جرمنی میں کرونا کے دو مریضوں کو ابدی نیند سلانے والے ڈاکٹر سے پوچھ تاچھ

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 21st November 2020, 8:42 PM | عالمی خبریں |

برلن، 21/نومبر (آئی این ایس انڈیا)جرمنی کی پولیس نے اعلان کیا ہے کہ اس نے ایک ڈاکٹر سے کرونا کے دو مریضوں کو موت کے گھاٹ اتارے جانے کے واقعے کی تحقیقات شروع کی ہیں۔ یہ واقعہ مغربی شہر ایسن میں ایک سینیر ڈاکٹر کے ہاتھوں انتہائی نگہداشت وارڈ میں داخل کرونا کے مریضوں جن کی عمریں 47 اور 50 سال بیان کی جاتی ہیں، کو قتل کردیا تھا۔

جمعہ کے روز سٹی پولیس نے بتایا کہ 44 سالہ ڈاکٹر گذشتہ فروری سے ایسن یونیورسٹی ہسپتال میں کام کر رہا ہے۔ اس پر شبہ ہے کہ وہ 47 اور 50 سال کے دو مریضوں کو ہلاک کرنے میں ملوث ہے۔ بیماری کی وجہ سے ان کی حالت خراب ہونے کے بعد انہیں انتہائی نگہداشت وارڈ میں منتقل کیا گیا تھا۔ ڈاکٹر نے انہیں شدید بیماری کی تکلیف سے 'نجات'دلانے کے لیے انہیں موت کی ابدی نیند سلا دیا تھا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ڈاکٹر کو بدھ کے روز گرفتار کیا گیا ہے۔ دوران تفتیش اس نے دو مریضوں کے قتل میں سے ایک کا اعتراف کیا اور کہا کہ وہ مریض اور اس کے اہل خانہ کو مزید تکلیف سے نجات دلانا چاہتے ہیں۔

جرمنی کے روزنامہ "بلڈ" نے بتایا ہے کہ ڈاکٹر نے دو مریضوں کے اہل خانہ کو انجیکشن کے ذریعے ہلاک کرنے سے پہلے انہیں آگاہ کیا تھا۔

جرمنی میں گذشتہ سال جاری کیے گئے عدالتی فیصلے کے مطابق وہ مریض جن کی صحت کی حالت انتہائی حد تک بگڑجائے وہ اپنی زندگی کو ختم کرنے میں مدد کی درخواست دے سکتے ہیں۔ تاہم ، یہ واضح نہیں ہے کہ آیا ڈاکٹر نے اس تناظر میں ضروری قانونی اور احتیاطی تدابیر اختیار کی ہیں یا نہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

آرمینیا میں حکومت مخالف مظاہرے، وزیر خزانہ مستعفی

آرمینیا کے وزیر خزانہ ٹیگران خیچٹریان نے نیگورنو-کاراباخ میں جنگ بندی معاہدے کیخلاف مظاہروں کے باعث اپنی وزارت سے استعفیٰ دے دیا۔الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق آرمینیا کے وزیر کے ترجمان اینا اوہانیان کا کہنا تھا کہ انہوں نے نیگورنو۔کاراباخ میں جنگ بندی معاہدے کیخلاف ہونے والی ...

افغانستان: بامیان میں بم دھماکوں سے متعدد ہلاک

افغانستان کے بامیان میں ہونے والے دو بم دھماکوں میں ایک درجن سے زائد افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔ یہ حملے ایسے وقت ہوئے جب عالمی برادری نے جنگ زدہ ملک میں حالات کی بحالی کے لیے اربوں ڈالر کی امداد کا وعدہ کیا ہے۔

شا م میں جبل مانع میں اسرائیل کے تازہ فضائی حملے

شامی ذرائع ابلاغ کے مطابق اسرائیلی جنگی طیاروں نے منگل اور بدھ کی درمیانی شب جنوبی علاقے قنطیرہ میں فضائی حملے کیے ہیں۔شام کی نیوز ایجنسی ’سانا‘ نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی فوج کی فوج نے شام میں قنیطرا کے جنوب میں جبل المانع پر فضائی حملے کیے۔