کولکاتا کے ہوڑہ بریج کے قریب کیمیکل گودام میں شدید آگ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 8th June 2019, 3:12 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کولکتہ 8/جون (ایس او نیوز) مغربی بنگال کے دارالحکومت کولکتہ  میں ہاوڑہ بریج اور جگن ناتھ گھاٹ کے قریب کیمیکل گودام میں شدید آگ لگ گئی ، البتہ  آگ لگنے سے کسی  کو جانی نقصان ہونے کی اطلاعات نہیں ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ رات قریب دو بجے  گودام سے اونچی اونچی لپیٹیں نکلتی ہوئی دیکھی گئی جس کے بعد پورے  علاقے میں افرا تفری  کا ماحول پیدا ہوگیا۔ اطلاع ملنے کے بعد فائر بریگیڈ کے اہلکار موقع پر پہنچ گئے  اور آگ پر قابو پانے کی کوشش میں لگ گئے۔ فی الحال موقع پر آگ کے فائر بریگیڈ کی 25 گاڑیاں پہنچی تھیں اور چھ گھنٹوں سے مسلسل آگ پر قابو پانے کی کوشش جاری تھی۔

خبروں کے مطابق کیمیکل گودام میں  رات تقریباً 2 بجے آگ لگ گئی تھی، تبھی سے موقع پر بڑی تعداد میں آگ پر قابو والی گاڑیاں اور اہلکار آگ پر قابو پانے کی  کوششوں میں مصروف ہیں۔ ریاست کی  آگ اور ایمرجنسی سروس کے وزیر سجيت بوس اور فائر فائٹرز خدمات کے ڈائریکٹر جنرل بھی موقع پر موجود تھے۔ موقع پر فائر بریگیڈ محکمہ کے افسر دیب تنو بوس نے بتایا  کہ  ’’آگ سے کوئی بھی ہلاک نہیں ہوا ہے، موقع پر فائر بریگیڈ کی 25 گاڑیاں موجود ہیں جو آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہی ہیں۔ آگ میں شدت ہونے کی وجہ سے ہم عمارت کے اندر داخل نہیں ہو پا رہے ہیں"۔ انہوں نے مزید بتایا کہ آگ لگنے سے  بلڈنگ کا وسطی حصہ گر گیا ہے۔

ڈپٹی کمشنر ٹریفک کولکاتا نے بتایا کہ کیمیکل گودام میں آگ لگنے کی وجہ سے اسٹنڈر بینک روڈ کا ٹریفک دوسری طرف منتقل  کر دیا گیا ہے،  انہوں نے لوگوں سے اپیل کی  کہ وہ متبادل  راستے استعمال کریں۔

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان میں مندر کی تعمیر پر روک رجعت پسندانہ اقدام: التجا مفتی

 پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی صاحبزادی التجا مفتی نے پاکستان کے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک مندر کی تعمیر پر جاری تنازعے کے حوالے سے کہا ہے کہ مندر کی تعمیر پر روک ایک اسلامی فلاحی ریاست کے مذہبی آزادی کے تصور کے منافی ہے۔

خطرے میں اسپین، 95 فیصد آبادی ہو سکتی ہے کورونا کا شکار: تحقیق

کورونا وائرس یعنی کووڈ-19 کے حوالہ سے اسپین میں کی گئی اسٹڈی میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اسپین کی آبادی کا صرف 5فیصد ہی اینٹی باڈیز تیار کرسکا ہے، جس سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ کورونا سے بچاؤ کے لیے ’ہرڈ امیونٹی‘ حاصل نہیں کی جاسکتی۔

کاروار اسپتال سے 12 مزید لوگ ڈسچارج

بھلے ہی  ضلع اُترکنڑا میں کورونا پوزیٹیو کے معاملے ہر روز سامنے آرہے ہوں، لیکن کاروار اسپتال میں ایڈمٹ کورونا کے متاثرین  روبہ صحت ہوکر ڈسچارج ہونے کا سلسلہ بھی برابر جاری ہے۔