ڈیزل سے بھری ٹینکر انکولہ میں اُلٹ گئی؛ ڈرائیورشدید زخمی

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 10th June 2020, 11:18 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 10/ جون (ایس او نیوز)  ڈیزل سے بھری ایک ٹینکر انکولہ تعلقہ کے ہوسور نیشنل ہائی وے 66 پر اُلٹ گئی جس کے نتیجے میں ٹینکر سے ڈیزل رسنا شروع ہوگیا۔ واردات بدھ کی شام  کو پیش آیا۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  ٹینکر مینگلور سے  انکولہ کی طرف جارہی تھی، ہوسور ہائی وے پر ڈرائیور کے ہاتھوں بے قابو ہوکر ڈیوائیڈر سے ٹکراتے ہوئے اُلٹ گئی۔ حادثے میں ٹینکر ڈرائیور شدید زخمی ہوا ہے اور اسے انکولہ سرکاری اسپتال میں ایڈمٹ کیا گیا ہے۔ جبکہ ٹینکر سے ڈیزل رسنے کی وجہ سے  پولس نے جائےوقوع پر پہنچنے کے بعد فائر بریگیڈ کی مدد لی اور ضروری اقدامات کرتے ہوئے  ڈیزل کے رساو کو فوری قابو میں کرلیا۔

انکولہ پولس تھانہ میں معاملہ درج کیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اننت کمار ہیگڈے نے لگایابی ایس این ایل میں دیش دروہی افسران موجود ہونے کا الزام

اپنے متنازعہ بیانات کے لئے پہچانے جانے والے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے الزام لگایا کہ بھارت سنچار نگم لمیٹڈ کے اندر دیش دروہی افسران بیٹھے ہوئے جس کی وجہ سے اس کے کام کاج میں کوئی ترقی نہیں ہورہی ہے۔ اس لئے آئندہ دنوں میں اس کی نج کاری (پرائیویٹائزیشن) کیا جائے گا۔

ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا بھٹکل دورہ؛ 23.72کروڑ روپے کے ترقیاتی منصوبوں کو دکھائی ہری جھنڈی

پیر کو رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے بھٹکل کا دورہ کرتے ہوئے  بھٹکل تعلقہ میں ’پردھان منتری گرام سڑک یوجنا‘کے تحت 23.72کروڑ روپے لاگت کے مختلف ترقیاتی منصوبوں کو ہری جھنڈی دکھائی۔ وہ یہاں ماروتی نگر میں بی جے پی تعلقہ آفس کا افتتاح کرنے کے بعد خطاب کررہے تھے۔

مینگلور کے قریب سولیا میں ہائی ٹینشن الیکٹرک کیبل کی زد میں آکر بائک کے ساتھ بائک سوا ر بھی جل کرخاکستر

ضلع دکشن کنڑا کے  سولیا میں کلّیری نامی علاقے میں آج منگل صبح 5.30بجے پیش آئے  ایک انتہائی دردناک حادثہ میں دو لوگ موقع پر ہی جل کر ہلاک ہوگئے جن میں ایک  شناخت  اُمیش (45) کی حیثیت سے کی گئی ہے، جبکہ  بائک کی پچھلی سیٹ پر سوار اس کے  ساتھی کا  نام معلوم نہ ہوسکا۔

کاروار:ایس ایس ایل سی امتحان کے نتائج۔ سرسی کی سنّدھی ہیگڈے نے پایا ریاست میں پہلا رینک

امسال ریاست میں ایس ایس ایل سی کے جو امتحانات ہوئے تھے اس کا سامنا طلبہ نے کووڈ وباء کے پس منظر میں ذہنی تناؤ کے ساتھ کیا تھا۔اس کے بعد کافی دنوں سے طلبہ بڑی بے چینی کے ساتھ اپنے نتائج کا انتظار کررہے تھے۔