کیرالہ کے 8 سیاحوں کی نیپال میں موت، 5 نابالغ شامل

Source: S.O. News Service | Published on 21st January 2020, 9:10 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ترواننت پورم،21/جنوری(ایس او نیوز/ایجنسی) نیپال کی سیر پر گئے کیرالہ سے گئے سیاحوں کے ایک گروپ کے 8 افراد کی منگل کی صبح ایک ہوٹل کے کمرے میں دم گھٹنے سے موت ہو گئی۔ مرنے والوں میں پانچ بچے بھی شامل ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ سیاحوں کا ایک گروپ ترواننت پورم سے نیپال گیا تھا جہاں کھٹمنڈو کے دمن علاقے کے ’ایورسٹ پنورمار‘ ریزورٹ میں ان میں سے 8 افراد مردہ حالت میں پائے گئے۔ موت کی وجوہات کا ابھی تک پتہ نہیں چل سکا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گروپ کے کچھ دیگر افراد کو علاج کے لئے کھٹمنڈو کے ایک اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

مکوان پور ضلع پولیس آفس کے ایس پی سشیل سنگھ راٹھور نے اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ ’’یہ افراد کمرے میں گیس ہیٹر کا استعمال کر رہے تھے۔ ایسی صورتحال میں ممکن ہے کہ ان کی موت دم گھٹنے کی وجہ سے ہوئی ہو۔‘‘

نیپالی اخبار ہمالیہ ٹائمز کے مطابق تمام افراد کو بے ہوشی کی حالت میں کھٹمنڈو پہنچایا گیا۔ یہاں کے ایک اسپتال میں اس کی موت ہو گئی۔ دمن کے ایوریسٹ پینورما ریسارٹ کے منیجر کے مطابق کمرے کی تمام کھڑکیاں اور دروازے اندر سے بند تھے۔

جاں بحق ہونے والوں میں 38 سالہ پروین کرشنا نارائن، 35 سالہ شرنیا ششی، 34 سالہ رنجیت کمار اے پی کے علاوہ اندرا لکشمی (9)، سری بھدرا (7)، آرچا پروین (5)، ابھین شورنائے نائر (5) اور ویشنو رنجیت (2) شامل ہیں۔

کیرالہ کے وزیر سیاحت کداکمپلی سریندرن نے کہا، ’’جیسے ہی نیپال کے دمن میں واقع ایک ہوٹل کے کمرے میں کیرالہ کے 8 سیاحوں کی ہلاکت کی حیرت ناک خبر ہمارے پاس پہنچی، ریاستی پولیس سربراہ کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ نیپال پولیس سے رابطہ کریں اور ضروری کارروائی کریں۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

تبلیغی جماعت کا ’ٹائمز آف انڈیا‘ کو ہتک عزت کا نوٹس، بے بنیاد خبریں شائع کرنے کی پاداش میں معافی مانگنے اور ایک کروڑ ہر جانہ ادا کرنے کا مطالبہ 

تبلیغی جماعت سے منسلک ایک رکن نے آج ٹائمز آف انڈیا گروپ کو جماعت کے بارے میں اشتعال انگیز اور بے بنیاد خبریں شائع کرنے کی پاداش میں ہتک عزت کا قانونی نوٹس بھیج دیا ہے۔

کرونا سے لڑنے کے بہانے ملک پر ایک خاص مذہبی عقیدے کو تھوپنے کی کوشش: ڈاکٹر شکیل احمد، سابق مرکزی وزیر نے کہا “ملک کو اس وقت مستحکم طبی نظام کی ضرورت”

کرونا بلا شبہ ایک خطرناک مہلک مرض ہے جس کا مقابلہ کرنے کے لئے ہمیں جانچ اور علاج کے مستحکم انتظام کے ساتھ مضبوط منصوبہ بندی کی ضرورت ہے

کاسرگوڈ میں کورونا وائرس کا بڑھتا ہوا قہر۔ مزید 9افراد کی جانچ رپورٹ آئی پوزیٹیو۔ مریضوں کی تعداد ہوگئی 151

کیرالہ کے کاسرگوڈ میں کورونا وائرس کاقہر ابھی تھمتا نظر نہیں آرہا ہے۔ 6اپریل کی شام تک کی جو صورتحال ہے اس کے مطابق کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے مزید9معاملات سامنے آئے ہیں جس کے ساتھ ضلع میں جملہ مریضوں کی تعداد 151ہوگئی ہے۔

اترپردیش: بی جے پی کی خاتون لیڈر نے کورونا کو مارنے کے لیے چلائی گولی، ایف آئی آر درج

وزیر اعظم نریندر مودی کی جانب سے اتوار کو رات 9 بجے 9 منٹ تک چراغاں کرنے کی اپیل کے دوران بعد اترپردیش کے ضلع بلرامپور میں 'دیا' جلانے کے بعد کورونا وائرس کو مارنے کے لئے ہوا میں فائرنگ کرنے والی بی جے پی کی سینئر خاتون لیڈر کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

مینگلور کے قریب بنٹوال میں دیپ جلاؤ مہم کے دوران اقلیتوں کے گھروں پر پتھراؤ۔ پولیس میں درج کی گئی شکایت

کورونا وائرس کے خلاف متحدہ طور پر جدوجہد کی علامت کے طور پر وزیر اعظم نریندرا مودی نے دیپ جلانے کی جو آواز دی تھی، اس کے دوران بنٹوال میں اقلیتوں کے گھروں پتھراؤ کرنے اور پٹاخے پھینکنے کی واردات پیش آئی ہے۔

کاسرگوڈ میں کورونا وائرس کا بڑھتا ہوا قہر۔ مزید 9افراد کی جانچ رپورٹ آئی پوزیٹیو۔ مریضوں کی تعداد ہوگئی 151

کیرالہ کے کاسرگوڈ میں کورونا وائرس کاقہر ابھی تھمتا نظر نہیں آرہا ہے۔ 6اپریل کی شام تک کی جو صورتحال ہے اس کے مطابق کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے مزید9معاملات سامنے آئے ہیں جس کے ساتھ ضلع میں جملہ مریضوں کی تعداد 151ہوگئی ہے۔