یورپی رہنما 750 ارب یورو کے کرونا اقتصادی بحالی پیکج پر متفق

Source: S.O. News Service | Published on 21st July 2020, 5:14 PM | عالمی خبریں |

لندن، 21/جولائی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) یورپی یونین کے رکن ملکوں نے کرونا وائرس کے سبب متاثر ہونے والی معیشت کی بحالی کے لیے 750 ارب یورو کے امدادی پیکج پر اتفاق کر لیا ہے۔

بیلجیم کے دارالحکومت برسلز میں جاری چار روزہ مذاکرات کے بعد یورپی یونین کے رہنماؤں نے منگل کو اقتصادی پیکج پر اتفاق کیا۔

اقتصادی بحالی کے معاہدے کے تحت 390 ارب یورو کرونا وائرس سے متاثرہ ملکوں کو امداد کی مد میں دیے جائیں گے جب کہ 360 ارب یورو قرض کی شکل میں تقسیم ہوں گے۔

یورپین کمیشن متاثرہ ملکوں میں رقم کی تقسیم کا ذمہ دار ہو گا جب کہ متاثرہ ملکوں میں اس رقم کے استعمال پر تحفظات کی صورت میں یونین کے 27 ملک اکثریتی بنیاد پر مداخلت کر سکیں گے۔

یورپی یونین کے ممبر ممالک کے رہنماؤں کی جانب سے منظور کردہ پیکج پر مزید تیکنیکی بات چیت کے لیے اس پیکج کی یورپی پارلیمنٹ سے بھی منظوری درکار ہے۔ جمعرات کو یورپین پارلیمنٹ کے اجلاس میں اس پیکج کی توثیق کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

اقتصادی پیکج کا ایک بڑا حصہ یورپ کے اُن ملکوں پر خرچ ہو گا جن کی معیشت کرونا وائرس سے شدید متاثر ہوئی ہے۔ ان ملکوں میں اسپین اور اٹلی نمایاں ہیں جنہوں نے پیکج پر یونین کے دیگر ملکوں کی حمایت حاصل کرنے کے لیے بھرپور لابنگ کی تھی۔

اسپین میں اب تک کرونا کے ڈھائی لاکھ سے زیادہ اور اٹلی میں بھی لگ بھگ ڈھائی لاکھ کیسز رپورٹ ہو چکے ہیں۔ اسی طرح جرمنی میں دو لاکھ اور فرانس میں ڈیڑھ لاکھ سے زیادہ کیسز سامنے آ چکے ہیں۔

سوئیڈن، بیلجیم، یوکرائن، نیدرلینڈز، پرتگال، پولینڈ اور دیگر یورپی ملکوں میں کرونا کیسز کی تعداد ایک لاکھ کے اندر اندر ہے اور بیشتر ملکوں میں کاروباری سرگرمیاں بحال ہیں۔

کرونا سے متاثرہ یورپی ملکوں کے لیے اقتصادی پیکج پر مذاکرات کے دوران کئی رہنما اپنے اپنے مؤقف پر ڈٹے ہوئے تھے اور کسی نتیجے پر نہ پہنچنے کے باعث مذاکرات چار دن اور چار راتوں تک جاری رہے۔

ستائیس ملکوں پر مشتمل یورپی یونین کے مذاکرات کے دوران نیدرلینڈز نے کئی مواقع پر اجلاس سے واک آؤٹ کی بھی دھمکی دی۔ تاہم جرمنی اور فرانس نے دیگر ملکوں کو معاہدے پر متفق کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

بحرین کی اسرائیل سے ڈیل،علاقائی سلامتی کو تقویت ملے گی: شیخ سلمان کی نیتن یاہو سے گفتگو

بحرین کے ولی عہد شیخ سلمان بن حمد آل خلیفہ نے اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو سے ٹیلی فون پر بات چیت کی ہے۔انھوں نے عالمی سلامتی اور امن کو مضبوط بنانے اور امن ، استحکام اور خوش حالی کے فروغ کے لیے مسلسل کوششیں جاری رکھنے کی ضرورت پر زوردیا ہے۔

ایردوآن نے یو این میں اٹھایا مسئلہ کشمیر، ’اندرونی معاملات میں دخل نہ دے ترکی‘ انڈیا کی تاکید

 جموں و کشمیر کے حوالہ سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوآن کے بیان پر اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ ٹی ایس ترومورتی نے سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کو دوسرے ممالک کی خودمختاری کا احترام کرنا سیکھنا چاہئے۔