف کیا جارہا ہے۔ اور ذرائع کی مانیں تو  ہر 4 میں سے 1 ہندوستانی ملازمت کے خاتمے  کو لے کر پریشان ہے۔ دوسری طرف 4 میں سے 3 ہندوستانی بڑھتی ہوئی مہنگائی سے پریشان ہیں۔

افغانستان میں ریکارڈ سردی ، اب تک 157 افراد ہلاک

افغانستان میں اس وقت شدید سردی پڑ رہی ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق سردی نے گزشتہ 15 سال کا ریکارڈ توڑ دیا ہے اور درجہ حرارت گر کر مائنس 34 ڈگری سلسیس تک پہنچ گیا ہے۔ سردی کی اس شدت نے گزشتہ ایک ہفتہ میں لوگوں کو بری طرح حراساں کیا ہے اور سردی کی وجہ سے اموات کی تعداد میں بھی زبردست ...

قرآن کی بے حرمتی کیخلاف عالمِ اسلام میں شدید احتجاج، ترکی ، عراق ، ایران ، لیبیا ، سعودی عرب، یو اے ای اور دیگر اسلامی ممالک میں عوام سڑکوں پر نکل آئے

اسلام کی  مخالفت میں  زہر اگلنے والے  ڈینش سیاست داں راسموس پالودان کے ذریعہ اسٹاک ہوم میں ترک سفارت خانے کے سامنے  قرآن مقدس کا نسخہ نذر آتش کرنے کے خلاف پاکستان، ایران اور ترکی سمیت کئی اسلامی ملکوں میں احتجاجی مظاہرے ہورہے ہیں۔