بھٹکل:طوفانی بارش کے درمیان بیچ سمندر میں بوٹ کا انجن بند؛ بری طرح پھنسے ماہی گیروں کو بچالیا گیا

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 21st September 2020, 1:05 AM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 20 ستمبر (ایس او نیوز)  بھٹکل میں آج صبح سے رات دیر گئے تک طوفانی ہواوں کے ساتھ بارش کا سلسلہ جاری ہے، ایسے میں آج اتوار صبح ماہی گیروں کی ایک بوٹ جو بحر عرب میں  بری طرح پھنس گئی تھی اور اُس پر سوار چار ماہی گیروں کے جان کے لالے پڑ گئے تھے، شام تک چاروں کو بچالئے جانے کی اطلاع ملی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ مہاراشٹرا سے تعلق رکھنے والے  چار ماہی گیر اتوار صبح قریب چھ بجے  بھٹکل کے مادیو تمپا موگیر کی ملکیت والی "دیوانوگرہ" نامی بوٹ پر مچھلیوں کے  شکار کے لئے نکلے تھے۔ یہ لوگ  دوپہر کو ماہی گیری کرکے واپس لوٹ رہے تھے کہ بیچ سمندر میں طوفانی بارش اور اونچی اُٹھتی لہروں کے درمیان بوٹ کا انجن  اچانک کام کرنا بند کردیا جس سے تمام ماہی گیر  سمندر کے بیچ میں ہی بری طرح پھنس گئے، فوری طور پر  ساحلی محافظ دستے سے مدد  طلب کی گئی، مگر اُن کے پہنچنے سے پہلے ہی مقامی ماہی گیر ابوبکر اپنی بوٹ پر ونود موگیر منڈلی، روہی داس موگیر مرڈیشور، کرشنا موگیر بیلنی اور منجوناتھ موگیر  کو ساتھ لے کر ان کی مدد کو پہنچ گئے، اور سمندر میں پھنسے چاروں ماہی گیروں کو اپنی بوٹ پر سوار کراتے ہوئے انہیں بحفاظت کنارے تک لانے میں کامیاب ہوگئے۔

جن چار ماہی گیروں کو بحفاظت ساحل تک لایا گیا، اُن کی شناخت  سچن بیرپّا، ہریش تانڈیل، جنانیش کرڈیکر اور  نارائن کی حیثیت سے کی گئی ہے۔ یہ لوگ صبح چھ بجے  شرالی الوے کوڈی بندر سے ماہی گیری کے لئے نکلے تھے، ان کو واپس کنارے تک لانے میں شام قریب 6:30 بج گئے تھے۔

 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: حنیف آباد میں کیبل بچھانے کے لئے کی جارہی کھدائی پر عوام ناراض؛ کام روک دیا گیا

تعلقہ کے حنیف آباد میں کیبل بچھانے کے لئے کی جارہی کھدائی کے کام کو روک  کر عوام نے سخت احتجاج کیا اورہیبلے پنچایت سمیت  اسسٹنٹ کمشنر  سے شکایت کرتے ہوئے کھودے گئی جگہ پر واپس مٹی ڈالی گئی ۔