بنگال میں انتخابی دھاندلیوں کے لئے الیکشن کمیشن ذمہ دار: ممتا بنرجی

Source: S.O. News Service | Published on 7th April 2021, 5:39 PM | ملکی خبریں |

علی پورداور،7؍اپریل (ایس او نیوز؍ایجنسی) وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے ایک بار پھر انتخابی دھاندلیوں کی شکایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن اور مرکزی فورسیس کا کردار جانبدارانہ ہے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ تیسرے مرحلے کی پولنگ کے دوران بی جے پی کارکنان نے پولنگ بوتھ پر زبردستی قبضہ کیا اور پارٹی امیدواروں سمیت ترنمول کانگریس کے لیڈروں پر حملہ کیا گیا اور انھوں نے زور دے کر کہا کہ وہ اس طرح کے’’دھمکی آمیز ہتھکنڈوں‘‘سے دبنے والی نہیں ہیں۔ علی پوردوار ضلع میں ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے ممتا بنرجی نے کہا کہ آرام باغ میں ان کی پارٹی کی نامزد امیدوار سوجتا منڈل کو بھگوا پارٹی کے کارکنوں نے ایک پولنگ بوتھ کے قریب پیچھا کیا اور ان کے سر پر حملہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے شیڈول ذات کی امیدوار سوجاتا کو شدید چوٹ پہنچائی گئی جب وہ کسی بوتھ پر جارہی تھیں۔ کھانا کول میں بھی ترنمول کانگریس کے امیدوار پر حملہ ہوا ہے۔ کیننگ ایسٹ میں سیکورٹی فورسز نے ہمارے امیدوار شوکت ملا کو بوتھ میں داخل ہونے سے روکا۔ ایسے متعدد واقعات پیش آچکے ہیں۔ بنرجی نے کہا کہ ریاست بھر میں ہمارے امیدواروں اور پارٹی کارکنوں پر حملہ ہوئے ہیں۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ انہیں حملہ اور تشدد کی کم سے کم 100 شکایات موصول ہوئی ہیں اور الیکشن کمیشن کو آگاہ کیا گیا لیکن اس کا کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی لیڈرو ں کے جلسے میں بھیڑ کی قلت ہے۔ اس لئے بی جے پی لیڈران ہمارے خلا ف سازش کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سیکورٹی فورسیز کو بوتھ پر قبضہ کرنے اور ان کے لئے ماحول ساز کرنے سے باز آجائیں۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ انتخابات شروع ہونے کے بعد سے ہمارے چار کارکنان کا قتل ہوچکا ہے، لیکن کوئی کارروائی نہیں کی گئی ہے۔

ممتا بنرجی نے کہا کہ بی جے پی ہمیں اس طرح سے دہشت زدہ نہیں کرسکتی ہے۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ انتخابات میں بدامنی کے لئے مرکزی فورسیس ذمہ دار ہیں۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ بوتھوں پر تعینات مرکزی فورسیس کے جوان شہریوں کو بی جے پی کے لئے ووٹنگ کر رہے ہیں۔ ممتا بنرجی نے کہا کہ مودی ٹرمپ سے بدتر ہیں۔ جوا نتخابی دھاندلی کرنے کی کوشش کی۔ انہوں نے کہا کہ ترنمو ل کانگریس کا کامیاب ہونا ریاست کے حق میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی کاموں کو جاری رکھنے کے لئے بنگال میں ایک بار پھر ماں، ماٹی اور مانش کی حکومت قائم کریں۔

ایک نظر اس پر بھی

شعبہ اردوجامعہ ملیہ اسلامیہ کی جانب سے ممتاز ادیب و شعرا سلطان اختر، انجم عثمانی، مشرف عالم ذوقی، مناظر عاشق ہرگانوی اور سید نورالہدیٰ کے سانحہ ارتحال پر تعزیتی جلسے کا انعقاد

شعبہ اردوجامعہ ملیہ اسلامیہ کی جانب سے عظیم آباد پٹنہ میں مقیم بزرگ و ممتاز شاعر سلطان اختر، عہد حاضر کے معروف فکشن نگار اور صحافی انجم عثمانی، دور حاضر کے ممتاز ناول نگار اور بے باک صحافی مشرف عالم ذوقی، کثیرالتصانیف مصنف پروفیسر مناظر عاشق ہرگانوی اور اردو میں تاریخی، ...

فضول ہے یہ بحث کہ لاک ڈاؤن کب لگنا چاہئے! حالات انتہائی خراب

سمجھ نہیں آ رہا کہ کورونا وباکو روکنے کے لئے کس بات کو مانا جائے اور کس کو نہیں! کبھی اس وبا کو روکنے کے لئے لاک ڈاؤن اتنا ضروری ہو جاتا ہے کہ اگر ملک میں چند سو کیسز بھی ہوں تو لاک ڈاؤن نافذ کر دیا جاتا ہے اور اس بات کا بھی خیال نہیں کیا جاتا کہ مہاجر مزدوروں کا کیا حال ہوگا؟ ان ...

دہلی میں لاک ڈاؤن کے اعلان کے بعد مہاجر مزدوروں میں ایک بار پھر افراتفری ، وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کی عوام سے اپیل ، کہا ؛ دہلی چھوڑ کر نہ جائیں ، یہ لاک ڈاؤن مختصر وقفے کیلئے ہے

دہلی میں لاک ڈاؤن کا اعلان ہوتے ہی ایک بار پھر دہلی کے مہا جر مزدوروں کو وہ پرانے دن یاد آگئے جب گزشتہ سال اچانک ملک بھر میں لاک ڈاؤن لگا دیا گیا تھا۔

حکومت ٹیکہ بنانے والی کمپنیوں کو 4500 کروڑ روپئے پیشگی دے گی ، ٹیکوں کا پروڈکشن بڑھانے اور ٹیکہ کاری کو رفتار دینے کیلئے اہم فیصلہ ، وزیر اعظم کی کمپنیوں کے ذمہ داروں سے میٹنگ

مودی حکومت نے کورونا کے سبب ملک میں پھیلی ابتری پر اب سنجیدگی کا مظاہرہ کرتے ہوۓ ٹیکہ بنانے والی کمپنیوں سے ان کا پروڈکشن بڑھانے کی اپیل کی ہے۔ ساتھ ہی اس معاملے میں 45 سوکروڑ روپئے  پیشگی  کے طور پرادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے تا کہ یہ کمپنیاں اپنے ٹیکوں کے پروڈکشن میں اضافہ ...

مہاراشٹر میں مکمل لاک ڈاؤن کی دستک ، نئی پابندیاں ، دکانیں صبح 7 سے 11 بجے تک ہی کھلی رہی گی

مہاراشٹر میں جنتا کرفیو کے نفاذ کے ایک ہفتہ بعد بھی حالات میں سدھار نہ آنے اور کورونا کے نئے معاملات میں مسلسل اضافے کو دیکھتے ہوئے ریاست میں مکمل لاک ڈاؤن کی دستک سنائی دینے لگی ہے جس کے تعلق سے وزیراعلیٰ اُ دھوٹھا کرے بدھ کو حتمی  اعلان کر سکتے ہیں۔ لاک ڈاؤن کے امکان کو تقویت ...

ہندوستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 259170 نئے کورونا کے معاملے، ایک دن میں سب سے زیادہ اموات

 کورونا وائرس کے معاملوں میں اضافہ کا سلسلہ لگاتار جاری ہے۔ مرکزی وزارت صحت کی طرف سے جاری اعدادوشمار کے مطابق منگل کے روز ملک میں ایک بار پھر ڈھائی لاکھ سے زیادہ کیسز کی تصدیق کی گئی۔ یہ لگاتار چوتھا دن ہے جب ملک میں ڈھائی لاکھ سے زہادہ کیسز کی تصدیق کی گئی۔