18 جون کو ہونے والے سکینڈ پی یو انگریزی امتحان کو لے کر بھٹکل کالجس میں تیاریاں جاری؛ مکمل سہولیات فراہم کرنے ڈپٹی کمشنر کے احکامات؛ کوئی اسٹوڈینٹ امتحان دئے بغیر واپس نہ جانے پائے

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 16th June 2020, 2:59 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 16/ جون (ایس او نیوز)   کرناٹک میں سکینڈ پی یو سی کا امتحان چلنے کےدوران اچانک کورونا وباء  کو لے کر  ہوئے لاک ڈاون سے  انگریزی کا ایک پرچہ باقی رہ گیا تھا جو 18 جون کو ہونے جارہا ہے، امتحان کو منعقد کرنے کے تعلق سے ہر ممکن احتیاطی اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں، کورونا وائرس  پر قابو پانے   ضروری  حفاظتی انتظامات کئے جارہے ہیں اور تمام طلبا کو  تاکید کی گئی ہے کہ وہ ماسک پہن کر ہی امتحان گاہ میں داخل ہوں، ہر امتحان گاہ کے باہر تھرمل اسکیننگ  کا انتظام کیا گیا ہے اور امتحانی مراکز کو حکم دیا گیا ہے کہ وہ ایک ہال/بلاک  میں 12 طلبا سے زیادہ  کو نہیں بٹھائیں۔

18 جون کو ہونے والے آخری انگریزی سکینڈ پی یو سی پرچے کے لئے ریاستی حکومت نے پہلے ہی اس بات کا اعلان کیا تھا کہ  لاک ڈاون ہونے کی وجہ سے جو طلبا  اپنے امتحان سینٹر میں حاضر نہیں ہوسکتے اور دوسرے اضلاع میں واقع اپنے گھروں میں پہنچ چکے ہیں  تو انہیں واپس  اُسی امتحان سینٹر میں جانے کی ضرورت نہیں ہے بلکہ اپنے علاقہ کے ہی امتحان سینٹر میں وہ انگریزی پرچہ دے سکتا ہے ، ایسے میں بہت ساروں نے اپلیکشن دے کر اپنے امتحانی مراکز کو تبدیل کردیا ہے اور  اپنے اپنے علاقہ میں ہی واقع امتحانی سینٹر میں امتحان  دینے   نئی ہال ٹکٹ  حاصل کرلی ہے۔

بھٹکل میں جملہ چار امتحانی مراکز ہیں جبکہ ضلع اُترکنڑا میں سکینڈ پی یو سی کے لئے  30 امتحانی مراکز قائم کئے گئے ہیں جہاں جملہ 13568 اسٹوڈینٹس امتحان میں شریک ہوں گے۔ ان طلبا میں 577 اسٹوڈینٹس ایسے ہیں جو دوسرے اضلاع سے  اپنا سینٹر تبدیل کراتے ہوئے  ضلع اُترکنڑا کے امتحانی مراکز  میں امتحان دیں گے۔ اسی طرح نو لوگ دوسری ریاست کے بھی ہیں جو اپنا اخری انگریزی پرچہ کرناٹک کے اُترکنڑا میں دیں گے۔

سکینڈ پی یو سی امتحان کو لے کر کاروار میں  منعقدہ میٹنگ میں ضلع کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے تمام تعلیمی آفسران کو ہدایت دی ہے کہ وہ  طلبا کو امتحانات میں شریک ہونے ہرممکن سہولیات فراہم کریں، انہوں نے اس بات کی تاکید کی بھی ہے کہ کوئی بھی طالب علم امتحان دئے بغیر واپس نہ جاسکے، اگر کوئی مسئلہ پیش آئے تو ضلعی انتظامیہ  کے علم میں لاتے ہوئے  اُسے امتحان  میں بٹھائے۔ انہوں نے اس بات کی بھی تاکید کی کہ ضلع میں موسلادھار بارش جاری ہے، بارش کے چلتے الیکٹری سٹی بھی فیل ہونے کے امکانات ہیں، ایسے میں ہرممکن متبادل انتظام کیا جائے، بارش کی وجہ سے کوئی بھی طالب علم امتحان گاہ پہنچنے سے  محروم نہ ہونے پائے۔

دیگر امتحانی مراکز کی طرح بھٹکل انجمن کالج میں  بھی امتحان کو لے کر تمام تیاریاں جاری ہیں، آج منگل کو امتحان گاہ میں سینی ٹائزرس  کیا گیا ہے، بینچوں اور ڈیسکوں کو ترتیب سے رکھنے کے علاوہ اُن پر ہال ٹکٹ کے نمبرس وغیرہ  درج کئے گئے ہیں۔

تمام اسٹوڈینٹس سے کہا گیا ہے کہ وہ  ایک گھنٹہ پہلے امتحان گاہ پہنچے کیونکہ ہر طالب علم  کی  تھرمل اسکیننگ ہوگی، اس کے بعد ہی امتحان گاہ میں بیٹھنے کی اجازت ہوگی، اسی طرح  ہر اسٹوڈینٹس سے یہ بھی    کہا گیا ہے کہ وہ  فیس ماسک اور ہینڈ سینی ٹائزر اپنے ساتھ لے جائیں۔ جو دوسرے اضلاع کی کالج کے اسٹودینٹس ہیں، اُن سے کہا گیا ہے کہ وہ  اپنا امتحانی مرکز تبدیل  ہونے پر نئی ہال ٹکٹ  ویب سائٹ http://www.pue.kar.nic.in  سے ڈاون لوڈ کرکے اپنے ساتھ لے جائیں  ساتھ ساتھ اپنی کالج  کا شناختی کارڈ بھی اپنے ساتھ رکھیں۔

یاد رہے کہ سکینڈ پی یو کا انگریزی پرچہ 18 جون کو صبح 10:15 بجے شروع ہوگا اور ڈیڑھ بجے تک چلے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل ’گونڈا قبیلے ‘ کی ذات سرٹفکیٹ جاری کرنے پر تنازعہ۔ اسسٹنٹ کمشنرکے دفتر میں میٹنگ

بھٹکل تعلقہ میں بسنے والے ’گونڈا قبیلے ‘ سے متعلقہ افراد کو ’درج فہرست قبیلہ‘ کی سرٹفکیٹ جاری کرنے میں رکاوٹ  اور  ’گرام وکلیگا‘ طبقے سے تعلق رکھنے والے افرادغیر  مجاز طریقے سے اس قسم کے سرٹفکیٹ حاصل کرنے کا تنازعہ حل کرنے کے لئے اسسٹنٹ کمشنر کے دفتر میں ایک میٹنگ منعقد کی ...

28ستمبر کو کرناٹکا بند کے پس منظر میں ایس ایس ایل سی سپلمنٹری امتحان کیا گیا ملتوی

کرناٹکا ہائی اسکول اکزامنیشن بورڈ کی طرف سے جاری کیے گئے اعلامیہ کے مطابق ایس ایس ایل سی کا جو سپلمنٹری امتحان  28ستمبر کو منعقد ہونے والا تھا اسے کسانوں کے احتجاجی بند کے پیش نظر ملتوی کردیا گیا ہے۔

ساحلی کرناٹکا سمیت 10اضلاع میں جاری ہوا ’ایلو الرٹ‘۔محکمہ موسمیات نے کی بھاری برسات کی پیشین  گوئی

محکمہ موسمیات نے ساحلی کرناٹکا  اور شمالی کرناٹکا کے اندرونی علاقوں میں سنیچر اور اتوار کو بادلوں کی گرج اور بجلیوں  کی کڑک کے ساتھ بھاری برسات ہونے کی پیشین گوئی کی ہے۔ اور شمالی کینرا ،جنوبی کینرا اور اڈپی  کے علاوہ یادگیر، وجیاپورا، رائچور، گدگ، کلبرگی، دھارواڑ تمام دس ...

ہوناور میں شراوتی کونسل کے سکریٹری کے نئے ریڈی میڈ شوروم فیشن پیلیس کا خوبصورت افتتاح

نارتھ کینرا مسلم یونائیٹیڈ فورم کے ہوناور سکریٹری،  گیرسوپا سے ہوناور تک جملہ مسلم جماعتوں پر مشتمل  شراوتی کونسل کے سکریٹری اور  اتحاد کمیٹیسڑلگی  کے صدر سمیت سرگرم سماجی کارکن   جناب مظفر یوسف  کے نئے ریڈی میڈ شوروم فیشن پیلیس کا   ہوناور  مستی کٹے، بازار روڈ  پر ...