اترکنڑا ضلع میں مزید بارش کے امکانات کے پیش نظر ریڈ الرٹ جاری :بھٹکل میں ریکارڈ 140ملی میٹر بارش

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 22nd July 2019, 8:43 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:22؍جولائی  (ایس اؤ نیوز) ضلع کے ساحلی  پٹی کے مقامات پر رات دن  مسلسل برستی بارش کے نتیجےمیں عوامی زندگی بہت بری طرح متاثر ہوئی۔ پیر کی صبح سے شروع ہوئی بارش شام تک لگاتار برستی رہی ۔ ان حالات میں محکمہ موسمیات کی طرف سے ’ریڈ الرٹ ‘ جاری کرتے ہوئے  علاقہ میں مزید بارش برسنے کا امکان بتایا ہے۔ محکمہ موسمیات سے جاری کردہ جانکاری کے مطابق مغربی علاقے سے فی گھنٹہ 40سے 50کلومیٹر کی رفتار سے ہوا چلنےکا اندیشہ ہے ماہی گیروں سے کہاگیا ہےکہ وہ مچھلی شکار کے لئے سمندر میں نہ اتریں۔ اترکنڑا ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے بتایا کہ زائد بارش ہونے پرمنگل کے دن  اسکولوں اور کالجوں کو چھٹی دینے کے تعلق سے متعلقہ مقامات کے بی ای اؤ یا تحصیلدار مشترکہ طورپر فیصلہ لیں گے۔

اتوار کی رات سے پیر کا پورا دن بارش ہونے سے ضلع کے کئی مقامات کے نشیبی علاقے زیر آب ہوگئے ہیں، کئی سڑکیں اکھڑ گئی ہیں، نقل و حمل کے لئے کافی دشواری پیش آرہی ہے۔ ہوناور کے کرکی کراس پررات 5بجے  بڑا درخت سڑک پر گر جانے سے صبح 7بجے تک ٹرافک نظام معطل رہا۔ گلیوں ، محلوں میں پانی جہاں تہاں بھر جانے سے تالاب نما نظر آرہے تھے۔ بجلی کے کھمبے گر گئے ہیں۔ اندرونی نالیوں کا پانی سڑکوں پر بہتا دیکھا گیا۔

بھٹکل تعلقہ میں کچھ ایسی ہی صورت حال رہی ۔ اتوار کی صبح 8بجے سے پیر کی صبح 8بجے سے کرناٹکا میں سب سے زیادہ بارش بھٹکل میں 140ملی میٹر (14سنٹی میٹر) ریکارڈ کی گئی ہے۔ شہر کے مخدوم کالونی علاقے میں ایک گھر کےکمپاؤنڈ کی دیوار گرنے سے نقصان ہونے کی اطلاع موصول ہوئی ہے۔ حسب معمول شمس الدین سرکل، رنگین کٹا سمیت شاہراہ پر پانی بھر جانے سے سواریوں کو گزرنے میں مشکلات کا سامنا رہا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔