توہین رسالت معاملہ میں عرب دنیا متحد؛ مصنوعات بائیکاٹ مہم سے گھٹنے ٹیکنے پر مجبور ہوا فرانس 

Source: S.O. News Service | Published on 27th October 2020, 11:11 AM | خلیجی خبریں | عالمی خبریں |

دبئی،27؍اکتوبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) آزادی اظہار کے نام پر گستاخانہ کارٹون بنانے پر مصر رہنے والا فرانس پہلی بار عرب دنیا کی جانب سے چلائی گئی ’’فرانس کے مصنوعات کی بائیکاٹ مہم‘‘ کے سامنے گھٹنا ٹیک کر گڑ گڑاتے ہوئے نظر آرہا ہے۔ 

توہین رسالت کی حمایت کرنے والا فرانس پہلی بار مسلم ممالک کے اتحاد کے سامنے بے بس ہو کر ’’مہم‘‘ ختم کرنے کی بھیک مانگتے ہوئے کہہ رہا ہے کہ فرانس تمام مذاہب کا احترام کرتا ہے۔ شروعاتی دور میں اگر عرب ممالک متحدہ طور پر اس طرح کا ٹھسوس قدم اٹھالیتے تو فرانس بار بار گستاخی کرنے کی جرأت نہیں کر پاتا۔ بغیر کسی تشدد کے عرب دنیا کی جانب سے اٹھائے  گئے ان اقدامات کی چاروں طرف سے ستائش ہورہی ہے۔ 

واضح رہے کہ آزادی اظہار رائے کی آڑ میں اسلام مخالف منظم مہم کے خلاف عرب سمیت دیگر مسلم ممالک میں زبردست غم وغصہ پایا جارہا ہے۔ پوری دنیا میں پرامن احتجاجات کو بالائے طاق رکھتے ہوئے فرانس نے مسلسل توہین رسالت کا ارتکاب کر کے مسلمانوں اور انسانیت پسندوں کے جذبات کو مجروح کرنے کی نہ صرف مجرمانہ کوشش کی بلکہ دنیا کی پرامن فضا کو مکدر کرنے کی سازش رچی، جس کے جواب میں مسلم ممالک نے فرانسیسی مصنوعات کی بائیکاٹ کی مہم شروع کردی جس سے فرانس حواس باختہ ہوگیا اور اب اس نے مسلم ممالک سے اپیل کی ہے کہ وہ مصنوعات کی بائیکاٹ مہم ختم کردیں۔ 

واضح رہے کہ فرانس میں ’گستاخانہ خاکوں‘ کی اسکولی بچوں کے سامنے نمائش، نمائش کرنے والے استاد کے قتل اور پھر فرانسیسی صدر کی جانب سے اسے ہیرو قرار دئے جانے کے بعد پوری مسلم دنیا میں فرانس کے خلاف مظاہرے اور بائیکاٹ کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ اسی سلسلے کے تحت کویت کی 70 سے زائد کاروباری تنظیموں کے اتحاد نے فرانسیسی مصنوعات کے بائیکاٹ کا اعلان کر کے یوپی ملک نے فرانس کی مصنوعات کو ہٹانا شروع کردیا تھا۔ 

علاوہ ازیں سعودی عرب، ترکی، متحدہ، عرب امارات (یو اے ای)، پاکستان، ملائیشیا ، انڈونیشیا، مصر اور دیگر مسلم ممالک میں بھی فرانس کے خلاف سوشیل میڈیا پر ٹرینڈز بنے اور عوام نے فرانسیسی صدر پر بھی غم و غصے کا اظہار کیا۔ 

عرب ممالک میں اپنی مصنوعات کے بائیکاٹ شروع ہونے کے چند دن بعد ہی فرانسیسی حکومت کے ہوش ٹھکانے آگئے اور اس نے مشرق و سطیٰ کے ممالک سے بائیکاٹ ختم کرنے کی اپیل کردی۔ 

مذکورہ بائیکاٹ مہم میں اس وقت مزید شدت آگئی جب فرانسیسی صدر ایما نوئیل میکرون نے 23؍اکتوبر کو متنازع بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ فرانس ’گستاخانہ خاکوں‘ سے پیچھے نہیں ہٹے گا۔ فرانسیسی صدر نے مذکورہ شخص کی آخری رسومات میں شرکت کر کے اسے فرانس کا ہیرو بھی قرار دیا تھا، جس پر پوری دنیا میں فرانسیسی صدر کے خلاف احتجاج شروع ہوا۔ 

ایک طرف جہاں فرانسیسی حکومت نے مشرق وسطیٰ کے ممالک سے بائیکاٹ ختم کرنے کا مطالبہ کیا، وہیں دنیا بھر کے مسلم ممالک سمیت دیگر مسلم آبادی والے ممالک کے عوام کی جانب سے فرانسس کے خلاف سوشیل میڈیا پر مہم میں تیزی دیکھی گئی۔ دنیا بھر میں چلنے والی فرانس مخلاف سوشیل میڈیا مہم میں فرانسی صدر اور حکومت سے ’گستا خانہ خاکوں‘پر معافی مانگنے کا مطالبہ کیا جارہا ہے۔ 

کویت میں سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کویتی پرچون فروشوں نے فرانسیسی مصنوعات کا اجمتاعی بائیکاٹ کردیا ہے اور انہوں نے اپنی دکانوں اور سپر اسٹورز سے فرانیسی اشیاء ہٹادی ہیں۔ کویت کی غیر سرکاری صارفین کو آپریٹیو سو سائیٹز کی یونین نے جمعہ کو فرانسیسی اشیائ کے بائیکاٹ کے لئے ایک باضابطہ سرکیولر جاری کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

جدہ حملے میں حوثیوں کا ملوث ہونا ثابت ہو گیا ہے: ترکی المالکی

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کی افواج کے سرکاری ترجمان بریگیڈیر جنرل ترکی المالکی کے مطابق یہ بات ثابت ہو چکی ہے کہ جدہ میں ایندھن اسٹیشن پر بزدلانہ دہشت گرد حملے میں ایران نواز دہشت گرد حوثی ملیشیا ملوث ہے۔

’خفیہ ملاقات‘ کے لیے تاریخ میں پہلی مرتبہ اسرائیلی وزیر اعظم اور موساد کے سربراہ سعودی سرزمین پر

اسرائیلی ذرائع ابلاغ اور نیوز ایجنسیوں نے رپورٹ کیا ہے کہ اتوار کو سعودی عرب میں اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو، سعودی ولی عہد محمد بن سلمان اور امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کی ایک خفیہ ملاقات ہوئی۔

آرمینیا میں حکومت مخالف مظاہرے، وزیر خزانہ مستعفی

آرمینیا کے وزیر خزانہ ٹیگران خیچٹریان نے نیگورنو-کاراباخ میں جنگ بندی معاہدے کیخلاف مظاہروں کے باعث اپنی وزارت سے استعفیٰ دے دیا۔الجزیرہ کی رپورٹ کے مطابق آرمینیا کے وزیر کے ترجمان اینا اوہانیان کا کہنا تھا کہ انہوں نے نیگورنو۔کاراباخ میں جنگ بندی معاہدے کیخلاف ہونے والی ...

افغانستان: بامیان میں بم دھماکوں سے متعدد ہلاک

افغانستان کے بامیان میں ہونے والے دو بم دھماکوں میں ایک درجن سے زائد افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔ یہ حملے ایسے وقت ہوئے جب عالمی برادری نے جنگ زدہ ملک میں حالات کی بحالی کے لیے اربوں ڈالر کی امداد کا وعدہ کیا ہے۔

شا م میں جبل مانع میں اسرائیل کے تازہ فضائی حملے

شامی ذرائع ابلاغ کے مطابق اسرائیلی جنگی طیاروں نے منگل اور بدھ کی درمیانی شب جنوبی علاقے قنطیرہ میں فضائی حملے کیے ہیں۔شام کی نیوز ایجنسی ’سانا‘ نے اطلاع دی ہے کہ اسرائیلی فوج کی فوج نے شام میں قنیطرا کے جنوب میں جبل المانع پر فضائی حملے کیے۔