ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ کا فائنل بے حد دلچسپ؛ ٹائی ہونے کے بعد سوپر اوور میں بھی اسکور برابر؛ باونڈریس زائد ہونے پر انگلینڈ پہلی مرتبہ بنا ورلڈ چیمپئن

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 14th July 2019, 11:45 PM | عالمی خبریں | اسپورٹس | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

دبئی 14/جولائی (ایس او نیوز) لندن کے لارڈس میدان میں منعقد ورلڈ کپ 2019 کرکٹ ٹورنامنٹ کا فائنل میچ ڈرامائی انداز میں ٹائی ہونے کے بعد  انگلینڈ  نے سوپر اوور کے بعد نیوزی لینڈ کو سنسنی خیز مقابلے   میں شکست دے دی اور پہلی بار عالمی کپ جیتنے میں کامیاب ہوگئی۔ فائنل مقابلہ اتنا دلچسپ اور کانٹے کا رہا کہ  پہلے  دونوں ٹیموں نے 241 بنانے پر میچ ٹائی ہوگیا تو سوپر اوور میں بھی دونوں ٹیموں نے  15 رن بناکر شائقین کرکٹ کو  زبردست تفریح بخشی۔ مگر زائد باونڈریس لگانے کی  بنیاد پر  انگلینڈ کو   عالمی کپ کرکٹ کا چمپن قرار دیا گیا۔

ورلڈ کپ کی تاریخ میں پہلی بار ایسا کانٹے کی ٹکر والا  اور  سنسنی خیز فائنل میچ دیکھنے کو ملا جس میں  دونوں ٹیموں کا پرفارمینس نہایت شاندار تھا۔

آج کی جیت کے ساتھ ہی انگلینڈ نے پہلی بار ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ جیتنے کا  شرف حاصل کیا  حالانکہ انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم  اس سے پہلے تین مرتبہ فائنل تک رسائی حاصل کرنے میں کامیاب ہوئی تھی  لیکن ہر بار فائنل میں شکست سے دوچار ہوجاتی تھی، مگر   چوتھی مرتبہ انگلینڈ ٹیم  فائنل جیتنے میں   بالاخر  کامیاب ہوگئی۔ نیوزی لینڈٹیم اس بار دوسری مرتبہ فائنل  تک رسائی حاصل کرنے میں کامیاب ہوئی تھی  مگر اس بار نیوزی لینڈ کو سنسنی خیز مقابلے میں انگلینڈ کے ہاتھوں شکست  سے دو چار ہونا پڑا۔

اتوار کو کھیلے گئے فائنل مقابلے میں  ٹاس جیت کر نیوزی لینڈ نےپہلے بلے بازی کی، مگر وہ مقررہ پچاس اووروں میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر  241 رن ہی بناسکے جو کہ انگلینڈ کے سامنے   کافی کم اسکور لگ رہا تھا۔مگر حیرت انگیز طور پر نیوزی لینڈ کے باولروں نے بھی  خطرناک گیند بازی کرتےہوئے انگلینڈ کو بھی  241 رنوں پر ہی ڈھیر کردیا اس طرح میچ ٹائی ہوگیا۔

نیوزی لینڈ کی طرف سے  اوپنر مارٹن گپٹل کے  19رن بناکر آوٹ ہونے کے بعد  نکولس نے 55 رن ، کپتان کین ولیمس نے 30 اور لاتھم نے 47 رن بنائے۔ مقررہ نشانے کو پانے کے لئے اُتری میزبان انگلینڈ ٹیم کی شروعات بھی اچھی نہیں رہی، 28 رن پر ہی نیوزی لینڈ نے انہیں پہلا جھٹکا دیا جب جیسن رائے 17 رن بناکر ہی پویلین لوٹ گئے، جوروٹ بھی  نیوزی لینڈ کے باولروں کا سامنے  نہیں کرسکے اور وہ بھی 7 رن بناکر آوٹ ہوگئے، مگر بعد میں جانی بیرسٹو نے اچھی اننگز کھیلی  مگر وہ بھی 36 سے زیادہ رن نہیں بناسکے۔ کپتان ایون مورگن  جب نو رن بناکر آوٹ ہوئے تو  ایسا لگا کہ  انگلینڈ پھر ایک بار فائنل میچ  سے ہاتھ دھو بیٹھے گا، لیکن بین اسٹاکس اور جوس ٹیلر نے اچھی بلے بازی کرتے ہوئے ٹیم کو مشکلات سے باہر نکالا اور 110 رنوں کی پارٹنرشپ نبھائی۔ جوس بٹلر نے 59 رن بنائے۔

انگلینڈ کو آخری اوور میں جیت کے لئے 16 رنوں کی ضرورت تھی،   کریز پر انگلینڈ کا جارحانہ بلے بازی کرنے والا  اسٹاکس موجود  تھا، اس نے ابتدائی دو گیندوں پر  سنگل رن لے کر کسی طرح کا کوئی رسک لینا پسند نہیں کیا ، اس طرح  دو گیندیں ضائع ہوگئیں،  مگر تیسری گیند پر  اسٹاکس نے چھکا جُڑ دیا۔  چوتھی گیند پر جب اسٹاکس نے دوسرا رن لینے کی کوشش کی تو نیوزی لینڈ کے  کھلاڑی نے اُسے رن آوٹ کرنے کی کوشش کی، جس پر گیند  اسٹاکس کو ہی لگ کر باونڈری لائن کے باہر چلی گئی  اس طرح اس گیند پر انگلینڈکو چھ رن ملے جو نیوزی لینڈ کے لئے بے حد مہنگے ثابت ہوئے۔ پانچویں گیند پر اسٹاکس نے پھر دو رن لینے کی کوشش کی مگر اس کوشش میں عادل رشید رن آوٹ ہوگئے مگر گیند باز کے سامنے پھر ایک بار اسٹاکس ہی  آگئے ، آخری گیند پر جیت کے لئے دو رنوں کی ضرورت تھی  اور اسٹاکس  گیند کھیلتے ہی دو رنوں کے لئے دوڑ پڑے، ایک رن مکمل ہونے کےبعد دوسرا رن لینے کی کوشش میں  مارک ووڈ بھی رن آوٹ ہوگئے، اس طرح آخری اوور میں پندرہ رن ہی بن سکے اور میچ سنسنی خیز طور پر ٹائی ہوگیا۔

 سوپر اوور میں انگلینڈ کی طرف سے اسٹاکس پھر میدان میں آگئے جبکہ ان کاساتھ دینے جوس بٹلر سامنے تھے۔ نیوزی لینڈ کی طرف سے ٹرینڈ باولٹ نے گیند بازی کی ذمہ داری لی۔ پہلی گیند پر اسٹاکس نے تین رن بنائے، دوسری گیند پر بٹلر نے ایک رن بنایا۔ تیسری گیند پر اسٹاکس نے  چوکا لگایا، چوتھی گیند پر اسٹاکس نے ایک رن لیا، پانچویں گیند پر بٹلر نے دو رن لئے اور آخری گیند پر  بٹلر نے چوکا لگاتے ہوئے نیوزی لینڈ کے سامنے جیت کے لئے 16 رنوں کا ٹارگٹ دیا۔ 

نیوزی لینڈ کی طرف سے سوپر اوور کھیلنے کی ذمہ داری مارٹن گپٹل اور جیمس نیشم نے لی اور باولنگ کی ذمہ داری انگلینڈ نے جوفرا آرچر کی دی۔ جوفرا نے پہلی گیند وہائٹ پھینکی ، اگلی گیند یعنی پہلی  گیند پر نیشم نے دو رن لئے،  اس طرح وہائٹ رن کے ساتھ اسکور ایک گیند پر تین ہوگیا۔ دوسری گیند پر نیشم نے چھکا جُڑ دیا، تیسری گیند پر نیشم نے دو رن لئے، چوتھی گیند پر بھی نیشم نے دو رن حاصل کئے۔ پانچویں گیند  پر نیشم نے ایک رن لیا اب آخری گیند پر جیت کے لئے نیوزی لینڈ کو دو رنوں کی ضرورت تھی، اس موقع پر مارٹن گیپٹل   نے شارٹ کھیلا، ایک رن لینے کے بعد دوسرا رن لینے کی کوشش کی مگر اسی کوشش میں وہ رن آوٹ ہوگئے  اور  اس طرح نیوزی لینڈ ٹیم  بھی سوپر اوور میں  15 رن  ہی بناسکی، اور میچ ٹائی ہوگیا۔ لیکن چونکہ  سوپر اوور میں  انگلینڈ نے دو باونڈریاں لگائی تھی جبکہ نیوزی لینڈ کے حصے میں  صرف ایک باونڈی  تھی ، اسی طرح نیوزی لینڈ کے  50  اووروں کی اننگز میں بھی  17 باونڈریس کے مقابلے میں وہاں بھی 26 باونڈریاں لگاکر انگلینڈ  آگے تھی، اسے دیکھتے ہوئے  انگلینڈ کو  فاتح قرار دیا گیا۔

خیال رہے کہ  انگلینڈ جہاں سے کرکٹ کی شروعات ہوئی تھی، آج پہلی بار ورلڈ کپ جیتنے میں کامیاب ہوئی ہے۔ حالانکہ  انگلینڈ  اس سے قبل تین مرتبہ   فائنل میں پہنچ کر شکست سے دوچار ہوچکی  ہے۔ 

انگلینڈکے بین اسٹاکس کو مین آف دی میچ اور نیوزی لینڈ کے  کین ولیمسن کو مین آف دی سیریز کے اعزاز سے نوازا گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

ملائشیا:ذاکر نائک نے متنازع بیان پر معافی مانگ لی

ملائشیا میں، متنازع اسلامی مبلغ ذاکر نائک پرعوامی طور پرتقریر کرنے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ پولیس کے محکمہ مواصلات کے چیف اور سینئر اسسٹنٹ کمانڈر، داتوک اسماوتی احمد نے کہا، ہاں“ تمام پولیس دستوں کو ایسے احکامات دیئے گئے ہیں اور قومی سلامتی کے لئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔ اس ...

دیپا ملک کو کھیل رتن اور رویندر جڈیجہ سمیت 19 کو ارجن ایوارڈ دینے کا اعلان

ریو پیرا اولمپکس کی چاندی کا تمغہ فاتح پیرا کھلاڑی دیپا ملک کو ملک کے اعلی ترین کھیل اعزاز راجیو گاندھی کھیل رتن سے نوازا جائے گا جبکہ کرکٹر رویندر جڈیجہ سمیت 19 کھلاڑیوں کو باوقار ارجن انعام ملے گا۔

ٹام موڈی اور مہیلا جے وردھنے ٹیم انڈیا کے کوچ کی ریس میں شامل

  ہندوستانی کرکٹ کپتان وراٹ کوہلی ٹیم انڈیا کے نئے کوچ کے لیے روی شاستری کو ہی برقرار رکھنے کی وکالت کر چکے ہیں لیکن اس اہم عہدے کے لیے آسٹریلیا کے ٹام موڈی اور سری لنکا کے مہیلا جے وردھنے بھی دعویداروں کی دوڑ میں شامل ہیں۔

ہندوستان ’اے‘ نے پانچویں ونڈے میں ویسٹ انڈیز ’اے‘کو شکست دے کر سیریز 4-1سے اپنے نام کر لی

روتوراج گائیکواڈ، شبھمن گل اور شريس ایر کی شاندار اننگز کی مدد سے ہندستان اے نے پانچویں غیر سرکاری ون ڈے میچ میں آٹھ وکٹ سے یکطرفہ جیت درج کرنے کے ساتھ پانچ میچوں کی سیریز میں ویسٹ انڈیز اے کے خلاف 4- 1 سے جیت اپنے نام کر لی ہے۔

ہندوستانی ایتھلیٹ ہما داس نے 1 مہینے میں جیتا 5 واں گولڈ میڈل

ہندوستان کی اسٹار ایتھلیٹ ہما داس نے شاندار مظاہرہ جاری رکھتے ہوئے یہاں اپنی پسندیدہ 400 میٹرکی دوڑ میں 52.09سیکنڈکے سیشن میں اس مہینے کا 5واں گولڈ میڈل جیتا ہے۔سنیچر کو ہما کا یہ مظاہرہ حالانکہ 50.79 کے ان کے نجی بہترین ریکارڈ سے دھیما ہے جو انھوں نے جکارتا ایشیائی کھیلوں کے دوران ...

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کاروارمیں ریڈ الرٹ کے باوجود کوسٹل سیکیوریٹی پولیس کی انٹر سیپٹر کشتیاں نہیں اتریں سمندر میں!

ابھی دو دن پہلے ملک کی خفیہ ایجنسی نے سمندری راستے سے دہشت گردانہ حملہ ہونے کا خدشہ ظاہر کیا تھا جس کے بعد پوری ریاست کرناٹکا میں اور بالخصوص ساحلی کرناٹکا میں ریڈ الرٹ جاری کیا گیا ہے۔