دھوکہ بازی کو نہ کبھی بھولا جائے گا نہ معاف کیا جائے گا: التجا مفتی

Source: S.O. News Service | Published on 6th August 2020, 10:38 AM | ملکی خبریں |

سری نگر،6؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی)  پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی صاحبزادی التجا مفتی نے جموں وکشمیر کی خصوصی پوزیشن کے خاتمے کا ایک سال مکمل ہونے کے حوالے سے کہا ہے کہ اس دھوکہ بازی کو کبھی نہ بھولا جائے گا نہ معاف کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایک بڑی حکومت نے دن دھاڑے جموں وکشمیر کو مسخ کر کے لوٹ لیا ہے۔

موصوفہ نے اپنے ایک ٹوئٹ میں رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ 'ایک سال پہلے ہم نے دیکھا کہ کس طرح ایک بڑی حکومت نے جموں و کشمیر کو مسخ کیا اور اس کو دن دھاڑے لوٹ لیا۔ موسم بدل جائیں گے لیکن اس دھوکہ دہی کو نہ کبھی بھولا جائے گا نہ معاف کیا جائے گا۔ مسلط کردہ طویل خاموشی جذبات کو ہمیشہ کے لئے دبا کر نہیں رکھ سکتی ہے'۔

قبل ازیں انہوں نے اپنے ایک ٹوئٹ میں انتظامیہ کی طرف سے کرفیو ہٹانے کے باوصف کرفیو جیسی پابندیاں نافذ ہونے کے متعلق ایک ٹوئٹ میں کہا کہ 'انتظامیہ کی طرف سے گزشتہ شب کرفیو ہٹانے کا حکمنامہ محض ایک دھوکہ تھا۔ جب بات اجتماعی سزا کی آتی ہے تو جموں و کشمیر انتظامیہ اور پولیس بغیر کوئی کاغذی ثبوت چھوڑے غیر اعلانیہ طور پر کرفیو نافذ کر کے لوگوں کو بند رکھنے کو یقینی بناتے ہیں'۔

قابل ذکر ہے کہ جموں و کشمیر انتظامیہ نے پانچ اگست کا ایک سال مکمل ہونے پر ممکنہ عوامی احتجاجوں کی روک تھام کو یقینی بنانے کے لئے دو روزہ کرفیو کے نفاذ کا اعلان کیا تھا۔ وادی میں منگل کے روز کرفیو نافذ رہا تاہم حالات بہتر رہنے کے پیش نظر انتظامیہ نے کرفیو ہٹانے کا اعلان کیا تھا لیکن وادی میں بدھ کے روز بھی کرفیو سے بھی سخت پابندیاں عائد رہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اپوزیشن کے 8ممبران پارلیمنٹ کی معطلی مرکزی حکومت کا اختلاف رائے سے عدم راوداری کا نمونہ۔ ایس ڈی پی آئی

 سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی صدر ایم کے فیضی نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں زرعی بل منطور کئے جانے کی مخالفت کرنے پر اپوزیشن کے 8اراکین پارلیمنٹ کو ایک ہفتہ کیلئے پارلیمنٹ کے مانسون اجلاس میں شرکت سے معطل کرنے کے اقدام کو جمہوریت مخالف قرار دیتے ...

بینکنگ ریگولیشن بل پر پارلیمنٹ کی مہر

 کوآپریٹو بینکوں کی بحالی اور نگرانی کے لئے ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) کو زیادہ اختیارات دینے والے بینکنگ ریگولیشنز (ترمیمی) بل 2020 کو منگل کو راجیہ سبھا میں صوتی ووٹوں سے منظور کر لیا گیا۔