ایف ایس ایس اے آئی ڈرافٹ پیکیجنگ ریگولیشن کو 3 ماہ میں حتمی شکل دے: این جی ٹی

Source: S.O. News Service | Published on 13th January 2021, 11:16 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 13 جنوری (آئی این ایس انڈیا) نیشنل گرین ٹریبونل نے فوڈ سیفٹی اینڈ اسٹینڈرز اتھارٹی آف انڈیا (ایف ایس ایس اے آئی) کو ہدایت دی ہے کہ وہ تین ماہ کے اندر فوڈ سیفٹی اینڈ اسٹینڈرز (پیکیجنگ) ترمیم ضابطے کے مسودہ کو حتمی شکل دے۔

این جی ٹی کے چیئرمین جسٹس آدرش کمار گوئل کی سربراہی میں بنچ نے کہا کہ متعلقہ حکام کو کاربونیٹیڈ سافٹ ڈرنکس، شراب اور دیگر اشیاء کے لئے پلاسٹک کی بوتلیں اور ملٹی لیئر پلاسٹک کے پیکٹوں کے مزید استعمال پر غور کرنا چاہئے۔

بنچ نے کہاکہ ایف ایس ایس اے آئی کو مسودہ ریگولیشن کو تین ماہ کے اندر حتمی شکل دینا چاہئے تاکہ اس پر عمل درآمد کیا جاسکے اور نگرانی کا ایک موثر طریقہ کار موجود ہو۔ نیشنل گرین ٹریبونل (این جی ٹی) غیر سرکاری تنظیم ہیم جاگریتی اترانچل ویلفیئر سوسائٹی کی درخواست پر سی بی آئی سماعت کررہی تھی جس میں پلاسٹک کی بوتلوں اور مختلف پرت کے پلاسٹک کنٹینروں کی بوتلوں کے استعمال پر پابندی عائد کرنے کی مانگ کی گئی ہے۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ پولتھین ٹیرافائلیٹ (پی ای ٹی) کی بوتلیں اور ملٹی لیئر کین، جیسے ٹیٹرا پیک صحت اور ماحول کو بری طرح متاثر کرتے ہیں اور پلاسٹک کے کچرے میں بھی اضافہ کرتے ہیں۔ ڈائریکٹوریٹ جنرل ہیلتھ سروسز نے این جی ٹی کو بتایا کہ وزارت صحت نے ایک مسودہ شائع کیا ہے جس میں بچوں، حاملہ خواتین اور تولیدی عمر کی خواتین کے لئے استعمال ہونے والی دوائیوں پر مشتمل پالی تھین ٹیرافالٹ یا پلاسٹک کے استعمال پر پابندی ہے۔ پلاسٹک کی بوتلوں اور دوائیوں کی پیکیجنگ کے معیار کے بارے میں تمام بوتلوں اور کنٹینرز کو ’فارماکوپیا‘ اور دیگر معیارات کی تعمیل کرنا ہوگی۔

ٹریبونل نے کہا ہے کہ ’فارماکوپیا‘ میں ترمیم کے پیش نظرکسی حد تک پلاسٹک کی پیکیجنگ کے مضر اثرات پر قابو پایا گیا ہے۔ اس لئے کوئی حکم جاری نہیں کیا جاتا ہے، تاہم اس میں کہا گیا ہے کہ شہریوں کی صحت کی حفاظت کے لئے وزارت صحت میں مناسب سطح پر ضوابط کی تعمیل کی نگرانی کو یقینی بنانا ضروری ہے۔ فارماکوپیا کمیشن آف انڈیا (آئی پی سی) وزارت صحت اور خاندانی بہبود کے ماتحت ایک خودمختار ادارہ ہے جو ملک میں ادویات سے متعلق معیارات طے کرنے کی ذمہ دار ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں یوم جمہوریہ کے موقع پر کسانوں کی ٹریکٹر ریلی کے دوران ہنگامہ ؛ پولس لاٹھی چارج، آنسو گیس کے گولے بھی داغے گئے؛ کسانوں نے پولس کی بیریکیڈ توڑ کر داخل ہوگئے دہلی

  کسان تنظیموں کی ٹریکٹر ریلی کے دوران  دہلی میں کئی مقامات پر کسانوں اور پولس کے درمیان جھڑپوں کی خبریں موصول ہوئی ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق  کسانوں نے پولیس بس کو آئی ٹی او پر ہائی جیک کرلیا ہے ، جبکہ ایک کرین بھی چھین لی گئی ہے۔ میڈیا میں آئی خبروں کے مطابق  آئی ٹی او پر ...

بھاجپائیوں کیلئے مشکلیں کھڑی :بھاجپا کے ’جے شری رام‘ کے جواب میں ترنمول کا ’ہرے کرشنا ہرے رام ‘ کا نعرہ

23 جنوری کو سبھاش چندر بوس کی یاد میں منعقدہ تقریب کے دوران جب مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بنرجی کو اسٹیج پر خطاب کے لئے مدعو کیاگیا ،تو سامعین کی طرف سے ،جن کی اکثریت بھاجپانواز کی تھی، نے ’جے شری رام‘ کا نعرہ لگاکر خطاب میں مخل ہونے کی کوشش کی ۔

مہاراشٹر: آزاد میدان میں کسانوں کی یلغار

مرکزی حکومت کے زرعی قوانین کے خلاف دہلی میں دوماہ سے جاری کسانوں کا احتجاج تاریخ رقم کر رہا ہے- ان قوانین کے خلاف پنجاب و ہریانہ کے کسانوں کے سڑکوں پر اترنے کے بعد سخت سردی میں مودی حکومت نے ان کسانوں پر پانیوں کی بوچھارماری مگر کسان پیچھے نہیں ہٹے-

توپھربابری مسجدکی شہادت کاعدالت میں فخرکے ساتھ اعتراف کیوں نہیں کیا؟ پرکاش جاوڈیکرکے بیان پراویسی کی تنقید، سپریم کورٹ کہہ چکاہے،مندرتوڑنے کاثبوت نہیں

آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے سربراہ اسدالدین اویسی نے مرکزی وزیر پرکاش جاوڈیکر کے بابری مسجدکی شہادت کیس کے بارے میں دیئے گئے تبصرہ کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

حکومت کسانوں کے مفادات کے تحفظ کیلئےپورے طور سے وقف: صدر رام ناتھ

صدر رام ناتھ کووند نے زرعی شعبہ میں ترقی کے لئے کسانوں، ملک کی سرحدوں کی سلامتی یقینی  بنانے میں کامیاب رہے جوانوں اور کووڈ سے  نمٹنے اور ترقی  کے مختلف شعبوں میں خدمات کے لئے سائنسدانوں کومبارک باد دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کسانوں سمیت تمام طبقوں کی فلاح وبہبود کے لئے پوری  ...