مسجد الحرام میں 210 دنوں کے بعد نماز جمعہ کی ادائیگی

Source: S.O. News Service | Published on 24th October 2020, 8:51 PM | خلیجی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ریاض،24؍اکتوبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) کورونا وائرس کی عالمی وبا کی وجہ سے المسجد الحرام میں 210 دنوں بعد پہلی نماز جمعہ ادا کی گئی۔ جنرل پریزیڈنسی برائے انتطامی امور الحرمین الشریفین نے جمعہ کو علی الصبح مسجد حرام کے 11 دروازے نمازیوں کے استقبال کی خاطر کھول دیئے تاکہ فرزندان توحید عالمی وبا کے جلو میں پہلی نماز جمعہ ادا کر سکیں۔

اس موقع پر سخت احتیاطی تدابیر اختیار کی گئیں۔ مسجد حرام میں خطبہ جمعہ ایک ہی وقت میں اردو سمیت دنیا کی پانچ زبانوں میں نشر کیا گیا۔ اس مقصد کے لیے جنرل پریزیڈنسی کے ڈیجیٹل پلیٹ فارمز اور ریڈیوز کی پانچ مختلف فریکونسیز استعمال کی گئیں۔

جنرل پریزیڈنسی کی ایجنسی فار ٹیکنیکل سروسز کی عمومی انتظامیہ نے نمازیوں کے استقبال کی خاطر گیارہ دروازوں پر کم سے کم ایک سو افراد پر مشتمل نگران عملہ متعین کر رکھا تھا جو نمازیوں کی کرونا پروٹوکولز کی روشنی میں رہنمائی کا فریضہ سرانجام دے رہا تھا۔

مسجد حرام کے دروازوں کی انتظامیہ کے ڈائریکٹر فھد الجعید کے مطابق معتمرین: باب الملك فهد، أجياد، والصفا، والنبی، وبنی شيبة، والمروة، وسلم الأرقم، وجسر المروة، وعبارة النبی کے ذریعے مسجد حرام داخلے کے مجاز تھے جبکہ دوسرے نمازی باقی دروازوں کے ذریعے نماز جمعہ کی ادائیگی کے لیے مسجد حرام میں داخل ہوئے۔

جنرل پریزیڈنسی کی ایجنسی فار ٹیکنیکل سروسز کی عمومی انتظامیہ نے مسجد حرام میں آب زم زم کی فراہمی کو یقینی بنانے کے خصوصی انتظامات کر رکھے تھے۔ نمازیوں اور زائرین کو آب زم زم پیش کرنے کے لیے اضافی تعداد میں عملہ تعینات کیا گیا۔ یہ عملہ پہلے سے طے شدہ احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے خدمات سرانجام دے رہا تھا۔

سقیا زمزم پراجیکٹ کے ڈائریکٹر احمد الندوی نے بتایا نماز جمعہ کے دوران مسجد حرام کے مختلف حصوں میں 27500 زمزم کی بوتلیں تقسیم کی گئیں۔ احمد الندوی نے بتایا کہ نماز جمعہ کی ادائیگی کے موقع پر 55 ملازمین نگرانی کے فرائض سرانجام دے رہے تھے جبکہ ان کے زیر کمان کم سے کم 350 ورکرز نے خدمات سرانجام دیں۔ زمزم کی تقسیم کے موقع پر بھی پہلے سے وضع کردہ احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کیا گیا تاکہ نمازی کرونا وائرس سے محفوظ فضا میں نماز ادا کر سکیں۔

ایک نظر اس پر بھی

جدہ حملے میں حوثیوں کا ملوث ہونا ثابت ہو گیا ہے: ترکی المالکی

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کی افواج کے سرکاری ترجمان بریگیڈیر جنرل ترکی المالکی کے مطابق یہ بات ثابت ہو چکی ہے کہ جدہ میں ایندھن اسٹیشن پر بزدلانہ دہشت گرد حملے میں ایران نواز دہشت گرد حوثی ملیشیا ملوث ہے۔

’خفیہ ملاقات‘ کے لیے تاریخ میں پہلی مرتبہ اسرائیلی وزیر اعظم اور موساد کے سربراہ سعودی سرزمین پر

اسرائیلی ذرائع ابلاغ اور نیوز ایجنسیوں نے رپورٹ کیا ہے کہ اتوار کو سعودی عرب میں اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کی ایک خفیہ ملاقات ہوئی۔

کرناٹک میں گردابی طوفان ”نیوار“سے متعلق ریڈ الرٹ

گردابی طوفان ”نیوار“کے بدھ کے روز تمل ناڈو اور پڈوچیری سے گزرنے کے پیش کرناٹک میں ریڈ الرٹ جاری کیا گیا ہے۔وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا نے آج یہاں میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ متعلقہ عہدیداروں کو کسی بھی صورتحال کے لئے تیار رہنے کو کہا گیا ہے۔

بھٹکل سے ہوناور جانے کے دوران پیچھے سے لاری نے دی بائک کو ٹکر؛ باپ ہلاک، بیٹا شدید زخمی

بھٹکل تعلقہ کے شرالی  شاردا ہولے کے قریب بائک کو پیچھے سے ایک لاری کے ٹکر دینے کے نتیجے میں بائک پر سوار باپ موقع پر ہی ہلاک ہوگیا جبکہ اس کا بیٹا شدید زخمی ہوگیا ہے۔ حادثہ بدھ کی شام کو پیش آیا۔

جنوبی ہند میں طوفانِ’نیوار‘ کی دستک: طوفان آنے سے پہلے ہی 90فیصد بھر چکے ڈیم سے پانی چھوڑ دیاگیا

سمندری گردابی طوفان ”نیوار“ کے آج شام تامل ناڈو اور پانڈیچری کے ساحل پر ٹکرانے کی توقع کی گئی ہے، لیکن محکمہ موسمیات کے تازہ ترین بلیٹن کے مطابق طوفان نصف شب کو اور 26 نومبر کی صبح کے دوران کرائی کل، مہابلی پورم اور پانڈیچری کے پاس سے ٹکرائے گا۔

بھٹکل گُڈلک روڈ میں پائپ لائن بچھانے کے کاموں میں عوام کی طرف سے شکایات کے بعد بھٹکل میونسپل چیف نے واٹربورڈ کے آفسران کے ساتھ رکھی میٹنگ

بھٹکل کے کارگیدے اور گُڈلک روڈ میں  کل اتوار کو عوام الناس کی طرف سے انڈر گراونڈ ڈرینج (یو جی ڈی) کے پائپ لائن بچھانے اور چمبرس تعمیر کرنے کے دوران  کام کو غیر سائنٹیفک اور غیر معیاری قرار دینے کے بعد آج پیر کو بھٹکل میونسپل چیف پرویز قاسمجی نے کاروار سے  واٹر بورڈاور یوجی ڈی ...