اترپردیش: بی جے پی کی خاتون لیڈر نے کورونا کو مارنے کے لیے چلائی گولی، ایف آئی آر درج

Source: S.O. News Service | Published on 6th April 2020, 11:46 PM | ملکی خبریں |

بلرامپور،6؍اپریل (ایس او نیوز؍ایجنسی) وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے اتوار کو رات 9 بجے 9 منٹ تک چراغاں کرنے کی اپیل کے دوران بعد اترپردیش کے ضلع بلرامپور میں 'دیا' جلانے کے بعد کورونا وائرس کو مارنے کے لئے ہوا میں فائرنگ کرنے والی بی جے پی کی سینئر خاتون لیڈر کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

پولیس نے پیر کو بتایا کہ بی جے پی مہیلا مورچہ کی ضلع صدر منجو تیواری نے اتوار کو اپنے گھر پر دیا جلانے کے بعد ہوا میں فائرنگ کی۔ بعد ازاں لیڈر نے خود ہی اپنا یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر اپلوڈ کردیا۔ منجو تیواری نے ہوا میں فائرنگ کے لئے اپنے شوہر پرکاش تیواری کی لائسنسی بندوق کا استعمال کیا ہے۔

پولیس نے بتایا کہ اس ضمن میں متعلقہ سیکشن کے تحت بی جے پی لیڈر کے خلاف کوتوالی پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر در ج کی گئی ہے۔ وہیں بی جے پی لیڈر نے اپنے کیے پر ندامت کا اظہار کرتے ہوئے معافی مانگی اور مستقبل میں ایسی غلطی دوبارہ نہ سرزد ہونے کا وعدہ کیا۔

یو پی کانگریس کے صدر اجے کمار للو نے اس واقعہ کے بارے میں ریاستی حکومت کی یہ کہتے ہوئے تنقید کی کہ "بی جے پی لیڈران اور کارکنان لاک ڈاؤن کی دھجیاں اڑانے میں سب سے پیش پیش ہیں۔ انہوں نے اس ضمن میں پارٹی لیڈروں کے خلاف یوگی آدتیہ ناتھ کی جانب سے کی گئی کارروائی کے بارے میں بھی جاننا چاہا۔

ایک نظر اس پر بھی

حاملہ ہاتھی کی موت تکلیف دہ، لیکن مینکا گاندھی کا بیان ناقابل قبول: رمیش چنیتھلا

کیرالا میں اپوزیشن رہنما رمیش چنیتھلا نے بی جے پی رکن پارلیمنٹ مینکا گاندھی پر کیرالا کے سائیلینٹ ویلی جنگل میں ایک حاملہ جنگلی  ہاتھی کی دردناک موت کے معاملے میں ایک مخصوص طبقے کے خلاف اشتعال انگیز بیان دینے اور مَلّاپورم ضلع کو جرائم کے گڑھ کے طور پر پیش کرنے کا الزام عائد ...

مودی حکومت تبلیغی جماعت معاملہ میں نہیں چاہتی سی بی آئی انکوائری، حلف نامہ داخل

مرکزی حکومت نے دارالحکومت دہلی کے نظام الدین تبلیغی مرکز میں جماعتیوں کے اجتماع کی مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کے ذریعہ جانچ کی ضرورت سے انکار کیا ہے۔ دریں اثنا، عدالت نے معاملے کی سماعت جمعہ کے روز دو ہفتوں کے لئے ملتوی کردی۔