کنداپور: کووڈ سے ہلاک ہونے والے مریض کی لاش بدل گئی۔ منی پال اسپتال کی بد نظمی کے خلاف مقامی لوگوں نے کیا احتجاجی مظاہرا

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 23rd August 2020, 7:55 PM | ساحلی خبریں |

کنداپور23/اگست (ایس او نیوز) کورونا کی بیماری، اس کی تشخیص اور اس کے علاج سے متعلق ایک طرف عوام کے اندر شکوک و شبہات اور الجھنیں پائی جاتی ہیں تو دوسری طرف کسی نہ کسی علاقے سے لاشوں کے تبدیل ہونے، جسم کے اندر سے اعضاء نکالے جانے، جانچ رپورٹ کے بدل جانے جیسی خبریں آجاتی ہیں جس سے کورونا سے متعلق لوگوں کی غلط فہمیاں اور پیچیدگیاں مزید بڑھ جاتی ہیں۔

 ایسا ہی تازہ واقعہ کنداپور میں سامنے  آیاہے جہاں منی پال کے اسپتال میں کووڈ سے ہلاک ہونے والے شخص کی لاش کے بجائے اس کے رشتے داروں کو آخری رسومات اداکرنے کے لئے کسی اور کی لاش دے دی گئی تھی، جس کا پتہ چتا پرلاش کو لٹانے سے ذرا پہلے چل گیا۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق   منی پال اسپتال میں کنداپور کے کوٹیشور علاقے کے رہنے والے ایک کووڈ مریض کی موت واقع ہوگئی۔ جب آخری رسومات کے لئے ایمبولینس کے ذریعے اسپتال سے اس کی لاش شمشان میں لائی گئی تووہ پوری طرح ڈھکی ہوئی تھی۔ مگر چتا پر لٹانے سے ذرا پہلے گھر والوں نے آخری دیدارکرنے کے لئے چہرا کھلوایا تو  لوگ یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ یہ ان کے 65 سالہ رشتے دار کی لاش نہیں، بلکہ کسی نوجوان کی لاش ہے۔ گھر والوں کے علاوہ وہاں پر موجود دیگر افرادنے  ایمبولینس ڈرائیور کو آڑے ہاتھوں لیا تو مقامی افراد نے شمشان کے پاس جمع ہوکر احتجاجی مظاہرا کیا۔

 لاش بدلنے سے پیدا ہونے والے ہنگامے کی خبر ملنے پر پولیس افسران نے موقع پر پہنچ کر لوگوں کو سمجھانے بجھانے کی کوشش کی۔اس کے بعددوپہر کے وقت اسپتال سے اصل شخص کی لاش شمشان منگوانے کے بعد اس کی آخری رسومات انجام دی گئیں اور پہلے لائی گئی لاش کو واپس منی پال اسپتال میں بھیج دیا گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

اڈپی میں نابالغ ہندو لڑکی کامبینہ اغواء۔ سنگھیوں نے کیا احتجاجی مظاہرہ۔ لگایا ’لوجہاد‘ کا الزام

تین دن پہلے ایک ہندونابالغ لڑکی کا اغواء مسلم نوجوان کی طرف سے کیے جانے کا الزام لگاتے ہوئےہیری اڈکا پولیس اسٹیشن کےسامنے بشمول بی جے پی دیگر ہندونواز سنگھی تنظیموں نے احتجاجی مظاہرا کیا اور اے ایس پی کے توسط سے سپرنٹنڈنٹ آ ف پولیس کےنام میمورنڈم پیش کیا۔

بھٹکل میں 3نومبرکو ہوگی اتی کرم داروں کی خصوصی میٹنگ

حالیہ دنوں میں بھٹکل تعلقہ کےمختلف علاقوں میں محکمہ جنگلات کے افسران اور عملےکی طرف سے اتی کرم داروں کو جو اذیت دی جارہی ہے اس کا جائزہ لینے کے لئے ایک خصوصی میٹنگ  3نومبر کو بھٹکل کے ستکار ہوٹل صبح 10بجے منعقد ہوگی۔

بھٹکل میں محکمہ جنگلات کے دفتر کے باہر اتی کرم داروں نے کیا احتجاجی مظاہرہ

بھٹکل تعلقہ کے جالی پنچایت، ہیبلے پنچایت اور دوسرے علاقوں میں کل محکمہ جنگلات کےافسران اور عملے نے اتی کرم  جگہوں پر تعمیرات روکنے اور قبضہ خالی کروانے کی جو مہم چلائی تھی اس کے خلاف بھٹکل محکمہ جنگلات کے دفتر کےسامنے اتی کرم داروں نے احتجاجی مظاہرہ کیا۔